نئے سال کی پارٹی میں خواتین کو گولی مارنے کے معاملے میں جے ڈی یو کے سابق ممبر اسمبلی گرفتار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 3rd January 2019, 8:51 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،3 جنوری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) دہلی قومی دارالحکومت علاقہ کے فتح پور بیری علاقے کے مانڈی گاؤں کے فارم ہاؤس میں فائرنگ کے معاملے میں جے ڈی یو کے سابق ممبر اسمبلی راجو سنگھ اور اس کے ڈرائیور ہری سنگھ کو یوپی میں گورکھپور کے پاس کشی نگر سے پکڑا گیا۔

بتایا جاتا ہے کہ نئے سال کی پارٹی کے دوران راجو سنگھ اور ہری سنگھ دونوں فائرنگ کر رہے تھے۔ڈرائیور رائفل سے فائر کر رہا تھا اور راجو سنگھ پستول چلا رہا تھا۔آٹھ سے 10 راؤنڈ فائرنگ کی گئی۔ خاتون کو جو گولی لگی ہے وہ22 بور والی ہے، جو راجو سنگھ چلا رہا تھا۔ فائرنگ کے بعد پارٹی میں موجود کسی بھی شخص نے پولیس کو فون نہیں کیا۔جب خاتون کو وسنت کنج کے فورٹس اسپتال میں داخل کرایا گیا تب اسپتال کی جانب سے فون آیا۔اس معاملے میں سابق ممبر اسمبلی کی بیوی کو بھی گرفتار کیا جائے گا، جس نے ثبوت مٹانے میں مدد کی تھی۔خون صاف کرنے میں راجو سنگھ کی بیوی، نوکر اور ڈرائیور کی مدد کی تھی۔

سابق ممبر اسمبلی کی بیوی بہار سے ایم ایل سی رہ چکی ہے۔سب کو گرفتار کیا جائے گا۔نئے سال کی پارٹی میں تقریبا 70 لوگ تھے۔کسی ایک شخص نے سابق ممبر اسمبلی سے کہا بھی تھا کہ آپ کی عادت ہے فائرنگ کرنے کی، بتا دینا ہم سائڈ ہو جائیں گے۔اس کے بعد لوگ رقص کرنے لگے۔اسی دوران راجو سنگھ نے گولی چلا دی اور خاتون کو لگ گئی۔سابق ممبر اسمبلی پر پہلے سے قتل اور قتل کی کوشش کے پانچ کیس درج ہیں۔وہ ہر خاص موقع پر فائرنگ کرتا ہے۔اس سے ایک پستول، دو رائفل اورتقریباً 800 کارتوس برآمد ہوئے ہیں۔ راجو سنگھ تین بار ایم ایل اے رہ چکا ہے۔پولیس نے ڈرائیور ہری سنگھ اور گھریلو ملازم رامیدر سنگھ کو بھی گرفتار کیا ہے۔مانڈی گاؤں کے فارم ہاؤس میں نئے سال کی پارٹی کے دوران خاتون ارچنا گپتا کو گولی لگی تھی۔واقعہ کے بعد ملزم جے ڈی یو کے سابق ممبر اسمبلی راجو سنگھ فرار ہو گیا تھا۔گولی ارچنا کے سر میں لگی۔اسکو وسنت کنج کے فورٹس اسپتال میں داخل کرایا گیا۔ارچنا کا علاج جاری ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں و کشمیر کے سابق سی ایم فاروق عبداللہ کو پی ایس اے کے تحت حراست میں لیا گیا

جموں و کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ فاروق عبداللہ کی حراست لیا گیا ہے۔ان کے حراست کو لے کر سپریم کورٹ میں داخل عرضی پر سماعت کے دوران عدالت نے مرکزی حکومت کو ایک ہفتے کا نوٹس دے کر جواب دینے کے لئے کہا گیا ہے۔

بابری مسجد ٹائٹل سوٹ؛ مسلم فریقوں کے وکیل ڈاکٹر راجیو دھون نے کیا بحث کاآغاز؛ کہا، چار سو سال پہلے بابر نے بنوائی تھی مسجد؛ تب سے ہورہی ہے لگاتار نماز

 آج چیف جسٹس کے کورٹ میں سب سے پہلے آر ایس ایس کے لیڈر گووند آچاریہ کی وہ درخواست پیش ہوئی جس میں انہوں نے عدالت سے کہا کہ اس مقدمہ کی شنوائی کو ٹیلی کاسٹ کیا جائے تاکہ عوام اسے براہ راست دیکھ سکیں۔ اس پر چیف جسٹس نے کورٹ کی رجسٹری سے کہا کہ وہ بتائیں کہ اس سسٹم کو جاری کرنے کے لئے ...