سروس سے متعلق معاملات پر کیجریوال نے راجناتھ سے ملاقات کی

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 12th July 2018, 2:00 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:11/جولائی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سپریم کورٹ کی طرف سے لفٹننٹ گورنر اور دہلی حکومت کے اختیارات کے متعلق فیصلہ کے بعد سروس کے سلسلے میں معاملات پر تنازعہ کے مدنظر وزیر اعلی اروند کیجریوال نے آج مرکزی وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ سے ملاقات کی۔مسٹر کیجریوال نے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا اور عام آدمی پارٹی کے دیگر رہنماوں کے ساتھ مسٹر سنگھ سے ملاقات کے بعد میڈیا سے کہا کہ وزیر داخلہ سے سپریم کورٹ کے ذریعہ دئے گئے احکامات کے سلسلے میں بات چیت ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ مرکز اور لفٹننٹ گورنر اپنے اپنے ڈھنگ سے عدالت کے حکم میں اڑچن ڈالنے کی کوشش کررہے ہیں۔ لفٹننٹ گورنر اور مرکز کا یہ کہنا ہے کہ آدھاحکم مانیں گے اور آدھا نہیں مانیں گے۔انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے حکم میں یہ صاف لکھا ہے کہ سروسز(انتظامیہ کے افسران سے متعلق اختیارات) پر فیصلہ دہلی حکومت کوکرنا ہے لیکن مرکز اور لفٹننٹ گورنر اس سے انکار کررہے ہیں۔ وزیر اعلی نے کہا کہ حکم میں واضح ہے کہ اراضی‘ پولیس اور قانون و انتظام کو چھوڑ کر تمام اختیارات دہلی حکومت کے پاس ہیں لیکن لفٹننٹ گورنر کا کہنا ہے کہ وہ سروسز سے متعلق معاملات میں دہلی ہائی کورٹ کی بنچ کا فیصلہ کے بعد اسے مانیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ایسا کیسے ہوگا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کو آدھا مانیں گے اور آدھا نہیں۔مسٹر کیجریوال نے کہا کہ مسٹر سنگھ نے اس معاملے میں ان کے دلائل سے اتفاق کیا او رحکام سے صلاح و مشورہ کے لئے تین دن کا وقت مانگا ہے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ وزیر داخلہ تین دن کے لئے باہر جارہے ہیں اور سولہ جولائی کو ان سے اس سلسلے میں پھر ملاقات کریں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

ایم پی اور ایم ایل اے کے وکالت کرنے پر پابندی نہیں, سپریم کورٹ نے کہا یہ لوگ کل مدتی سرکاری ملازم نہیں ہیں

سپریم کورٹ نے کہا ہے کہ ممبران پارلیمنٹ اور اراکین اسمبلی کو وکالت کرنے روکا نہیں جا سکتا ہے۔ عدالت نے کہا کہ یہ لوگ کل مدتی سرکاری ملازم نہیں ہیں۔ انہیں پریکٹس سے روکنے سے روکنے کا قانون بار کونسل آف انڈیا نے نہیں بنا یا ہے۔ گذشتہ 9جولائی کو سپریم کورٹ نے فیصلہ محفوظ رکھ لیا ...

ہیومن ویلفیئر فاونڈیشن ، کیرالامیں 500 نئے گھروں کی تعمیرکرے گا

کیرالامیں آئے صدی کے سب سے بڑے سیلاب سے لگ بھگ ساڑھے چار سو سے زائد جانیں تلف ہونے کی اطلاعات ہیں ، اور 40 ہزار کروڑ کا مالی نقصان ہوا ہے ۔ مصیبت کی اس گھڑی میں پورا ملک کیرالا کے ساتھ کھڑا رہا ۔ پہلے مرحلے میں ریلیف کے بعد اب تباہ حال کیرالا کی باز آبادکاری کا مرحلہ شروع ہوا ہے

طلاق ثلاثہ پر مرکزی حکومت کا آرڈیننس غیر آئینی؛ جمعیۃ علماء نے کیا سپریم کورٹ سے رجوع ہونے کا فیصلہ،گلزار اعظمی

گذشتہ دنوں بھارتیہ جنتا پارٹی کی قیادت والی مرکزی حکومت نے طلاق ثلاثہ معاملے میں عجلت کا مظاہرہ کرتے ہوئے آرڈیننس پاس کرالیا جس کے بعد سے ہی انصاف پسند عوام بالخصوص مسلمانوں میں بے چینی پھیلی ہوئی ہے ۔

اردو زبان کے نوجوان نقاد اور صحافی غلام نبی کمار’’تعمیل ارشاد ادبی ایوارڈ‘‘سے سرفراز

اردو زبان و ادب کے نوجوان ادیب ،نقاد اور صحافی غلام نبی کمارکو ریاست جموں و کشمیر کے مشہور و معروف اخبار روزنامہ تعمیل ارشاد کی جانب سے’’تعمیل ارشاد ادبی ایوارڈ2018‘‘سے نوازا گیا۔

دادری ہجومی تشدد معاملہ کا ملزم روپیندر رانا نوائیڈ ا سے اگلے لوک سبھا کا ہوگا امیدوار؛ نو نرمان سینا دے گی ٹکٹ

سال 2015میں پیش ائے دل دہلادینے والے دادری ہجومی تشدد کا واقعہ جس میں مشتبہ بیف کے نام پر محمد اخلاق کا بے رحمی کے ساتھ قتل کردیا گیا تھا اس کیس کا ایک اہم ملزم اترپردیش نو نرمان سینا کے ٹکٹ پر مجوزہ لوک سبھا الیکشن میں نوائیڈا سے امیدوار ہوگا۔

’’چوکیداربن گیا چوروں کا سردار‘‘:راہل۔رافیل سودے کی تفتیش مرکزی ویجلنس سے کرانے کا مطالبہ

کانگریس صدر راہل گاندھی نے پیر کے روز وزیر اعظم نریندر مودی کو دوبارہ کٹہرے میں کھڑا کرتے ہوئے فرانس کے سابق صدر فرانسوا اولاند کے اس انٹرویو کا ویڈیو جاری کیا ،جس میں انہوں نے کہا تھا کہ رافیل جنگی طیارہ کے سودے میں آفسیٹ پارٹنر کے لئے انل امبانی کی کمپنی کا نام ہندوستان کی ...