بھٹکل کائی کنی گرام پنچایت کے پی ڈی اؤ تبادلے کو لے کر ضلع پنچایت میٹنگ میں ممبران کا سخت اعتراض : رکن اسمبلی کی سفارش پر ہواتھا تبادلہ

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 7th September 2018, 8:44 PM | ساحلی خبریں |

کاروار:7/ستمبر(ایس اؤ نیوز) جمعرات کومنعقد ہوئی ضلع پنچایت میٹنگ میں بھٹکل کے کائی کنی گرام پنچایت کے پی ڈی اؤ کے تبادلے میں بھٹکل کے رکن اسمبلی کے رویہ پر ممبران  سخت اعتراض جتاتے ہوئے برہمی کا اظہار کیا۔

میٹنگ شروع ہوتے ہی بھٹکل سے ضلع پنچایت ممبر البرٹ ڈیکوستھا نے کائی کنی گرام پنچایت کے پی ڈی اؤ ناگراج نائک کا بغیر کسی وجہ کے تبادلہ کئے جانے پر سخت اعتراض جتاتے ہوئے کہاکہ گرام پنچایت میں عہدہ سنبھالا صرف ایک ماہ ہواتھا ان کا تبادلہ کیاگیا ہے ، ایسا کیوں کیا جارہاہے؟ تبادلے کی وجوہات کیا ہیں؟ آخر کونسی غلطی ہوئی ہے ؟ جیسے سوالوں کی بوچھا ر کرتے ہوئے وجہ چاہی۔

ضلع پنچایت آفیسر وی ایم ہیگڈے نے وضاحت کرتے ہوئے کہاکہ پی ڈی اؤ کے تبادلے کے لئے بھٹکل کے رکن اسمبلی نے خط لکھ کر ترقی جات کاموں میں تفریق سے کام لینے کا الزام لگایا تھااس لئے تبادلہ کئے جانےکی بات کہی تو میٹنگ میں موجود ممبران میں سے ڈیکوستھا کے علاوہ پشپا نائک وغیرہ نے برہم ہوکر  صحیح وجہ بتائیں ورنہ میٹنگ  سے  بائیکاٹ کرنے کاانتباہ دیا۔ پشپا نائک نے کہاکہ کائی کنی کے پی ڈی اؤ سابق رکن اسمبلی کے پرسنل سکریٹری ہونےکی بنا پر ان کا تبادلہ کیاگیا ہے ، سرکار، افسران کو جو کام سونپتی ہے وہی کرتے ہیں، ان پر اپنی ضد پوری کرنا ٹھیک نہیں کہتے ہوئے اپنی بے اطمینانی کا اظہارکیا۔ اس کی حمایت کرتے ہوئے ممبر جی این ہیگڈے نے کہا ضلع میں پی ڈی اؤ کے بیکار میں تبادلے کئے جارہے ہیں، تبادلوں کے لئے شرائط کوجاری کریں ، جس سے ایک شفاف اقتدار دینا ممکن ہوسکے۔ پھر پشپا نائک نے ضلع پنچایت کے اختیارپر افسران کو گھیرتے ہوئے  سوال پر سوال کرتے  ہوئے کہاکہ اگر ایسا ہے تو ضلع پنچایت کی طرف سے انتظامی حکم کی کیا ضرورت ہے ؟سب کچھ آپ ہی طئے کریں، تمام احکامات کو انتظامی امور میں شامل کرلیں، کائی کنی میں پی ڈی اؤ کا عہدہ خالی ہوئے 3مہینے گزرگئے ، ایک عوامی نمائندےکی بات سن کر بغیر کسی پوچھ تاچھ کے جی میں جیسا آئے ویسا کریں گے تو کیسے چلے گا؟۔

اس سلسلے میں ضلع پنچایت کے ایگزکیٹیو افسر محمد روشن نے کہاکہ ضلع کے تمام پی ڈی اؤکے متعلق رپورٹ دینے کے لئے کہاگیا ہے۔ کہاں کہاں عہدے خالی ہیں، کہاں زائد ہیں، کتنے برسوں سے کام کررہے ہیں اس طرح کی مکمل رپورٹ لی جائے گی۔ اگلے 15دنوں میں بھٹکل معاملے کی جانچ کرنے کے بعد ممبران کے سامنے وضاحت پیش کرنے کا تیقن دیا۔

ایک نظر اس پر بھی

ساحلی علاقے میں ریت کا مسئلہ 15اکتوبر حل کردیا جائے گا؛ وزیر اعلیٰ کمارا سوامی کا تیقن

وزیراعلیٰ کمارا سوامی نے ساحلی علاقے اڈپی اور منگلورو ضلع کے اراکین اسمبلی کے ساتھ ودھان سودا میں منعقدہ میٹنگ کے دوران تیقن دیا ہے کہ ریت نکالنے اور اس کی فراہمی کے متعلق مسائل کو 15اکتوبر حل کیا جائے گا۔

ریت کی سپلائی کا مستقل حل ڈھونڈ نکالنے بھٹکل رکن اسمبلی کی وزیراعلیٰ سے ملاقات؛ تعمیراتی کام ٹھپ پڑنے سے مزدوربھی پریشان

منگل کی شام بنگلورو کے ودھان سبھا ہال میں وزیرا علیٰ کمار سوامی کی صدارت میں منعقدہ میٹنگ میں بھٹکل کے رکن اسمبلی سنیل نائک نے اترکنڑا، اُڈپی اور دکشن کنڑا اضلاع میں ریت سپلائی شروع نہیں  کئے جانے سے پیش آنے والے مسائل کا تذکرہ کرتے ہوئے خوشگوار طورپر حل کرنے  کے لئے ریاستی ...

ہیلمٹ اور کاغذات نہ ہونے پربھٹکل پولس نے وصولا ایک ماہ میں 85 ہزار روپیہ جرمانہ؛ بائک اور کار کے بعد اب آئی آٹو کی شامت

شہر میں نئے آنے والے پولس سب انسپکٹر " کے کوسومادھر" جگہ جگہ گاڑیوں کی چیکنگ کرنے  میں لگے ہوئے ہیں اور ہیلمیٹ نہ پہننے ، گاڑی کے ضروری دستاویزات نہ ہونے، بغیر لائسنس گاڑی چلانے وغیرہ پر جرمانہ عائد کررہے ہیں۔  اب تک موٹر بائک اور کار وغیرہ کو روک کر چیکنگ کی جارہی تھی، مگر آج ...