پرانے ووڈافون سِم کو 4جی میں تبدیل کرنے پر آفر

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 12th July 2018, 10:06 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ:12/جولائی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)ہندوستان کی سرفہرست ٹیلی کمیونیکیشن سروس فراہم کنندہ ووڈافون انڈیا نے آج اعلان کیا ہے کہ بہار اور جھارکھنڈ سرکل کے صارفین اب اپنے موجودہ سم کوVodafone 4Gسم میں اپ گریڈ کرنے پر 4 جی بی مفت ڈیٹا کا فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔یہ آفر علاقے میں ووڈافون کے ان تمام صارفین کے لئے دستیاب ہے جن کے پاس 4 جی انیبلڈ اسمارٹ فون ہے اور جو اپنے سم کو 4 جی سم میں اپ گریڈ کرنا چاہتے ہیں۔ ووڈافون کے 4 جی سم بہار اور جھارکھنڈ سرکل کے تمام ووڈافون اسٹورس، ووڈافون منی اسٹورس اور ملٹی برانڈ آؤٹ لیٹس پر دستیاب ہے۔اپ گریڈ کے بعد، ووڈافون کے پری پیڈصارفین 4 جی بی مفت4 جی ڈیٹاکے ون ٹائم کا فائدہ اٹھاسکتے ہیں۔ اس مفت 4 جی ڈیٹا کا فائدہ اٹھانے کے لئے صارفین کو اپنا ریڈی4G تیار سم 4Gانیبلڈ ہینڈ سیٹ پر ہی استعمال کرنا ہو گا۔ نئےVodafone 4G سم کے ساتھ صارفین 4 جی مفت ڈیٹا کے ساتھ بغیر رکاوٹ کے موبائل انٹرنیٹ کا فائدہ بھی اٹھا سکیں گے، جو سم ایکسچینج کے 24 گھنٹے کے اندر صارفین کے ڈیٹا بیلینس میں جُڑ جائے گا۔ووڈافون انڈیا میں بہار اور جھارکھنڈ کے بزنس ہیڈ راج شیکھر میٹگڈ نے یہ اعلان کرتے ہوئے کہا، ووڈافون اس علاقے کے 10 ملین صارفین کے لئے پسندیدہ ٹیلی کمیونیکیشن سروس فراہم کنندہ ہے۔ ہم اپنے صارفین کے لیے ڈیٹا اسٹرانگ نیٹ ورک پر4 جی بی مفت ڈیٹا کا بھی آفر لے کر آئے ہیں تاکہ وہ ہماری بے جوڑ موبائل انٹرنیٹ سروسز کا فائدہ اٹھا سکیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

پارلیمانی انتخابات سے قبل مسلم سیاسی جماعتوں کا وجود؛ کیا ان جماعتوں سے مسلمانوں کا بھلا ہوگا ؟

لوک سبھا انتخابات یا اسمبلی انتخابات قریب آتے ہی مسلم سیاسی پارٹیاں منظرعام  پرآجاتی ہیں، لیکن انتخابات کےعین وقت پروہ منظرعام سےغائب ہوجاتی ہیں یا پھران کا اپنا سیاسی مطلب حل ہوجاتا ہے۔ اورجو پارٹیاں الیکشن میں حصہ لیتی ہیں ایک دو پارٹیوں کو چھوڑکرکوئی بھی اپنے وجود کو ...

بھیم آرمی کے سربراہ کی مولانا ارشد مدنی سے خصوصی ملاقات؛ ریاستی سیاست میں ہلچل

جیل سے رہائی کے بعد بھیم آرمی سربراہ چندر شیکھر آزاد نے دیوبند پہنچ جمعیۃ علماء ہند کے صدر مولانا سید ارشد مدنی سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی ۔اس ملاقات کے بعد میڈیا سے صرف یہ کہا کہ دبے کچلے طبقات کو ایک ساتھ لانا اور انہیں متحد کرنا ان کا مقصد ہے اور اسی کے تحت وہ یہاں آئے ...