ہنومان کو دلت قرار دینے پر چندر شیکھر آزاد نے کہا؛ دلتوں کو چاہیئے کہ وہ ہنومان مندروں پر قبضہ کرے

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 3rd December 2018, 1:41 AM | ملکی خبریں |

مظفر نگر :2/ڈسمبر ( ایس او نیوز)چیف منسٹر اترپردیش آدتیہ ناتھ کی جانب سے دعویٰ کئے جانے کے بعد کہ لارڈہنومان دلت تھے ، بھیم آرمی کے سربراہ چندر شیکھر نے آج کہاکہ دلت برادری کے افراد کو چاہئے کہ وہ ملک بھر میں تمام ہنومان مندروں پر قبضہ کرلیں اور وہاں دلتوں کو پجاری بنادیا جائے ۔ راجستھان کے الور ضلع میں ایک ریلی کے دوران آدتیہ ناتھ نے کہاتھا کہ ہنومان ایک دلت تھے ۔ انہوں نے تمام برادریوں کو متحد کرنے کاکام کیاتھا۔ اس پر اپنے رد عمل میں چندرشیکھر آزاد نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہاکہ دلتوں کو چاہئے کہ وہ ملک بھر میں تمام ہنومان مندروں پر قبضہ کرلیں اور وہاں دلت پجاریوں کا تقرر عمل میں لایا جائے ۔ آدتیہ ناتھ کو ان ریمارکس پر راجستھان کے ایک گروپ نے قانونی نوٹس روانہ کیاہے اور ان سے کہاکہ وہ لارڈہنومان کو دلت قرار دینے پر معذرت خواہی کریں ۔ گذشتہ ہفتے قومی قبائلی کمیشن کے صدر نشین نندکمار سائی نے یہ دعویٰ کیاتھا کہ لارڈہنومان ایک قبائلی تھے ۔ انہوں نے کہاکہ وہ دعویٰ سے یہ بات کہہ سکتے ہیں ۔ 

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان جب تک دہشت گردی کے خلاف مؤثرکاروائی نہیں کرتا، ایئر اسٹرائک جیسے قدم اٹھاتے رہیں گے: وزارت دفاع

وزارت دفاع نے دو ٹوک کہا ہے کہ جب تک پاکستان دہشت گرد گروپوں کے خلاف قابل اعتماد کارروائی نہیں کرتا، تب تک ہندوستان اپنی قومی سلامتی کو یقینی بنانے کے لئے سخت اقدامات اٹھاتا رہے گا۔