اقتدار کے نشے میں چور بی جے پی رکن اسمبلی نے اپنے ہی مسلم اکثریتی علاقہ کو بتایا پاکستان

Source: S.O. News Service | Published on 9th October 2019, 1:49 PM | ملکی خبریں |

اتر اکھنڈ،9؍اکتوبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) اقتدار کے نشے میں چور بی جے پی لیڈروں کے عجیب و غریب بیانات کوئی نئی بات نہیں ہے۔ تازہ معاملہ اتراکھنڈ کا ہے جہاں بی جے پی رکن اسمبلی سریش راٹھوڑ نے متنازعہ بیان دیا ہے۔ جوالہ پور اسمبلی حلقہ سے رکن اسمبلی سریش راٹھوڑ نے مسلم اکثریتی علاقہ کا موازنہ پاکستان سے کر دیا ہے۔ سریش راٹھوڑ کے متنازعہ بیان پر مبنی ویڈیو سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہو رہی ہے۔

دراصل بی جے پی رکن اسمبلی سریش راٹھوڑ نے سڑک کی سنگ بنیاد سے متعلق پروگرام میں کہا کہ "یہ سڑک 67 کلو میٹر لمبی ہے، ہمارے اسمبلی حلقہ کا دائرہ بھی 67 کلو میٹر ہے۔ اس میں 52 فیصد حصہ تو مسلم اکثریتی علاقہ میں آتا ہے جو ٹوٹل پاکستان ہے۔"

بی جے پی رکن اسمبلی نے اپنی تقریر کے دوران مزید کہا کہ "ہماری سیاست صرف 48 فیصد ووٹوں پر مبنی ہے۔ ہمیں یہ یقینی کرنا ہے کہ سڑک تعمیر صحیح طریقے سے ہو اور یہاں کسی بھی طرح کی شکایت نہ ہو، اور نہ ہی معیار سے کوئی سمجھوتہ کیا جائے گا۔" قابل ذکر ہے کہ جوالہ پور حلقہ مسلم اکثریتی علاقہ ہے اور یہ ہریدوار ضلع میں آتا ہے۔ یہ سیٹ 2012 سے بی جے پی کے قبضے میں ہے۔

بہر حال، بی جے پی لیڈروں کے متنازعہ بیانات کا سلسلہ لگاتار دراز ہی ہوتا جا رہا ہے۔ سریش راٹھوڑ سے پہلے بھی اقتدار کے نشے میں چور بی جے پی لیڈروں نے کئی عجیب و غریب بیانات دے کر تنازعہ کھڑا کیا۔ حال ہی میں یو پی کے فتح آباد اسمبلی سے بی جے پی رکن اسمبلی جتیندر ورما نے افسروں کو دھمکاتے ہوئے کہا تھا کہ جو کام نہیں کریں گے اسے جوتا ماریں گے۔ اس واقعہ کا ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر خوب وائرل ہوا تھا۔ اس ویڈیو میں وہ کہتے ہوئے نظر آ رہے تھے کہ کوئی اگر صحیح سے کام نہیں کرے گا تو وہ خود آ کر جوتے ماریں گے اور کام کرائیں گے۔ وائرل ویڈیو میں بی جے پی رکن اسمبلی یہ بھی کہتے ہوئے نظر آئے تھے کہ جب تک ہم لوگ ایسی سوچ نہیں بنائیں گے، تب تک بدعنوانی بند نہیں ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

شاہین باغ احتجاج پرسپریم کورٹ نےکہا، ماحول نہیں ہےسازگار، سماعت23مارچ تک ملتوی

دہلی کے شاہین باغ سے این اے سی اے اور این آر سی مخالف مظاہرین کو ہٹانے کے لئے درخواستوں پر سپریم کورٹ میں سماعت ہوئی۔ اس کیس کی سماعت جسٹس سنجے کشن کول اور جسٹس کے ایم جوزف پر مشتمل بینچ کررہی ہے۔

دہلی تشدد: امن کی اپیل کرتے ہوئے سونیا گاندھی نے کہا ’فرقہ پرست طاقتوں کا منصوبہ ناکام بنائیں‘

کانگریس صدر سونیا گاندھی نے دہلی کی عوام سے فرقہ وارانہ خیر سگالی بنائے رکھنے اور ملک کو مذہب اور ذات-پات کی بنیاد پر تقسیم کرنے والی فرقہ پرست طاقتوں کے غلط منصوبوں کو ناکام کرنے کی اپیل کی ہے۔

مدھیہ پردیش ملک کی پہلی ریاست جہاں یونیفائیڈ ڈرائيونگ لائسنس اور رجسٹریشن کارڈ جاری ہوا

مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ کمل ناتھ نے آج یہاں ’یونیفائیڈ ڈرایيونگ لائسنس اور رجسٹریشن کارڈ‘ کا افتتاح کرتے ہوئے نئے نظام کا آغاز کیا۔ سرکاری ذرائع کے مطابق مدھیہ پردیش ملک کی پہلی ریاست بن گئی ہے، جس نے یونیفائیڈ ڈرائيونگ لائسنس اور رجسٹریشن کارڈ کا ایک ساتھ افتتاح کیا ہے۔

بہار میں این آر سی لاگو نہیں ہوگا: نتیش کمار

  بہار کے وزیراعلیٰ نتیش کمار نے آج اسمبلی میں قومی شہری رجسٹر ( این آر سی) کو غیر ضروری بتایا اور کہا کہ قومی مردم شماری رجسٹر ( این پی آر ) کے حالیہ خاکہ سے مستقبل میں این آر سی کے نفاذ پر کچھ لوگوں کو خطرات لاحق ہوں گے اسی کو دیکھتے ہوئے ان کی حکومت نے این پی آر 2010 کے پرانے خاکہ کی ...

دہلی تشدد، سی اے اے داخلی معاملہ، ہندوستان میں مسلمانوں سے تفریق نہیں ہوتی: ڈونلڈ ٹرمپ

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ہندستان میں مسلمانوں سے تفریق کئے جانے کے الزامات کو سرے سے خارج کرتے ہوئے شہریت ترمیمی قانون (سی اے اے) اور دہلی میں فرقہ وارانہ تشدد کو ہندستان کاداخلی معاملہ قرار دیتے ہوئے اس پر تبصرہ کرنے سے انکار کردیا۔