ورنکا کنڈوکیس:جیل سے نکلنے کے بعدماں کے ساتھ مندر گیاوکاس برالا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th January 2018, 10:53 AM | ملکی خبریں |

چنڈی گڑھ، 13جنوری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)چندی گڑھ کے مشہور ورنکا کنڈو چھیڑچھاڑ کیس میں ملزم وکاس برالا پانچ ماہ بعد جیل سے باہر آیا تو سب سے پہلے اپنی ماں کے پاس گیا اور گلے لگ کر پھوٹ پھوٹ کر رویا۔اس نے اپنی ماں کو بتایا کہ وہ اس معاملے میں مکمل طور پر بے گناہ ہے،اس کو غلط طریقے پرپھنسایاگیا۔اس کے بعد وہ اپنی ماں اور دیگر خاندان کے ارکان کے ساتھ سیدھامندرگیا، جہاں پوجا کی،تاہم میڈیا کواس پورے معاملے سے دور رکھا گیا۔اس سے پہلے جمعہ کو جیل سے باہر آنے کے بعد وکاس برالا نے کسی سے بات نہیں کی اور سیدھے گاڑی میں اپنے دوستوں کے ساتھ وہاں سے رفوچکر ہو گیا،وہ سب سے پہلے اپنی ماں کے پاس گیا۔ایک سوال کے جواب میں وکاس برالا نے کہا کہ وہ وقت آنے پر میڈیا کے سامنے آئے گا اور پورے معاملے کی حقیقت بتائے گا۔واضح رہے کہ ہریانہ بی جے پی کے صدر سبھاش برالا کے بیٹے وکاس برالا کو آئی اے ایس افسر کی بیٹی ورنکا کنڈو سے چھیڑ چھاڑ کرنے، اغوا کی کوشش کرنے اور پیچھا کرنے کے الزام میں جیل جانا پڑا تھا۔دونوں ملزموں نے پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ میں ضمانت کے لئے درخواست دی تھی۔جمعہ کو پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ نے برالا اور اس کے دوست آشیش کو مقدمہ میں ضمانت دے دی۔اسی سے ایک دن پہلے اس معاملے میں ورنکاسے کراس سوالات ختم ہوگئے۔چنڈی گڑھ میں چار اگست کی رات تقریباََ12بجے ہریانہ کے آئی اے ایس افسر کی بیٹی ورنکا اپنی گاڑی سے جا رہی تھیں، تبھی کار سوار دو لڑکوں نے اس کاپیچھاکیا۔اس کی گاڑی کو اپنی گاڑی سے آگے ڈال کر اسے روکنے کی کوشش کی۔ورنکا نے 100نمبرپر فون کیا اور پولیس کو بلایا اور پولیس نے دونوں ملزمان کو گرفتار کیا۔اس ورنکا کنڈو معاملے میں چار اگست 2017کو چنڈی گڑھ کے سیکٹر 26پولیس تھانے میں شکایت درج ہوئی تھی، جس میں شراب پی کر گاڑی سے پیچھا کرنے اور اغوا کی کوشش کرنے جیسے سنگین معاملے درج ہوئے تھے۔اس واقعہ کے دو دن بعد ہی ملزم وکاس برالا اور اس کے دوست آشیش کو چنڈی گڑھ پولیس نے گرفتار کیا تھا۔بہت ڈرامے کے بعد اسے سلاخوں کے پیچھے جانا پڑا تھا۔اس وقت وکاس اتنا براپھنساکہ سب رسوخ دھراکادھرارہ گیا۔وکاس گزشتہ 5ماہ سے چنڈی گڑھ کے بڈیل جیل میں بند تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

رافیل جنگی طیارہ سودے کو لے کر راہول گاندھی نے کیا وزیر دفاع سے استعفیٰ کا مطالبہ

کانگریس صدر راہل گاندھی نے وزیر دفاع نرملا سیتا رمن پر رافیل جنگی طیارہ سودے کو لے کر لگا تار جھو ٹ بولنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ ان کے جھوٹ کی پول کھلتی جا رہی ہے اس لئے اب وہ اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیں۔

جیٹ ایئرویز کے سیفٹی آڈٹ کا حکم، پائلٹ صاحب  ہوا کا دباو کم کرنے والا سوئچ آن کرنا ہی بھول گئے

جیٹ ائیرویز کے طیارہ میں پائلٹ ٹیم کی غلطی کی وجہ سے مسافروں کی طبیعت بگڑنے کے معاملہ میں شہری ہوابازی کی وزارت نے ڈی جی سی اے کو ایئر لائن کا سیفٹی آڈٹ کرنے کا حکم دیا ہے۔ شہری ہوابازی کے وزیر سریش پربھو نے اس معاملہ میں جانچ کی ہدایت بھی دی ہے۔

تین طلاق پر آرڈیننس لانامودی حکومت کی ہٹ دھرمی اورمسلم خواتین کو گمراہ کرنے کی مذموم کوشش:مولانا اسرارالحق قاسمی

معروف عالم دین وممبر پارلیمنٹ مولانا اسرارالحق قاسمی نے تین طلاق پرمودی حکومت کے آرڈیننس لانے کے اقدام کوقطعی نامناسب اور ضدو ہٹ دھرمی پر مبنی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کو موقر ایوان اور دستور کی کوئی پروانہیں ہے اور وہ آئندہ عام انتخابات کے پیش نظر مسلم خواتین کو گمراہ ...

بھساول ۔ناسک ٹاڈا مقدمہ؛ سرکاری گواہ کا پولس کی جانب سے لالچ دیئے جانے کا اعتراف؛ عرضداشت پر بحث مکمل، ۲۷؍ ستمبر کو ہوگا فیصلہ

24؍ سال پرانے بھساول۔ناسک ٹاڈا مقدمہ میں گذشتہ کل تیسر ے سرکاری گواہ کی گواہی عمل میں آئی جس کے دوران اس نے جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی) کی جانب سے مقرر کردہ دفاعی وکیل شریف شیخ کی جرح کی دوران اعتراف کیا کہ وہ اس معاملے میں پہلے ملزم تھا اور تحقیقاتی دستہ نے اس کا 164 اور 161 ...

طلاق دینے پر صرف مسلم مردوں کو سزاء کیوں؟ ہندومردوں کو سزاء کیوں نہیں؟ کویتا کرشنن کا سوال

ملک کی اپوزیشن جماعتوں اور سرگرم خاتون کارکنوں نے کل جبکہ حکومت ہند ’’ بیک وقت تین طلاق ‘‘ کو ایک تعزیری جرم قراردینے ‘ آرڈیننس جاری کرنے کا راستہ اختیار کیا ہے‘ حکومت سے پوچھا ہے کہ ایسے ہندومَردوں کیلئے مذکورہ نوعیت کی دفعات کیوں نہیں بنائی گئیں جو اپنی بیویوں کو ...