بابری مسجد قضیہ : پانچ ججوں کا آئینی بنچ 10 جنوری کو کرے گا سماعت، سرکلر جاری

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 9th January 2019, 2:10 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:8/جنوری (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)بابری مسجد قضیہ کی سماعت سپریم کورٹ کی پانچ ججوں کا آئینی بنچ کرے گا ۔ دس جنوری کو معاملے کی سماعت ہوگی۔ سماعت کرنے والے آئینی بنچ میں چیف جسٹس رنجن گوگوئی، جسٹس ایس اے بوبڑے، جسٹس این وی رمنا، جسٹس ڈی وائی چندرچوڑ ہیں۔ بابری مسجد قضیہ کی سماعت آئینی بنچ کے سپرد کئے جانے کے سلسلے میں سپریم کورٹ نے سرکلر جاری کر دیا ہے۔ سماعت کرنے والے بنچ میں چیف جسٹس کے علاوہ وہ چار جج ہیں جو مستقبل میں چیف جسٹس بنیں گے۔ اس میں کوئی مسلم جج نہیں ہے۔سابق میں سپریم کورٹ نے طے کیا تھا کہ ایودھیا کیس کی سماعت اب 10 جنوری کو نیا بنچ کرے گا۔ اس بنچ کی تشکیل 10 جنوری سے پہلے کئے جانے کی بات کہی گئی تھی۔ منگل کو اس بنچ کو تشکیل دے دی گئی ۔سپریم کورٹ کے چیف جسٹس رنجن گوگوئی کے بنچ نے گزشتہ سماعت بمشکل آدھے منٹ میں ختم کر دی تھی۔ سماعت میں کہا تھا کہ نیا بنچ اب اس معاملے میں آگے کی حکم جاری کرے گا۔ اس کے ساتھ ہی یہ بھی صاف ہو گیا تھا کہ نیا بنچ ہی طے کرے گا کہ معاملے کی سماعت کب سے کی جائے۔ نئے بنچ ہی یہ فیصلہ کرے گاکہ معاملے کی سماعت باقاعدگی کی جائے گی یا نہیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

الیکشن کمیشن کا حلف نامہ - گجرات میں راجیہ سبھا انتخابات قانون کے مطابق، کمزور پڑ رہی کانگریس 

گجرات میں راجیہ سبھا انتخابات کو لے کر کانگریس کی درخواست پر الیکشن کمیشن نے حلف نامہ داخل کیا ہے الیکشن کمیشن نے دو سیٹوں پر الگ الگ انتخابات کرانے کے اپنے فیصلے کو برقرار رکھا۔

بی ایس این ایل کی حالت خراب؛ ملازمین کو جون کی تنخواہ دینے کے لیے نہیں ہیں رقم

رکاری ٹیلی کام کمپنی بی ایس این ایل نے حکومت کو ایک خط  بھیجا ہے، جس میں کمپنی نے آپریشنز جاری رکھنے میں تقریبا نااہلی ظاہر کی ہے۔کمپنی نے کہا ہے کہ رقم میں  کمی کے سبب کمپنی کے ملازمین کو  جون ماہ کی تنخواہ  تقریبا 850 کروڑ روپے  دے پانا مشکل ہے۔کمپنی پر ابھی قریب 13 ہزار کروڑ ...