ہند۔پاک رشتوں میں تلخی، اٹاری-واہگہ پر ایک دوسرے کو نہیں دی مٹھائی

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th August 2019, 10:48 PM | ملکی خبریں |

واہگہ،14اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) آرٹیکل 370 پر مودی حکومت کے فیصلے سے ہندوستان اور پاکستان کے تعلقات میں تلخی برقرار ہے۔عید الاضحی کے بعد اب پاکستان کے یوم آزادی کے موقع پر دونوں ممالک کے درمیان مٹھائیوں کا تبادلہ نہیں کیا گیا۔اٹاری-واہگہ سرحد پرسر حد سیکورٹی فورس (بی ایس ایف) اور پاکستانی رینجرز نے ایک دوسرے کو مٹھائی نہیں دی۔عید الاضحی پر اٹاری واہگہ سرحدپر واقع ہند-پاک سرحد پر ہندوستان نے پاکستان کو میٹھی پیشکش کی تھی، جسے پاکستان نے لینے سے انکار کر دیا تھا۔اس سے پہلے پاکستان نے سمجھوتہ اور تھر ایکسپریس کے ساتھ لاہور بس سروس کو بند کر دیا تھا۔اب تک ایسی روایت رہی ہے کہ جب بھی کوئی بڑا تہوار ہوتا ہے دونوں فریق کی جانب سے آپس میں مٹھائیاں تقسیم جاتی ہیں لیکن پاکستان جموں و کشمیر پر حکومت ہند کے تاریخی فیصلے سے بوکھلا گیا ہے۔پاکستان کے ایک کے بعد ایک ایسے فیصلے سامنے آرہے ہیں، جن سے دونوں ممالک کے درمیان تلخیاں بڑھ جائیں۔سرحدوں پر تہوار کے دوران میٹھی چیزیں بانٹنے کی روایت رہی ہے۔اس سے پہلے عید، دیوالی اور ہولی کے موقع پر پاکستان اور ہندوستان کے بھی نوجوان ایک دوسرے سے گلے ملتے رہے، مٹھائیاں بانٹتے رہے لیکن اقتصادی تنگی کا شکار پاکستان ایک کے بعد ایک ایسے فیصلے کر رہا ہے جس کی وجہ سے اس کی جھنجھلاہٹ صاف جھلک رہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

عصمت دری کی راجدھانی بن گیا ہندوستان پھر بھی خاموش ہیں پی ایم مودی: راہل

 کانگریس کے سنیئر لیڈر راہل گاندھی نے اتر پردیش میں ایک لڑکی کے ساتھ ہوئی عصمت دری معاملے پر وزیراعظم نریندر مودی پر خاموشی اختیار کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے آج کہاکہ ہندوستان دنیا کی عصمت دری کی راجدھانی میں تبدیل ہو رہا ہے ،