مکہ مسجدبم دھماکہ:اویسی نے این آئی اے کی جانچ پراٹھائے سوال

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th April 2018, 3:01 PM | ملکی خبریں |

حیدرآباد،17؍اپریل (ایس او نیوز؍ ایجنسی) حیدرآبادمیں 2007کے مکہ مسجدبم بلاسٹ معاملے میں قومی جانچ ایجنسی(این آئی اے) کی خصوصی عدالت نے آج سوامی اسیمانندسمیت 5ملزموں کوبرکردیاہے۔این آئی اے نے ثبوتوں کے ناکافی کی بنیادپرفیصلہ سنایاہے۔بہرکیف فیصلے کے بعد آل انڈیامجلس اتحاد المسلمین کے قومی صدراوررکن پارلیمنٹ اسدالدین اویسی نے ٹویٹ کرکے کورٹ فیصلہ پرکہاکہ ’’جون 2014 کے بعد سے زیادہ تر گواہ مکر گئے۔این آئی اے نے اس کیس کو ٹھیک سے آگے نہیں بڑھایا،جیسی امیدتھی۔کیونکہ ا سے پولیٹیکل ماسٹرسے اس کی اجازت نہیں ملی۔اگرایسی جانچ ہوتی رہی توکریمنل جسٹس سسٹم کا کیاہوگا؟انصاف نہیں ہوا‘‘۔اویسی نے کہاکہ ’این آئی اے ایک بہرااوراندھاہوتاہے۔ایجنسی نے ملزموں کے بیل کے خلاف اپیل نہیں کی۔گواہ اپنے بیان سے پلٹ گئے۔عیاں رہے کہ 11سال پہلے ہوئے بلاسٹ میں 9لوگوں کی موت ہوگئی تھی اوردیگر58لوگ زخمی ہوگئے تھے۔ معاملے میں 10لوگوں کوملزم بنایاگیاتھا۔

ایک نظر اس پر بھی

جے پی سی سے جانچ کرانے کا راستہ ا بھی کھلا ہے، عام آدمی پارٹی نے کہا،عوام کی عدالت اورپارلیمنٹ میں جواب دیناہوگا،بدعنوانی کے الزام پرقائم

آپ کے راجیہ سبھا رکن سنجے سنگھ نے کہا ہے کہ رافیل معاملے میں جمعہ کو آئے سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود متحدہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے اس معاملے کی جانچ پڑتال کرنے کا اراستہ اب بھی کھلا ہے۔

رافیل پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ، راہل گاندھی معافی مانگیں: بی جے پی

فرانس سے 36 لڑاکا طیارے کی خریداری کے معاملے میں بدعنوانی کے الزامات پر سپریم کورٹ کی کلین چٹ ملنے کے بعد کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے جمعہ کو کہا کہ کانگریس پارٹی اور اس کے چیئرمین راہل گاندھی ملک کو گمراہ کرنے کیلئے معافی مانگیں۔