بھیما کوریگاؤں معاملے کی ملزم سدھا بھاردواج کی مشکلات میں اضافہ، ضمانت کے خلاف سپریم کورٹ پہنچی این آئی اے

Source: S.O. News Service | Published on 3rd December 2021, 11:35 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی ،3 ؍دسمبر (آئی این ایس انڈیا) چھتیس گڑھ کی معروف سماجی کارکن اور وکیل سدھا بھاردواج کو ممبئی ہائی کورٹ کی طرف سے دی گئی ضمانت کے خلاف قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے) نے سپریم کورٹ میں عرضی دائر کی ہے۔ سپریم کورٹ میں عرضی داخل کرتے ہوئے این آئی اے نے بامبے ہائی کورٹ کے یکم دسمبر کے حکم کو چیلنج کیا ہے اور بامبے ہائی کورٹ کے فیصلے پر روک لگانے کی درخواست کی ہے۔

دراصل بدھ کو بامبے ہائی کورٹ نے 2018 کے بھیما کوریگاؤں-ایلگار پریشد ذات پات کے تشدد کیس میں سدھا بھاردواج کو ڈیفالٹ ضمانت دے دی تھی۔ عدالت نے سدھا بھاردواج کو ضمانت کی شرائط طے کرنے کے لیے 8 دسمبر کو خصوصی این آئی اے عدالت میں پیش کرنے کی بھی ہدایت دی تھی۔

این آئی اے نے اب بامبے ہائی کورٹ سے سدھا بھاردواج کو دی گئی ضمانت کے خلاف سپریم کورٹ میں عرضی داخل کی ہے۔اس معاملے میں بامبے ہائی کورٹ نے 8 دیگر ملزمین سدھیر داولے، ڈاکٹر پی وراورا راؤ، رونا ولسن، ایڈوکیٹ سریندر گڈلنگ، پروفیسر شوما سین، مہیش راوت، ورنن گونسالویس اور ارون فریرا کی ضمانت کی درخواستوں کو مسترد کر دیا تھا۔ بنچ نے 4 اگست کو سدھا بھاردواج کی ضمانت کی درخواست پر اور 8 دیگر کی مجرمانہ درخواست پر یکم ستمبر کو فیصلہ محفوظ رکھا تھا۔ ہائی کورٹ نے کہا کہ پونے کی عدالت یو اے پی اے کے تحت نظربندی کی مدت بڑھانے کے قابل نہیں ہے۔ کیونکہ اسے این آئی اے کی خصوصی عدالت کے طور پر مطلع نہیں کیا گیا تھا۔ سودھا بھاردواج کو اگست 2018 میں گرفتار کیا گیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی میں شامل ہونے والے اسیم ارون پر اکھلیش یادو کا حملہ ’کیسے کیسے لوگ وردی میں چھپے بیٹھے تھے‘

اتر پردیش میں اسمبلی انتخابات سے قبل سابق آئی پی ایس اسیم ارون کے بی جے پی کی رکنیت حاصل کرنے پر سماجوادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو نے سخت ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ جو افسران پانچ سال تک بی جے پی کے لئے کام کر رہے تھے آج انہوں نے اپنی اصلیت ظاہر کر دی۔ انہوں نے کہا کہ وہ اس ...

دارا سنگھ سماجوادی پارٹی میں شامل، یوگی کے تیسرے وزیر اکھلیش کی سائیکل پر سوار

 سوامی پرساد موریہ کے نقش قدم پر چلتے ہوئے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کو خیر آباد کہنے والے یوگی حکومت کے سابق وزیر دارا سنگھ چوہان نے اتوار کے روز سماج وادی پارٹی (ایس پی) کا دامن تھام لیا۔

جیل سے رہا ہونے کے بعد رامپور پہنچے عبد اللہ اعظم ’ہم پر جتنا ہو سکتا تھا ظلم ہوا، میرے والد کی جان کو خطرہ‘

اتر پردیش میں انتخابات سے قبل سماجوادی پارٹی کے قدآور لیڈر اعظم خان کے بیٹے عبداللہ اعظم کو بڑی راحت ملی ہے۔ تقریباً 23 مہینے بعد جیل سے رہا ہونے کے بعد عبد اللہ اعظم نے حکومت اور انتظامیہ پر جم کر نشانہ لگایا۔