200اور 2000 روپے کے نوٹ کو لے کر بڑا فیصلہ ، وزارت خزانہ نے جاری کیا یہ حکم

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 8th September 2018, 11:17 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،8ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی)آپ کے 200 اور 2000 روپے کے گندے اور کٹے پھٹے نوٹ بدلنے کی راہ ہموار ہوگئی ہے۔ وزارت خزانہ نے اس سلسلہ میں ریزرو بینک آف انڈیا کے مسودے کو ہری جھنڈی دیدی ہے۔ اس کیلئے نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے۔ آپ کو بتادیں کہ ریزرو بینک نے وزارت کو کٹے پھٹے اور گندے نوٹ بدلنے کے آر بی آئی ( نوٹ ریفنڈ ) رولس 2009 میں تبدیلی کی تجویز بھیجی تھی۔ اب نئے قوانین جاری کردئے گئے ہیں۔ اس سے پہلے قوانین کے مطابق صرف 1،2،5،10،20،50،100،500،1000روپے کے نوٹ بدلنے کا ہی بندوبست تھا۔

پہلے قانون میں کوئی ایسا بندوبست نہیں تھا ، جس کی بنیاد پر بینک 2000 اور 200 روپے کے گندے ، پرانے یا کٹے پھٹے نوٹ بدل سکیں۔ نوٹ بدلنے کا قانون آر بی آئی ایکٹ کی دفعہ 28 کے تحت آتا ہے۔ اس میں نوٹ بندی کے پہلے جیسے ہی کٹے پھٹے یا گندے نوٹ بدلنے کی اجازت تھی ، نوٹ بندی کے بعد ریزرو بینک نے اب تک اس میں کوئی بھی تبدیلی نہیں کی تھی۔ اب نئے مسودے میں ترمیم کرکے 200 اور 2000 روپے کے نوٹ بدلنے کا بندوبست کیا گیا ہے۔

2000 روپے کے نوٹ نومبر 2016 میں نوٹ بندی نافذ ہونے کے بعد جاری کئے گئے تھے جبکہ 200 روپے کا نوٹ ستمبر 2017 کے بعد جاری ہوا ہے۔ ملک بھر میں بڑی تعداد میں لوگ اس بات کو لے کر کافی پریشان تھے کہ نوٹ نہیں بدلے جارہے ہیں۔ بینک بھی قانون نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کے نوٹ نہیں بدل پارہے تھے۔ قانون میں تبدیلی ہونے کے بعد اب لوگوں کو راحت ملے گی۔

ایک نظر اس پر بھی

اکھلیش یادو ’ٹائیگر بام‘ کی طرح ہیں : مایاوتی 

اتر پردیش کی سیاست کے دو بڑے قد آور ملائم سنگھ یادو اور مایاوتی جب دہائیوں پرانی دشمنی بھلا کر مین پوری کی ریلی میں ایک ہی مشترکہ اسٹیج پر آئے تو ان کی تصاویر خوب وائرل ہوئیں دیکھی گئیں۔ دشمنی بھلا کر دونوں رہنماؤں نے اب اتر پردیش میں بی جے پی کو روکنے کی کوشش کرنے کی ایک طرح سے ...

نریندر مودی کی سیکورٹی کے پیش نظر وارانسی سیٹ پر بدلی گئی امیدواروں کی نامزدگی کی جگہ

وزیر اعظم نریندر مودی کی سیکوریٹی کے پیش نظر وارانسی پارلیمانی سیٹ کے انتخابات کیلئے نامزدگی مقام میں تبدیلی کی گئی ہے۔پہلے ضلع انتظامیہ نے ایڈمرل کورٹ میں نامزدگی کا اہتمام کیا تھا، لیکن اتوار کو نامزدگی مقام بدل کر کلکٹریٹ واقع رائفل کر دیا گیا۔انتظامیہ کے فیصلے کے بعد اب ...

ایس پی ۔ بی ایس پی کے پاس کانگریس کے ساتھ اتحاد کے علاوہ کوئی چارہ نہیں:سلمان خورشید

کانگریس کے سینئر لیڈر سلمان خورشید نے لوک سبھا انتخابات کے بعد اپنی پارٹی کے ایس پی۔بی ایس پی۔آر ایل ڈی کے ساتھ اتحاد ہونے کو ناگزیر قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ انتخابی نتائج آنے کے بعد اتر پردیش کے اس اتحاد کے پاس کوئی اور چارہ نہیں ہوگا۔اتر پردیش کی کانگریس یونٹ کے دو بار چیف رہ ...

آئی این ایل ڈی کے سابق ممبر اسمبلی راؤ بہادر نے تھاما کانگریس کا دامن، دپیندر ہڈا کی نامزدگی میں ہوں گے شامل

جنوبی ہریانہ کے قدآور لیڈر اور انیلو کے سابق ممبر اسمبلی راؤ بہادر سنگھ نے اتوار کو کانگریس پارٹی کا دامن تھام لیا۔راؤ بہادر سنگھ نے آج بتایا کہ 22 اپریل کو روہتک میں ایم پی دپیندر ہڈا کی نامزدگی کے موقع پر وہ اپنے 5000 حامیوں کے ساتھ موجود رہیں گے۔کانگریس صدر راہل گاندھی اور ...