مغربی بنگال انتخابات میں ممتا کی پارٹی نے درج کی زبردست جیت، مگر نندی گرام میں ممتا کا کیا ہوا ؟ دیدی او دیدی کہنے والے دادا چاروں خانے چت

Source: S.O. News Service | Published on 3rd May 2021, 11:36 AM | ملکی خبریں |

کولکاتہ، 3/مئی (ایس او نیوز) مغربی بنگال کے اسمبلی انتخابات میں ایک طرف ممتا بینرجی کی   ترنمول کانگریس نے 213 سیٹوں پر زبردست کامیابی درج کرتے ہوئے  بی جے پی کے پورے کھیل کو بگاڑ کر رکھ دیا ہے وہیں دوسری طرف ممتا بنرجی  جنہیں الیکشن کمیشن سے پہلے 1200 ووٹوں سے جیت جانے کا اعلان کیا ہے، بعد میں اچانک  اپنا اعلان تبدیل کردیا اور کہا کہ  اس سیٹ پر بی جے پی کے سووندو ادھیکاری 1900 ووٹوں سے جیت گئے ہیں۔  نندی گرام  کے نتیجہ کو لے کر ممتا نے   ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا مطالبہ کیا ہے اور اخبار کو بیان دیتے ہوئے انہوں نے دعوی کیا ہے کہ وہ  اس سیٹ سے ہاری نہیں ہیں۔

یاد رہےکہ  ممتا  نے اپنا پرانی  اسمبلی نشست بھونی پورا   کو  چھوڑ کر ان کے معتمد خاص سووندوادھیکاری کے خلاف نندی گرام میں   الیکشن  میں کھڑے ہونے کا فیصلہ کیا تھا،ممتا کے خاص الخاص مانے جانے والے سووندو ادھیکاری کے   بی جےپی  جوائن کرنے کے بعد سمجھا جارہا تھا کہ  اس سے پارٹی کو کافی نقصان ہوگا ، مگر ممتا  کی ہمت کی داد دینی چاہئے  کہ انہوں نے اپنا حلقہ چھوڑ کر   سووندو ادھیکاری کے  خلاف انتخابی اکھاڑے میں اُترنے کا فیصلہ کیا۔

یاد رہے کہ نندی گرام  مغربی بنگال کی سب سے بڑی ہائی پروفائل سیٹ ہے، یہاں  ممتا کی پارٹی کو چھوڑ کربی جے پی میں شامل ہونے والے  ممتا کے ہی   معتمد خاص    سووندو ادھیکاری  کھڑے تھے جو یہاں ہمیشہ جیت درج کرتے آرہے تھے،  لیکن ممتا نے  سووندو ادھیکاری کو  سبق سکھانے کے لئے خود اس اسمبلی نشست سے انتخاب لڑنے کا فیصلہ کیا اور     ایسی سخت ٹکر دی کہ   بی جے پی کے  اب ہوش اُڑگئے  تھے۔

