سی اے اے کی دوڑ میں یو پی سب سے آگے، 40 ہزار ہندو مہاجرین کی لسٹ مرکز کے حوالے

Source: S.O. News Service | Published on 13th January 2020, 8:55 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،13/جنوری (ایس او نیوز/یو این آئی) پارلیمنٹ سے شہریت (ترمیمی)قانون کے پاس ہونے کے بعد ملک میں اس متنازع قانون کو نافذ کرنے والا اترپردیش پہلا صوبہ ہوگا۔اطلاعات کے مطابق ریاستی حکومت نے 19 اضلاع میں رہ رہےہندو پناہ گزینوں کی فہرست بھیج دی ہے۔ پیر کو یہاں ذرائع نے بتایا کہ ریاستی حکومت نے پاکستان،افغانستان اور بنگلہ دیش سے آکر ریاست کے 19 اضلاع میں رہنے والے ہندو پناہ گزینوں کی فہرست گزشتہ ہفتے مرکزی وزیر داخلہ کو بھیج دی ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ یو پی کے 19 اضلاع میں رہنے والے 40000غیر مسلم غیر قانونی مہاجرین کی لسٹ تیار کر کے مرکز کو بھیجی گئی ہے ان اضلاع کے نام آگرہ،رائے بریلی، سہانپور،گورکھپور،علی گڑھ،رامپور،مظفر نگر،ہاپوڑ،متھرا،کانپور، پرتاپ گڑھ، وارانسی،امیٹھی،جھانسی،بہرائچ،لکھیم پور کھیری،لکھنؤ،میرٹھ اور پیلی بھیت شامل ہیں۔

ذرائع کے مطابق ان میں سے صرف پیلی بھیت سے 30 تا 35 ہزار مہاجرین کے نام ہیں۔ مہاجرین پر مشتمل رپورٹ ، ہر ضلع سے ان کی تفصیل اور کچھ افرادکی گواہی پر مبنی ہے جسے محکمہ داخلہ اور وزیر اعلی کے دفتر میں جمع کیا گیا ہے۔ لسٹ میں ان مہاجرین کے ان مشکلات اور دقتوں کو بھی شامل کیا گیا ہےجن کا انہیں افغانستان،پاکستان اور بنگلہ دیش میں سامنا کرنا پڑا۔ گزشتہ ہفتے ریاستی محکمہ داخلہ نے تمام اضلاع کے ڈی ایم سے پاکستان،بنگلہ دیش اور افغانستان سے آئے مہاجرین کی شناخت کر کے اس ضمن میں حکومت کو فہرست سونپنے کی ہدایت دی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

یوم جمہوریہ کے موقع پر پس مرگ پدما وبھوشن ایوارڈ پانے والوں میں شامل ہیں اڈپی پیجاورمٹھ سوامی اور جارج فرنانڈیز

یوم جمہوریہ کے موقع پر مرکزی حکومت کی طرف سے مختلف شعبہ ہائے زندگی میں نمایاں خدمات انجام دینے والی شخصیات کو پدما بھوشن اور پدماوبھوشن جیسے اعزازات سے نوازا جاتا ہے۔ امسال جن شخصیات کو پس مرگ پدماوبھوشن ایوارڈ سے نوازا گیا ہے اس میں پیجاور مٹھ کے سوامی اور سابق مرکزی وزیر ...

شاہین باغ وہ انقلاب ہے جو اب تھمنے والا نہیں ... آز:ظفر آغا

شاہین باغ اب محض ایک پتہ نہیں بلکہ ایک تاریخ ہے۔ یہ وہ تاریخ ہے جس کا سلسلہ 1857 سے ملتا ہے۔ جی ہاں، 1857 میں جس طرح انگریزوں کے مظالم اور ناانصافی کے خلاف بہادر شاہ ظفر کی قیادت میں ایک بغاوت پھوٹ پڑی تھی، ویسے ہی نریندر مودی کے خلاف شاہین باغ سے ایک بغاوت کا نقارہ بج اٹھا ہے اور ...

دہلی کے شاہین باغ میں لاکھوں مظاہرین نے منایا پورے جوش وخروش کے ساتھ یوم جمہوریہ؛ شہریت قانون کی سخت مخالفت

شہریت قانون کی مخالفت کرنے والے احتجاجیوں نے آج 26 جنوری کے موقع پر پورے جوش و خروش کے ساتھ یوم جمہوریہ کی تقریب منائی اور لاکھوں لوگوں کی موجودگی میں  شاہین باغ میں ہی ترنگا جھنڈا لہراتے ہوئے  ملک میں نئے انقلاب  کی جھلک دکھائی۔

شہریت قانون اور این آر سی ملک کے دلتوں، غریبوں اور پسماندہ طبقہ کے خلاف ہے؛ سیتامڑھی میں انسانی زنجیر کے ذریعے احتجاج

  سی اے اے، این آر سی اور این پی آر کے خلاف احتجاجی مظاہرے اب شہروں سے نکل کر گاوں اور دیہاتوں میں بھی پھیل چکے ہیں اور ملک کے تقریبا ہر علاقوں سے بڑے پیمانے پر ریلیاں اور احتجاج کئے جانے کی خبریں موصول ہورہی ہیں، اسی طرح ایک خبر بہار  کےضلع سیتامڑھی کے سونبر سا بلاک کے مہولیا ...

شہریت قانون کی مخالفت میں اب شیموگہ میں نظر آرہا ہے شاہین باغ ؛26 جنوری کی رات کو پبلک پارک میں عورتوں کا جم غفیر!

جیسے جیسے شہریت قانون کی مخالفت میں اُٹھنے والی آوازوں کو دبانے کی کوشش کی جارہی ہے، یہ اُتنی ہی تیزی کے ساتھ اُبھرتی نظر آرہی ہے، اب تازہ خبر ریاست کرناٹک کے شہر شموگہ سے سامنے آئی ہے جہاں 25 جنوری کی شام سے ہی  آر ایم نگر میں موجود پبلک پارک میں خواتین کی بھیڑ جمع ہونی شروع ...

جدوجہد کرنے والے نوجوان گاندھی جی کے عدم تشدد کے پیغام کو ہمیشہ یاد رکھیں: صدر جمہوریہ رامناتھ کووند کا قوم کو پیغام

صدر جمہوریہ رامناتھ کووند نے جمہوریت کے لئے حکمراں اور اپوزیشن دونوں فریقوں کو اہم قرار دیتے ہوئے عوام خاص طورپر نوجوانوں کو بابائے قوم مہاتما گاندھی کے عدم تشددے کے منتر کو ہمیشہ یاد رکھنے کی تلقین کی۔