یو پی میں خواتین کے خلاف دلدوز جرائم پر خاموش کیوں ہے یوگی حکومت: پرینکا گاندھی

Source: S.O. News Service | Published on 14th February 2020, 1:11 AM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،14/فروری(ایس او نیوز/ایجنسی) اتر پردیش میں بڑھتے جرائم کے واقعات پر کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے یوگی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ انھوں نے جرائم کے بڑھتے واقعات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اتر پردیش میں روزانہ خواتین کے ساتھ جرائم ہو رہے ہیں، لیکن ان دل دہلا دینے والے واقعات پر حکومت خاموشی اختیار کیے ہوئےہے۔

پرینکا گاندھی نے اس سلسلے میں ایک ٹوئٹ کیا ہے جس میں انھوں نے لکھا ہے کہ ’’فیروز آباد میں عصمت دری متاثرہ کے والد کا قتل کر دیا گیا۔ سیتا پور میں بچی کی عصمت دری کی گئی اور پھر قتل کر دیا گیا۔ کہاں ہے حکومت؟‘‘ وہ مزید لکھتی ہیں کہ ’’بی جے پی راج میں خواتین کے خلاف جرائم کا گراف بڑھا ہے، لیکن کوئی ذمہ داری بھی نہیں لے رہے۔‘‘ اپنے ٹوئٹ میں کانگریس جنرل سکریٹری نے ایک تصویر بھی پیش کی ہے جس میں لکھا ہے ’’ایٹہ میں گھر میں گھس کر عصمت دری کی کوشش اور ناکام ہونے پر لڑکی کا گلا ریتا۔ سیتا پور میں 3 سال کی بچی کے ساتھ عصمت دری اور اس کا قتل کر دیا گیا۔ فیروز آباد میں عصمت دری متاثرہ کے والد کو گولی مار کر قتل کر دیا گیا۔ چترکوٹ میں دیوانگنا وادی کے پاس ملی خاتون کی لاش، گھر والوں نے لگایا قتل کا الزام۔‘‘

واضح رہے کہ بدھ کے روز کانگریس جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی اعظم گڑھ کے بلیریا گنج میں شہریت ترمیمی قانون کے خلاف مظاہرہ میں تشدد کے دوران زخمی خواتین سے ملاقات کے لیے پہنچی تھیں۔ اس دوران پرینکا گاندھی نے کہا تھا کہ یہ (یوگی) حکومت پوری طرح سے غریبوں کے خلاف کام کر رہی ہے۔ انھوں نے مزید کہا تھا کہ جن لوگوں پر ظلم ہوا ہے اور جو لوگ جیل میں بند ہیں، ان کو انصاف دلانے کی ہر ممکن کوشش کی جائے گی۔ انھوں یہ بھی کہا تھا کہ ’’آپ سبھی کے ساتھ غلط کیا گیا ہے۔ ہمیں اس ناانصافی کے خلاف کھڑا ہونا ہوگا۔‘‘

ایک نظر اس پر بھی

پاکستان میں مندر کی تعمیر پر روک رجعت پسندانہ اقدام: التجا مفتی

 پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی صاحبزادی التجا مفتی نے پاکستان کے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک مندر کی تعمیر پر جاری تنازعے کے حوالے سے کہا ہے کہ مندر کی تعمیر پر روک ایک اسلامی فلاحی ریاست کے مذہبی آزادی کے تصور کے منافی ہے۔