کہا جارہا تھا  کہ اس سیٹ کو حاصل کرنے کے لئے بی جے پی نے  ایڑی چوٹی کا زور لگایا ،امیت شاہ کے ساتھ ساتھ ادتیہ ناتھ یہاں تک کہ  خود وزیراعظم مودی بھی   ممتا کو ہرانے میدان میں اُتر گئے تھے اور سووندو ادھیکاری کے لئے پرچار کیا تھا۔ اتنا ہی نہیں  انتخابات کے موقع پر اس با ت کی بھی باتیں سامنے آرہی تھی کہ ممتا کو شکست دیتے  نندی گرام میں سنٹرل سیکورٹی فورس کو تعینات کردیا  ہے، الیکشن کمیشن پر  ناانصافی کرنے کا بھی الزام لگا اور  یہاں تک کہا گیا کہ  بی جے پی اور آر ایس ایس کارکنان کی فوج کے ساتھ ساتھ دنیا کی ہر دولت ممتا کے خلاف جھونک دی گئی تھی ۔ انتخابات کے دوران   ممتا نے الزام  لگایا تھا  کہ ووٹنگ کے دوران بی جے پی کارکنان   بوتھ پر قبضہ کر کے  دھاندلیاں   کررہے ہیں۔بتایا گیا تھا کہ  ممتا بنرجی بذات خود بویل نامی ایک بوتھ پر پہنچ گئیں تھی  جہاں بی جے پی کارکنان نے ان کو گھیر لیا تھا۔ ذرائع کی مانیں تو اکیلے نندی گرام میں ممتا کے کارکنان نے چناؤ کی خلاف ورزی کے 63 معاملات الیکشن کمیشن  میں درج کئے  تھے ، لیکن  ایک بھی شکایت پر کان نہیں دھرنے کا بھی  الزام تھا، ان سب کے باوجود جب  ممتا کی جیت کا اعلان ہوا تو ظاہر بات ہے کہ مخا لف خیمے والوں کے ہوش اُڑگئے ہوں گے۔مگر پھر الیکشن کمیشن نے اپنا سابقہ اعلان  تبدیل کردیا اور دوسرا اعلان کیا کہ  ممتا کے خلاف بی جے پی کے سووندو ادھیکاری جیت گئے ہیں۔ ویسے تو ممتا نے  ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا مطالبہ کیا ہے، اب یہ دیکھنا دلچسپ ہوگا کہ  آگے کیا ہوتا ہے۔

میڈیا رپورٹوں  کے مطابق مغربی بنگال میں   ممتا بنرجی کی  ترنمول کانگریس کو  213  جبکہ  بی جے پی کو 77  سیٹیں حاصل ہوئی ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

دہلی پولیس کا شری نیواس بی وی سے پوچھ گچھ کرنا سیاسی انتقام کے سوا کچھ نہیں ہے۔ ایس ڈی پی آئی

سوشیل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی جنرل سکریٹری کے ایچ عبدالمجید نے اپنے جاری کردہ اخباری بیان میں دہلی میں کوویڈ وبائی مرض سے متعلق امدادی سرگرمیوں میں حصہ لینے والے انڈین یوتھ کانگریس کے صدر شری نیواس بی وی سے دہلی پولیس کی جانب سے پوچھ گچھ کا سخت نوٹس  ...

کورونا کا خاتمہ جولائی تک نہیں ہوگا: ایکسپرٹ

جس طرح کورونا کے نئے معاملوں کی تعداد میں کمی درج ہو رہی ہے اس سے یہ امید بنی ہے کہ ہندوستان میں کورونا کی دوسری لہر کا خاتمہ جلد ہو جائے گا لیکن وبائی بیماریوں کے ماہر شاہد جمیل کا کہنا ہے کہ بھلے ہی ابھی کچھ ریاستوں میں کورونا کے کیس کم ہوتے نظر آ رہے ہوں لیکن دوسری لہر کا ...

سادگی کے ساتھ عید منائیں اور چھوٹی جماعت کے ساتھ عید کی نماز ادا کریں ، سرکردہ مسلم رہنماوں کی مسلمانوں سے اپیل

آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کے صدر مولانا رابع حسنی ندوی ۔ جمعیت علماءہند کے صدر مولانا ارشد مدنی ۔ جماعت اسلامی ہند کے امیر سید سعادت اللہ حسینی سمیت دیگر سرکردہ علماء اور مسلم قائدین مسلمانوں نے اپیل کی ہے کہ وہ کرونا کے بڑھتے خطرات کے پیش نظر احتیاط کریں اور مختصر جماعت ...

لاک ڈاؤن پر ہو سختی سے عمل: اشوک گہلوت

راجستھان میں عالمی وبا کورونا کی دوسری لہر کی چین توڑنے کے لئے آج صبح 5بجے سے لے کر 24 مئی تک سخت لاک ڈاؤن نافذ ہوگیا ہے۔ اس مدت کے دوران، ہنگامی اور ضروری خدمات، میڈیکل، دودھ اور دیگر ضروری خدمات کے لئے رعایت رہے گی۔