ووٹروں کی خواہشات کو پورا کرنا ممبران پارلیمنٹ کی اولین ترجیح ہونی چاہیے:رام ناتھ کووند

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 20th June 2019, 11:34 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،20/جون (ایس او نیوز/ آئی این ایس انڈیا) صدر رام ناتھ کووند نے جمعرات کو ارکان پارلیمنٹ کو مشورہ دیا کہ عوام نمائندوں کے طور پر انہیں اپنے فرائض کو اولین ترجیح دینی چاہئے، تبھی ملک کے باشندوں اور شہریوں کے فرائض پر عمل کے لئے حوصلہ افزائی ہو پائیں گے۔صدر نے پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کے مشترکہ اجلاس میں اپنے خطاب میں یقین ظاہر کیا کہ ممبران پارلیمنٹ اپنے فرائض پر عمل کرتے ہوئے نئے ہندوستان کی تعمیر میں اپنا مؤثر کردار ادا کریں گے۔ مجھے یقین ہے کہ راجیہ سبھا اور لوک سبھا کے تمام اراکین اپنے فرائض کوبخوبی نبھاتے ہوئے آئین کے آدرشوں کو حاصل کرنے میں اپنی انمول شراکت دیں گے۔اس طرح آپ نئے بھارت کی تعمیر میں مؤثر کردار ادا کریں گے۔کووند نے کہاکہ تمام ممبران پارلیمنٹ کو میرا مشورہ ہے کہ آپ گاندھی جی کے اصل منتر کو ہمیشہ یاد رکھئے۔گاندھی جی نے کہا تھا کہ ہمارا ہر فیصلہ اس بات پر منحصر ہوناچاہیے کہ اس کا اثر معاشرے کے غریب ترین اور کمزور شخص پر کیا پڑے گا۔انہوں نے کہاکہ آپ بھی اس ووٹر کو یاد رکھیں جو اپنا سب کام چھوڑ کر، تمام مشکلات کے درمیان، ووٹ دینے کے لئے نکلا، پولنگ بوتھ تک گیا اور ووٹنگ کرکے ملک کے تئیں اپنا فرض نبھایا۔اس کی خواہشات کو پورا کرنا ہی آپ کی اولین ترجیح ہونی چاہیے۔کووند نے کہاکہ عوامی نمائندے اور ملک کے شہری کے طور پر ہم سب کو اپنے فرائض کو ترجیح دینی ہوگی۔تبھی ہم وطنوں کو ہم شہری فرائض پر عمل کی ترغیب دے پائیں گے۔اپنے خطاب میں انہوں نے لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات ایک ساتھ کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا اور کہا کہ ملک کے کسی نہ کسی حصے میں اکثر انتخابات ہوتے رہنے سے ترقی کی رفتار متاثر ہوتی ہے۔انہوں نے کہاکہ گزشتہ چند دہائیوں کے دوران ملک کے کسی نہ کسی حصے میں اکثر کوئی نہ کوئی انتخابات منعقد ہونے سے ترقی کی رفتار اور تسلسل متاثر ہوتی رہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

یوپی اسمبلی: پرینکا گاندھی کو سون بھدر جانے سے روکنے اور حراست پر زَبردست ہنگامہ

ریاستی حکومت کے ذریعہ کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی واڈرا کو سون بھد رجانے سے روکنے، انہیں 27 سے زیادہ گھنٹوں تک حراست میں رکھنے و ریاست میں ایس پی حامیوں کے ہوئے رہے قتل پر یو پی اسمبلی میں کانگریس و ایس پی اراکین نے جم کر ہنگامہ کیا۔

مودی حکومت نے لوک سبھا میں ’آر ٹی آئی‘ ختم کرنے والا بل پیش کیا: کانگریس

  کانگریس نے الزام لگایا ہے کہ ’کم از کم گورنمنٹ اور زیادہ سے زیادہ گورننس‘ کی بات کرنے والی مرکزی حکومت لوگوں کے اطلاعات کے حق کے تحت حاصل حقوق کو چھین رہی ہے اور اس قانون کو ختم کرنے کی کوشش کررہی ہے۔