مودی حکومت کے اور بھی کئی بڑے گھوٹالے سامنے آئیں گے: راہل گاندھی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 7th December 2017, 12:02 AM | ملکی خبریں |

انجار، 06؍دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)کانگریس صدرکے عہدے کے لیے نامزدگی کے بعدگجرات کے پہلے انتخابی دورے پر آنے والے راہل گاندھی نے آج دعویٰ کیا کہ مودی حکومت کے کئی بڑے گھوٹالے آنے والے وقت میں عوام کے سامنے آئیں گے۔ انہوں نے آج ضلع کچھ کے انجار میں ایک انتخابی ریلی میں کہا کہ رافیل جنگی طیارہ سودے اور بی جے پی صدر امت شاہ کے بیٹے جے شاہ کی کمپنی کے گھوٹالے تو بس شروعات ہیں۔ آنے والے وقت میں ان سے بڑے گھوٹالے ملک اور گجرات کے عوام کے سامنے آئیں گے۔مسٹر راہل گاندھی نے رافیل سودے پر دوبارہ مسٹر مودی سے تین سوال پوچھے اور نوٹ بندی اورجی ایس ٹی سے پیدا ہوئی افراتفری کے درمیان جے شاہ کی کمپنی کا کاروبار 50 ہزار روپے سے چند ماہ میں بڑھ کر 80 کروڑ ہونے کی بات بھیدوہرائی۔ انہوں نے الزام لگایا کہ ان معاملات کی پارلیمنٹ میں گجرات انتخابات کے دوران بحث نہ ہو اور عوام اسے نہ سن سکیں، اسی لیے پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس کو گجرات انتخابات کے بعد تک جان بوجھ کر ٹال دیا گیا۔مسٹر راہل گاندھی نے رافیل سودے پر دوبارہ مسٹر مودی سے تین سوال پوچھے اور نوٹ بندی اور جی ایس ٹی سے پیدا ہوئی افراتفری کے درمیان جے شاہ کی کمپنی کا کاروبار 50 ہزار روپے سے چند ماہ میں بڑھ کر 80 کروڑ ہونے کی بات بھی دوہرائی۔مسٹر راہل گاندھی نے مسٹر مودی سے گجرات میں 50 لاکھ گھر بنانے، گجرات کے تعلیم کے معاملے میں26 ویں مقام پر کھسکنے، صنعت کاروں سے مہنگی بجلی خریدنے اور ریاست پر قرض بڑھ کر ڈھائی لاکھ کروڑ ہو جانے کے بارے میں اپنے چار پرانے سوال دو?را ئے اور بی جے پی سے ان میں سے کسی ایک کا بھی جواب دینے کا چیلنج کیا۔ مسٹر گاندھی نے کہا کہ 22 سال بعد گجرات میں کانگریس کی حکومت بنے گی اور لوگوں کو ایک فرق محسوس ہوگا۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میں راہول گاندھی کا وزیراعظم مودی پر راست حملہ؛ سی بی آئی کا بتایا نیا مفہوم؛ کہا سینٹرل بیورو آف اللیگل مائننگ

وزیراعظم نریندر مودی پر راست نشانہ لگاتے ہوئے کانگریس صدر راہول گاندھی نے بھٹکل میں اپنے انتخابی جلسہ میں کہا کہ   مودی بسونا کی مورتی پر پھول کا ہار پہناتے ہیں  اوربڑی بڑی باتیں بھی کرتے ہیں ، لیکن بسونا نے جو کہا تھا اُس پر عمل نہیں کرتے۔راہول کے مطابق   بسونا نے کہا تھا کہ ...

سوشل میڈیا سے کیوں رہتے ہیں نتیش کماربرہم، اسٹیج پر کیا انکشاف، پہلے بخار وائرل ہوتا تھااب فرضی فوٹو اور ویڈیو وائرل ہوتے ہیں : نتیش کمار 

بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار سوشل میڈیا سے خفا ہیں، انہیں سوشل میڈیا نہیں راس آتا ہے ۔ سوشل میڈیا کے تئیں ان کی کیا رائے ہے اس سلسلے میں ا نہوں ا زخود اس کا خلاصہ کیا ہے ۔

آسارام کیس کے متعلق آنے والے فیصلہ کا لیڈران نے خیر مقدم کیا، اب وقت آگیا ہے کہ سچے اور ڈھونگی باباؤں کے درمیان تمیزکی جائے: اشو ک گہلوت 

سیاسی لیڈران اور سماجی کارکنوں نے نابالغ لڑکی کی عصمت دری کے معاملہ میں خود ساختہ بابا آسارام کو عمر قید کی سزا سنائے جانے کے فیصلہ کا استقبال کیا ہے

ہنس راج اہیر نے بائیں باز کی انتہا پسندی والے علاقوں میں موبائل رابطے کا جائزہ لیا 

امور داخلہ کے وزیر مملکت جناب ہنس راج گنگا رام اہیر نے آج یہاں ملک کے بائیں کی انتہا پسندی (ایل ڈبلیو ای) سے متاثرہ اضلاع میں موبائل رابطے کے مسئلے کا جائزہ لینے والی اعلیٰ سطحی میٹنگ کی صدارت کی۔

کابینہ نے راجستھان کے معاملے میں درج فہرست علاقوں کے اعلان کو منظوری دی 

مرکزی کابینہ نے وزیر اعظم جناب نریندر مودی کی صدارت میں آئینی حکم (سی۔ او) 114 بتاریخ12فروری1981کورد کرتے ہوئے آئین ہند کی پانچویں فہرست کے تحت راجستھان کے معاملے میں درج فہرست علاقوں کے ا علان اورنئے آئینی حکم کی اشاعت کو منظوری دی ہے۔