ورنکا کنڈوکیس:جیل سے نکلنے کے بعدماں کے ساتھ مندر گیاوکاس برالا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th January 2018, 10:53 AM | ملکی خبریں |

چنڈی گڑھ، 13جنوری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)چندی گڑھ کے مشہور ورنکا کنڈو چھیڑچھاڑ کیس میں ملزم وکاس برالا پانچ ماہ بعد جیل سے باہر آیا تو سب سے پہلے اپنی ماں کے پاس گیا اور گلے لگ کر پھوٹ پھوٹ کر رویا۔اس نے اپنی ماں کو بتایا کہ وہ اس معاملے میں مکمل طور پر بے گناہ ہے،اس کو غلط طریقے پرپھنسایاگیا۔اس کے بعد وہ اپنی ماں اور دیگر خاندان کے ارکان کے ساتھ سیدھامندرگیا، جہاں پوجا کی،تاہم میڈیا کواس پورے معاملے سے دور رکھا گیا۔اس سے پہلے جمعہ کو جیل سے باہر آنے کے بعد وکاس برالا نے کسی سے بات نہیں کی اور سیدھے گاڑی میں اپنے دوستوں کے ساتھ وہاں سے رفوچکر ہو گیا،وہ سب سے پہلے اپنی ماں کے پاس گیا۔ایک سوال کے جواب میں وکاس برالا نے کہا کہ وہ وقت آنے پر میڈیا کے سامنے آئے گا اور پورے معاملے کی حقیقت بتائے گا۔واضح رہے کہ ہریانہ بی جے پی کے صدر سبھاش برالا کے بیٹے وکاس برالا کو آئی اے ایس افسر کی بیٹی ورنکا کنڈو سے چھیڑ چھاڑ کرنے، اغوا کی کوشش کرنے اور پیچھا کرنے کے الزام میں جیل جانا پڑا تھا۔دونوں ملزموں نے پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ میں ضمانت کے لئے درخواست دی تھی۔جمعہ کو پنجاب اور ہریانہ ہائی کورٹ نے برالا اور اس کے دوست آشیش کو مقدمہ میں ضمانت دے دی۔اسی سے ایک دن پہلے اس معاملے میں ورنکاسے کراس سوالات ختم ہوگئے۔چنڈی گڑھ میں چار اگست کی رات تقریباََ12بجے ہریانہ کے آئی اے ایس افسر کی بیٹی ورنکا اپنی گاڑی سے جا رہی تھیں، تبھی کار سوار دو لڑکوں نے اس کاپیچھاکیا۔اس کی گاڑی کو اپنی گاڑی سے آگے ڈال کر اسے روکنے کی کوشش کی۔ورنکا نے 100نمبرپر فون کیا اور پولیس کو بلایا اور پولیس نے دونوں ملزمان کو گرفتار کیا۔اس ورنکا کنڈو معاملے میں چار اگست 2017کو چنڈی گڑھ کے سیکٹر 26پولیس تھانے میں شکایت درج ہوئی تھی، جس میں شراب پی کر گاڑی سے پیچھا کرنے اور اغوا کی کوشش کرنے جیسے سنگین معاملے درج ہوئے تھے۔اس واقعہ کے دو دن بعد ہی ملزم وکاس برالا اور اس کے دوست آشیش کو چنڈی گڑھ پولیس نے گرفتار کیا تھا۔بہت ڈرامے کے بعد اسے سلاخوں کے پیچھے جانا پڑا تھا۔اس وقت وکاس اتنا براپھنساکہ سب رسوخ دھراکادھرارہ گیا۔وکاس گزشتہ 5ماہ سے چنڈی گڑھ کے بڈیل جیل میں بند تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں کشمیر میں بی جے پی۔پی ڈی پی سرکار گرگئی؛ محبوبہ مفتی نے سونپا گورنر کو اپنا استعفیٰ

جموں کشمیر میں بی جے پی نے محبوبہ مفتی سرکار سے اپنی حمایت واپس لے لی ہے جس کے ساتھ ہی ریاست میں تین سالوں سے چلی آرہی گٹھ بندھن سرکار ختم ہوگئی ہے۔ بی جے پی کے سرکار سے  الگ ہونے کی اطلاع کے فوری  فوری بعد محبوبہ نے گورنر این این بوہرا  کو اپنا استعفیٰ سونپ دیا۔

ریاستی کانگریس لیڈروں کو نصیحت کرنے راہل گاندھی سے درخواست بہتر انتظامیہ کو یقینی بنانے دونوں پارٹیوں کے درمیان تال میل ضروری: ایچ ڈی کمار سوامی

ریاستی وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے آج دہلی میں کانگریس صدر راہل گاندھی سے ملاقات کر کے ریاست کی سیاسی صورتحال سے متعلق تبادلہ خیال کیا۔ ا س ملاقات کے دوران راہل گاندھی نے کمار سوامی کو مشورہ دیا کہ کرناٹک میں کانگریس جے ڈی ایس مخلوط حکومت کا یہ ابتدائی دور ہے۔

کسانوں کا قرضہ معاف کرنے مرکزی حکومت سے تعاون کی اپیل 85لاکھ سے زائد کسان مشکلات کا شکار ہیں ، مصیبت کی گھڑی میں ہاتھ تھامنا مرکزی و ریاستی حکومت کاکام ہے: کمار سوامی

قرض کی دلدل میں پھنسے ہوئے کسانوں کو اوپر لانے کی خاطر کئے جارہے قرضہ معاف اسکیم کو مرکزی حکومت 50فی صد امداد فراہم کرے ، اس خیال کااظہار ریاستی وزیر اعلیٰ کمار سوامی نے کیا۔

اتر پردیش میں گئو کشی کی افواہ پر مسلم نوجوان کا پیٹ پیٹ کر قتل

ملک میں گئو کشی روکنے کے نام پر غنڈہ گردی تھمنے کا نام نہیں لے رہی ہے۔ تازہ معاملہ اتر پردیش میں پلکھوا کے بچھیڑا خرد سے سامنے آیا ہے جہاں گوکشی کی افواہ پر کچھ شرپسندوں نے قاسم نامی نوجوان کو بری طرح مارا پیٹا اور قتل کر دیا۔

سکھ زائرین کی کار ٹرک سے جا ٹکرائی ایک بچہ، تین خواتین سمیت 7ہلاک 

پنجاب کے امرتسر کے پاس سموار اسپورٹس یوٹی لیٹی وہیکل کی ٹرک سے تصادم میں سات لوگ لقمہ اجل ہوگئے ۔واضح ہو کہ مہلوکین میں تین عورت سمیت ایک بچہ بھی ہے ۔ یہ تمام افرادامرتسر کے گولڈن ٹمپل کی زیارت اور پوجا ارچنا کرکے دہلی واپس آرہے تھے۔