تسلیم بانو، میسور میونسپل کارپوریشن کی پہلی مسلم خاتون میئر

Source: S.O. News Service | Published on 21st January 2020, 12:42 PM | ریاستی خبریں |

 

بنگلورو،21/ جنوری (ایس او نیوز) کرناٹک کی میسور میونسپل کارپوریشن میں پہلی مرتبہ ایک مسلم خاتون میئر کے عہدہ پر فائز ہوئی ہے جنتادل (سیکولر) کی جانب سے میسور کی مینا بازار کارپوریٹر  تسلیم بانو کو ہفتے کے روز میسور کا میئر منتخب کیا گیا ، جس سے وہ شہر کی میئر بننے والی پہلی مسلمان خاتون بن گئیں تسلیم ، جو چماراجا اسمبلی حلقہ کے تحت بلدی وارڈ نمبر 2 (مینا بازار) کی نمائندگی کرتی ہیں ، نے اپنے قریبی حریف بی جے پی کی گیتا یوگنند کے خلاف 47 ووٹ حاصل کیے جو میئر کے انتخابی میدان میں تھے۔کسی بھی کارپوریٹرس نے ان کے خلاف ووٹ نہیں دیا ، جس سے یہ متفقہ انتخاب ہوا۔تسلیم بانو،  میسور کی 22 ویں میئر ہے اور مسلم کارپوریٹرز میں وہ پہلی خاتون ہے جس نے میئر کے دفتر میں جگہ بنائی۔

ایک نظر اس پر بھی

کورونا کے نام پر مسلمانوں پر حملہ؛ باگلکوٹ میں تین مسلم لوگوں کو ایک گاوں میں داخل ہونے سے روکنے کی واردات

باگلکوٹ کے مدھول پولیس اسٹیشن کے حدود میں آنے والے ایک گاؤں میں چند شرپسندوں نے مسلمانوں کو اپنے گاؤں میں داخل ہونے سے عملاً روکتے ہوئے ان پر حملہ کرنے کی واردات پیش آئی ہے  جس کی ویڈیو کلپ بھی سوشیل میڈیا پر  وائرل ہوگئی ہے۔

کورونا وائرس اپ ڈیٹ: اڈپی سے جانچ کے لئے بھیجے گئے 36 نمونے۔ جنوبی کینرا میں 21رپورٹ آئی نگیٹیو

کورونا وائرس وباء کے تعلق سے ضلع اڈپی کی جو تازہ صورتحال ہے اس کے مطابق 6اپریل کی شام تک یہاں سے جملہ 36مشتبہ افراد کے گلے سے لیے گئے تھوک کے نمونے جانچ کے لئے شیموگہ لیباریٹری میں بھیج دئے گئے ہیں۔

مینگلور کے قریب بنٹوال میں دیپ جلاؤ مہم کے دوران اقلیتوں کے گھروں پر پتھراؤ۔ پولیس میں درج کی گئی شکایت

کورونا وائرس کے خلاف متحدہ طور پر جدوجہد کی علامت کے طور پر وزیر اعظم نریندرا مودی نے دیپ جلانے کی جو آواز دی تھی، اس کے دوران بنٹوال میں اقلیتوں کے گھروں پتھراؤ کرنے اور پٹاخے پھینکنے کی واردات پیش آئی ہے۔

کاسرگوڈ میں کورونا وائرس کا بڑھتا ہوا قہر۔ مزید 9افراد کی جانچ رپورٹ آئی پوزیٹیو۔ مریضوں کی تعداد ہوگئی 151

کیرالہ کے کاسرگوڈ میں کورونا وائرس کاقہر ابھی تھمتا نظر نہیں آرہا ہے۔ 6اپریل کی شام تک کی جو صورتحال ہے اس کے مطابق کورونا وائرس سے متاثر ہونے کے مزید9معاملات سامنے آئے ہیں جس کے ساتھ ضلع میں جملہ مریضوں کی تعداد 151ہوگئی ہے۔