کووڈ 19- ویک ینڈ کرفیو کی کھلی خلاف ورزی، ونئے کلکرنی اور 300 افراد کے خلاف معاملات درج

Source: S.O. News Service | Published on 24th August 2021, 11:32 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو ،24؍ اگست (ایس او  نیوز)ریاستی پولیس نے سابق ریاستی وزیر اور کانگریس لیڈرونئے کلکرنی اور دیگر 300افراد کے خلاف کووڈ19-رہنما اصولوں کی خلاف ورزی کے الزام میں معاملہ درج کرلیا ہے۔ یاد رہے ان پر قتل کا الزام ہے اور ہفتہ 21اگست کو انہیں ضمانت پر رہا کیا گیا تھا۔ اسی دن وہ ہندلگا سنٹرل جیل سے چھوٹے تھے۔ لیکن اس پران کے ہزاروں حامیوں نے اکٹھا ہو کر ان کا ایک ہیرو جیسا استقبال کیا تھا۔اس موقع پر ویک ینڈ کرفیو کی کسی نے بھی پرواہ نہیں کی تھی۔ مہاراشٹرا کے سرحد سے ملنے والا ضلع بلگاوی ہفتے کے اواخر والے کرفیو کے تحت ہے۔ریاستی حکومت نے مہارااشٹراور کیرلا میں کووڈ معاملات میں اضافہ کے پیش نظر سرحدی اضلاع میں یہ کرفیو لگایا گیا ہے۔ ہفتہ کو جیسے ہی ونئے کلکرنی جیل سے نکلے ان کے ہزاروں چاہنے والے وہاں جمع ہوگئے اور کووڈ کرفیو کی کسی نے بھی بالکل پرواہ نہیں کی۔ بعد ازاں کانگریس قائد کو ایک کھلی جیپ میں ہنڈلگاجیل سے ایک جلوس کی شکل میں گنیش مندر تک لے جایا گیا۔پورے راستے میں ان کے چاہنے والے شور شرابہ کرتے اور سیلفی لیتے رہے۔کانگریس رکن اسمبلی لکشمی ہیبالکر نے کلکرنی کی پیشانی پر تلک لگاکر اور ان کے ہاتھ میں راکھی باندھ کر ان کا خیرمقدم کیا۔ ذرائع کے مطابق انہوں نے ان کے لئے خصوصی سونے کی راکھی بنوائی تھی۔ انہوں نے کہا، ”ونئے کلکرنی میرے بڑے بھائی کی طرح ہیں اور میں ان کی بہن کی طرح ہوں۔ ہمارا ایک خصوصی تعلق ہے۔ مسائل سے باہر آنے میں میں ان کی مدد کروں گی۔“ مجمع اور اخبار نویسوں سے خطاب کرتے ہوئے کلکرنی نے کہا، ”مجھے یقین تھا کہ میں باہر آؤں گا۔ عدلیہ میں مجھے اعتماد ہے۔ مجھے مذہبی بڑوں کا آشیرواد اور حلقہ کے لوگوں کا پیار بھی حاصل ہے۔میں ایک الگ قسم کا سیاستدان ہوں۔ امیر اور غریب سب میرے ساتھ ہیں۔لوگوں نے میرا اور میرے گھر والوں کا ہمیشہ ساتھ دیا ہے اور میں ان کا اس کے لئے ممنون ہوں۔“

ایک نظر اس پر بھی

مسلمانوں میں نکاح معاہدہ ہے نہ کہ ہندو شادی کی طرح رسم، طلاق کے معاملے پرکرناٹک ہائی کورٹ کااہم تبصرہ

کرناٹک ہائی کورٹ نے اہم تبصرہ کرتے ہوئے کہاہے کہ مسلمانوں کے یہاں نکاح ایک معاہدہ ہے جس کے کئی معنی ہیں ، یہ ہندو شادی کی طرح ایک رسم نہیں ہے اور اس کے تحلیل ہونے سے پیدا ہونے والے حقوق اور ذمہ داریوں سے دور نہیں کیا جاسکتا۔

کرناٹک سے روزانہ 2100کلو بیف گوا کو سپلائی ہوتاہے : وزیر اعلیٰ پرمود ساونت

بی جے پی کی اقتدار والی ریاست کرناٹک سے روزانہ 2000کلوگرام سے زائد جانور اور بھینس کا گوشت (بیف)گوا کو رفت ہونےکی جانکاری بی جے پی اقتدار والی ریاست گوا کے وزیرا علیٰ پرمود ساونت نے دی۔ وہ گوا ودھان سبھا کو تحریری جواب دیتےہوئے اس بات کی جانکاری دی ۔

کرناٹک کے داونگیرے میں ایک لڑکی نے والدین سمیت 4 افرادکو سلایا موت کی نیند؛ کیا ہے پورا واقعہ

کرناٹک میں ایک لڑکی نے امتیازی سلوک سے تنگ آکر اپنے پورے خاندان کو زہر دے کر ہلاک کردیا۔ جب فارنسک رپورٹ منظر عام پر آئی تو انکشاف ہوا کہ اس خاندان کی موت رات کے کھانے میں پائے جانے والے زہر سے ہوئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق داونگیر میں ایک 17 سالہ لڑکی کو کچھ عرصے سے اپنے خاندان ...

ہبلی میں مبینہ تبدیلی مذہب کی مخالفت کرتے ہوئے شدت پسند ہندو تنظیموں کے کارکنوں نے چرچ کے اندر گھس کر گایا بھجن

ہبلی میں تبدیلی مذہب کی مخالفت کرتے ہوئے ہندو شدت پسند تنظیموں کے کارکنوں نے ایک چرچ کے اندر گھس کر بھجن گانا شروع کردیا جس کی وائرل ہونے والی ویڈیو میں درجنوں مرد و خواتین کو دیکھا گیا ہے کہ وہ کس طرح ہبلی کے بیری ڈیوارکوپا چرچ کے اندر بیٹھے ہاتھ جوڑ کر بھجن گارہے ہیں۔