سیلاب کی صورت حال سے حفاظت کیلئے 17 محکموں کی کار گاہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th June 2019, 10:44 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،11؍جون(ایس او نیوز)  بروہت بنگلورو مہا نگرا پالیکے (بی بی ایم پی) اور کرناٹک قدرتی آفات سے تحفظ انتظامیہ (کے ایس ڈی ایم اے) نے حال ہی میں شہری سیلاب کی صورت حال اور بنیادی ڈھپانچہ کے انہدام سے متعلق ایک معیاری ضابطہ عمل (ایس او پی) کی تیاری کے لئے 17 مختلف سرکاری محکموں کے ذمہ داران کی ایک کارگاہ منعقد کی تھی-منصوبہ در اصل شہری سیلاب کی صورت حال پر زیادہ موثر انداز میں قابو پانے کے لئے تمام اداروں اور وسائل کو مربوط کرکے ایک پلیٹ فارم پر جمع کرنا ہے-مذکورہ کارگاہ میں ہر ایک محکمہ کی طرف سے اس مسئلہ کے حل کے سلسلہ میں اس کا اپنا کیا کردار ہو سکتا ہے اس تعلق سے تجاویز و آراء پیش کی گئیں اور ان پت تبادلہ خیال بھی کیا گہا ہے-واضح رہے کہ کرناٹک ریاستی قدرتی آفات سے تحفظ انتظامیہ نے دوسری ریاستیں جیسے آندھرا پردیش اور کیرلا میں شہری سیلاب کی صورت حال اور اس کے اثرات سے متعلق مختلف معیارات کا مطالعہ کیا ہے- بی بی ایم پی کمشنر این منجو ناتھ نے بتایا کہ ”یہ کار گاہ موسم باراں کے لئے ایک منصوبہ عمنل کی تیاری کے سلسلہ میں تھی اور اس مقصد کے تحت بھی کہ ہرایک محکمہ اس بات سے واقف ہو کہ اس کا کردار کیا ہوگا“-

ایک نظر اس پر بھی

اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر سے ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

جنوبی کینرا بنٹوال تعلقہ کے سجی پانڈو دیہات میں ہر سال بارش کے موسم میں گزشتہ 30 برسوں سے لوگوں کو ہمیشہ  پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ علاقہ اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر کے حلقہ میں آتا ہے اور یہاں مسلمانوں کی کثیر آباد ی ہے۔

منگلورو۔کاسرگوڈ سرحد پر مسافروں کیلئے پریشانی

ریاست میں گزشتہ ماہ اپریل سے ہی کورونا وائرس پھیلنے کے نتیجہ میں کیرالہ ۔ کرناٹک کی سرحد پر واقع کاسرگوڈ اور منگلورو کے درمیان روازنہ ملازمت اور تعلیم کے سلسلہ میں آنے جانے والے لوگوں کیلئے ہر دن نت نئی پریشانیوں کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔

کرناٹک میں کووڈ۔19 کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں، مرکزی ٹیم کا چیف منسٹر و عہدیداروں کے ساتھ تبادلہ خیال؛ سری راملو کی پریس کانفرنس

کرناٹک نے منگل کے روز مرکز ی ٹیم کو بتایا کہ ریاست میں کووڈ۔19 کے کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں ہے۔ریاستی وزیر صحت و خاندانی بہبود بی سری راملو نے میڈیا سے کہا ’’ ہم نے یہ واضح کردیا ہے کہ یہاں کمیونٹی پھیلاؤ کا امکان نہیں ہے۔ ہم ، دوسرے اور تیسرے مرحلہ کے درمیان ہیں‘‘۔

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری؛ پھر 1498 نئے معاملات، صرف بنگلور سے ہی سامنے آئے 800 پوزیٹیو

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری ہے اور ریاست  میں روز بروز کورونا کے معاملات میں اضافہ دیکھا جارہا ہے، ریاست کی راجدھانی اس وقت  کورونا کا ہاٹ اسپاٹ بنا ہوا ہے جہاں ہر روز  سب سے زیادہ معاملات درج کئے جارہے ہیں۔ آج منگل کو پھر ایک بار کورونا کے سب سے زیادہ معاملات بنگلور سے ہی ...

کورونا: ہندوستان میں ’کمیونٹی اسپریڈ‘ کا خطرہ، اموات کی تعداد 20 ہزار سے زائد

  ہندوستان میں کورونا انفیکشن کے بڑھتے معاملوں کے درمیان کمیونٹی اسپریڈ یعنی طبقاتی پھیلاؤ کا  اندیشہ بڑھتا نظر آرہا ہے۔ بالخصوص کرناٹک  میں کورونا انفیکشن کے کمیونٹی اسپریڈ کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔ کرناٹک کے علاوہ گوا، پنجاب و مغربی بنگال کے نئے ہاٹ اسپاٹ بننے کے ...

منگلورو:گروپور میں منڈلارہا ہے مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ۔ قریبی گھروں کو کروایا گیاخالی۔ مکینوں میں مایوسی اور دہشت کا عالم

گروپور میں اتوار کے دن بنگلے گُڈے میں پہاڑی کھسکنے سے جہاں  تین  مکان زمین بوس اور دو بچے، صفوان (16سال) اور سہلہ (10سال) جاں بحق ہوگئے تھے وہاں پر مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ لوگوں کے سر پر منڈلا رہا ہے۔