مجھ پر چاہے جتنے مقدمہ کرلو، کوئی فرق نہیں پڑتا :راہل گاندھی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th June 2018, 11:52 AM | ملکی خبریں |

بھیونڈی،13؍جون (یو این آئی) کانگریس کے صدر راہل گاندھی نے راشٹریہ سویم سیوک سنگھ (آر ایس ایس) فوجداری ہتک عزت معاملہ میں اپنے اوپر لگے الزامات کو خارج کرتے ہوئے کہاکہ وہ قصوروار نہیں ہیں اور اس معاملہ میں لڑائی وہ ہی جیتیں گے ۔ بھیونڈی کی عدالت نے منگل کو مسٹر گاندھی پر تعزیرات ہند کی دفعہ 499اور 500کے تحت الزام طے کئے ہیں۔ گزشتہ عام انتخابات کے دوران 6مارچ 2014کو مسٹر گاندھی نے بھیونڈی میں ایک انتخابی ریلی کے دوران سنگھ کو مہاتما گاندھی کے قتل کا ذمہ دار ٹھہرایا تھا ۔ ان کے اس بیان پر سنگھ کے کارکن راجیش کنٹے نے مسٹر گاندھی پر فوجداری ہتک عزت کا معاملہ دائر کیا تھا۔الزام طے ہونے کے بعد عدالت سے باہر نکلے کانگریس صدر نے میڈیا سے بات چیت میں الزامات کو خارج کرتے ہوئے کہاکہ وہ قصوروار نہیں ہیں۔ مسٹر گاندھی نے میڈیا سے بات چیت کے دوران کہاکہ ان کے خلاف ایک ایک کرکے کئی مقدمے درج کئے جارہے ہے لیکن مہنگائی، پٹرول کی آسمان چھوتی قیمتوں پر وزیراعظم کچھ نہیں کہتے ہیں۔کسانوں کی حالت کا ذکر کرتے ہوئے کانگریس کے صدر مسٹر راہل گاندھی نے کہاکہ مرکزی حکومت کی پالیسیوں کی وجہ سے کسان پریشان حال ہیں۔ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو کسانوں کی حالت سے کچھ لینا دینا نہیں ہے ۔ انہوں نے کہاکہ نوجوان بے روزگاری سے بری طرح پریشان ہیں۔انہوں نے کہاکہ میرے اوپر جتنے مرضی مقدمے کرلیں، مجھے کوئی فرق نہیں پڑنے والا ہے ۔ یہ میری نظریات کی لڑائی ہے ۔ میں لڑوں گا اور جیتوں گا۔

ایک نظر اس پر بھی

لوک سبھا انتخابات میں نہ اتار کر وزیر اعظم نے اڈوانی ،جوشی کی توہین کی : کیجریوال

عام آدمی پارٹی کے سربراہ اروند کیجریوال نے منگل کو کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے لال کرشن اڈوانی اور مرلی منوہر جوشی جیسے سینئر رہنماؤں کو آئندہ لوک سبھا انتخابات میں نہیں اتار کر انکی توہین کی ہے۔