آسام :سائیکل پر بھائی کی لاش لے جاتا نظرآیا ایک شخص

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th April 2017, 10:48 AM | ملکی خبریں |

گوہاٹی، 19؍اپریل(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) اڑیسہ کے کالا ہانڈی ضلع میں بیوی کی لاش کو کندھے پر لے کر 10کلومیٹر تک چلنے والے دانا مانجھی کی تصویر کے بعد اب آسام کے وزیر اعلی سربانند سونووال کے اسمبلی حلقہ مجولی میں ایسا ہی ایک تکلیف دہ واقعہ سامنے آیا ہے۔آسام کے اخبارات میں شائع تصویر میں نظر آرہا ہے کہ ایک شخص اپنے 18سالہ بھائی کی لاش کو سائیکل سے لے جا رہا ہے۔بتایا جا رہا ہے کہ گاؤں کی سڑک اتنی خراب ہے کہ کوئی بھی گاڑی والا اس کے بھائی کی لاش کو لے جانے کے لیے تیار نہیں ہوا، آخر کار اس نے بھائی کی لاش کو کپڑوں میں لپیٹ کر سائیکل پر رکھ لیا اور اس کو لے کر نکل پڑا۔ایک مقامی نیوز چینل پر اس کی تصویر آنے کے بعد وزیر اعلی سونووال نے معاملے کی جانچ کی ہدایت دی ہے۔ساتھ ہی ریاست کے اعلی طبی حکام کو موقع پر پہنچنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ایک اخبار میں شائع خبر کے مطابق ،مرنے والا نوجوان لکھیم پور ضلع کے بالی جان گاؤں کا رہنے والا تھا،اس گاؤں سے اسپتا ل کی دوری تقریبا 8 کلومیٹر ہے۔میت کے بھائی نے کہا کہ منگل کو اسپتا ل میں اس کے بھائی کی موت ہو گئی تھی، اس کے بعد وہ وہاں سے اپنے بھائی کی لاش سائیکل پر باندھ کر گاؤں کے لیے نکل پڑا تھا۔ اس معاملہ میں مجولی کے ڈپٹی کمشنر پی جی جھا نے بتایا کہ نوجوان کی موت گارامر سول اسپتا ل میں ہوئی ہے۔اس واقعہ پر انہوں نے کہا کہ میت کے گاؤں بالی جان جانے کے لیے ایسی سڑک نہیں ہے کہ وہاں گاڑی لے جائی جا سکے، اس گاؤں میں جانے کے لیے بانس کے عارضی پل سے بھی گزرنا پڑتا ہے۔پیر کو اسپتا ل میں داخل کرائے گئے نوجوان کو سانس لینے میں تکلیف تھی، اس کے موت کی وجہ بھی یہی بتائی گئی ہیں۔گارامر سول اسپتا ل کے سپرنٹنڈنٹ مانک کا کہنا ہے کہ مرنے والے نوجوان کو انتہائی سنگین حالت میں اسپتا ل لایا گیا تھا،کافی کوشش کے بعد بھی اسے نہیں بچایاجاسکا ۔

ایک نظر اس پر بھی

اگرپاکستانی الیکشن میں مداخلت کررہاہے تواین آئی اے کیاکررہی ہے، اسدالدین اویسی کاسوال ،بنکاک میں پاکستان کے ساتھ مجوزہ میٹنگ کی تفصیلات بتائیں مودی

حیدرآبادکے رکن پارلیمنٹ و صدر کل ہند مجلس اتحاد المسلمین بیرسڑاسد الدین اویسی نے کہا ہے کہ گجرات کے انتخابی جلسوں میں جس طرح کی زبان وزیراعظم نریندر مودی استعمال کر رہے ہیں، اس پر ان کو کوئی تعجب نہیں ہوا ہے۔

خبطی ’ وکاس‘ کا تازہ ترین سروے ، مہنگائی آسمان پر ،اشیاء خوردنی کی قیمتوں میں اضافہ ، نومبر میں شرح 15 ماہ بلند سطح پر

سبزیاں، پھل او ر انڈوں کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ کی بری خبر ہے ۔ دن رات ٹی وی ڈیبیٹ نے عوام کو اس قدر غافل اور نکما کر دیا ہے کہ آج ہونے والے ہندو۔ مسلم موضوع پر پارٹی کے بکواس ترجمان کی ہنگامہ آرائی کو تو یاد رکھتے ہیں ؛