ریلوے کی نجکاری کر غریبوں کا آخری سہارا بھی چھین رہی مودی حکومت: راہل گاندھی

Source: S.O. News Service | Published on 2nd July 2020, 9:36 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،2؍جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) اپنی پہلی مدت کار سے ہی مودی حکومت نجکاری کی راہ پر گامزن ہے۔ کئی بڑی سرکاری کمپنیوں کی نجکاری ہو چکی ہے اور کئی قطار میں ہیں۔ یہاں تک کہ مودی حکومت ملک کی لائف لائن کہے جانے والے ریلوے میں بھی نجکاری کی طرف قدم بڑھا چکی ہے۔ حکومت نے اس کے لیے 109 جوڑی ٹرینوں کے لیے پروپوزل مانگا ہے۔ کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے مودی حکومت کے اس فیصلے کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ جمعرات کو راہل گاندھی نے ٹوئٹ کر کے کہا کہ ریل غریبوں کی واحد لائف لائن ہے اور حکومت ان سے یہ بھی چھین رہی ہے۔ جو چھیننا ہے چھینیے، لیکن یاد رہے، ملک کے عوام اس کا سخت جواب دیں گے۔

قابل ذکر ہے کہ مودی حکومت کافی وقت سے ریلوے میں نجکاری کے لیے کام کر رہی ہے۔ فی الحال ملک میں 3 جوڑی نجی ٹرینیں چل رہی ہیں۔ اب وزارت ریل نے 109 جوڑی پرائیویٹ ٹرینیں چلانے کے لیے 'ریکویسٹ فار کوالیفکیشن' (آر ایف کیو) مانگا ہے۔

اس سے قبل بھی مرکزی حکومت کی جانب سے کچھ سرکاری اداروں کی نجکاری کرنے کی کوشش کی گئی جس پر راہل گاندھی اکثر حملہ آور رہے ہیں۔ پھر چاہے ریلوے ہو یا پھر پہلے ائیر انڈیا کو فروخت کرنے کی بات ہو۔ راہل گاندھی کے علاوہ کانگریس پارٹی کے دیگر لیڈروں اور اپوزیشن پارٹیوں نے بھی مودی حکومت کے اس فیصلے کی مخالفت کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

یوم آزادی کے موقع پر 926 پولس اہلکاروں کو تمغے سے نوازا گیا

یوم آزادی کے موقع پر ملک بھر میں 926 پولس اہلکاروں کو پولس میڈل سے نوازا گیا ہے، جن میں سے 215 پولس اہلکاروں کو بہادری کا میڈل، 80 اہلکاروں امتیازی کاموں کے لیے صدر جمہوریہ کا تمغہ اور 631 اہلکاروں کو خصوصی خدمات کے لیے صدرجمہوریہ کے تمغے کے لیے منتخب کیا گیا ہے۔