حج کی سعادت کیلئے 15 لاکھ سے زائد عازمین مکہ مکرمہ پہنچے

Source: S.O. News Service | Published on 13th June 2024, 11:57 AM | خلیجی خبریں |

ریاض، 13/ جون (ایس او نیوز /ایجنسی) اس ہفتے کے آخر میں حج کے آغاز سے قبل عازمین سعودی عرب کے مقدس شہر مکہ مکرمہ پہنچ رہے ہیں، کیونکہ سالانہ حج اپنی تمام تر روحانیت کے ساتھ قریب آچکا ہے۔ سعودی حکام کا کہنا ہے کہ منگل تک ۱۵؍لاکھ سے زائد غیر ملکی عازمین مملکت پہنچ چکے ہیں، جن میں سے بڑی تعداد دنیا بھر سے ہوائی راستے سے آئی ہے۔ مزید توقع کی جا رہی ہے، اور سعودی عرب میں رہنے والے لاکھوں سعودی اور دیگر لوگ بھی ان میں شامل ہوں گے جب جمعہ کو حج کا باضابطہ آغاز ہو گا۔

آمد کے اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ ۱۴؍ لاکھ ۸۳؍ ہزار ۳۱۲؍ عازمین ہوائی سفر کے ذریعے پہنچے جبکہ ۵۹؍ہزار ۲۷۳؍عازمین زمینی راستوں کے ذریعے پہنچے۔ سرکاری خبر رساں ایجنسی ایس پی اے نے بتایا کہ سمندری بندرگاہوں سے کل ۴؍ ہزار ۷۱۰؍عازمین مکہ مکرمہ پہنچے۔سعودی حکام نے کہا ہے کہ وہ توقع کرتے ہیں کہ اس سال عازمین کی تعداد ۲۰۲۳ءسے تجاوز کر جائے گی، جب ۱۸؍ لاکھ سے زائد افراد نے حج کیا، جو وبائی امراض سے پہلے کی سطح کے قریب پہنچ رہے ہیں۔ ۲۰۱۹ءمیں۲۴؍ لاکھ سے زیادہ مسلمانوں نے حج کی سعادت حاصل کی تھی۔

فلسطینی وزارت اوقاف و مذہبی امور کے مطابق، عازمین میں مقبوضہ مغربی کنارے کے ۴؍ہزار ۲۰۰؍فلسطینی شامل ہیں جو اس ماہ کے اوائل میں مکہ مکرمہ پہنچے تھے۔ اسرائیل اور حماس کے درمیان ۸؍ ماہ سے جاری جنگ کی وجہ سے غزہ کی پٹی کے فلسطینی اس سال حج کیلئے سعودی عرب نہیں جا سکے ۔
منگل کو، حجاج کرام مکہ مکرمہ کی عظیم الشان مسجد میں جمع ہوئے، کعبہ کے گرد سات بارطواف کرتے ہوئے،جسے اسلام کا مقدس ترین مقام سمجھا جاتا ہے۔ انہوں نے احرام پہن رکھے تھے۔منگل کو دن کے وقت درجہ حرارت ۴۲؍ڈگری سیلسیس (۱۰۷؍فارن ہائیٹ) تک پہنچنے سے بہت سے لوگوں کو چھتری اٹھائے ہوئے دیکھا گیا۔

اپنے شوہر اور بیٹی کے ساتھ حج کیلئے مکہ آنے والی مراکشی خاتون رابعہ الرغی نے کہا، "جب میں مسجد الحرام پہنچی اور خانہ کعبہ کو دیکھا تو مجھے سکون ملا۔ میں بہت خوش ہوں۔ رات کے وقت، کعبہ کے گرد سنگ مرمر کا وسیع صحن عازمین سے کھچا کھچ بھرا ہوا تھا۔حجاج مکہ پہنچنے پرکعبہ کے گرد چکر لگاتے ہیں جسے عربی میں "طواف" کہا جاتا ہے۔ کعبہ کا طواف حج کے پہلے دن تک جاری رہے گا۔جمعہ کے دن حجاج کرام دن بھر کے قیام کیلئے کوہِ عرفات کی طرف جائیں گے، پھر مزدلفہ جائیں گے، جو چند میل دور چٹانی میدانی علاقہ ہے۔ مزدلفہ میں، حجاج منیٰ میں شیطان کی نمائندگی کرنے والے ستونوں کو علامتی طور پر سنگسار کرنے کیلئے کنکریاں مارتے ہیں۔

دنیا کے سب سے بڑے مذہبی اجتماعات میں سے ایک حج اسلام کے پانچ ستونوں میں سے ایک ہے۔ تمام مسلمانوں پر لازم ہے کہ وہ اپنی زندگی میں کم از کم ایک بار حج کریں اگر وہ جسمانی اور مالی طور پر ایسا کرنے کی استطاعت رکھتے ہیں۔حج کرنے والے حج کو اپنے ایمان کو مضبوط کرنے، پرانے گناہوں کو مٹانے اور نئی شروعات کرنے کا موقع سمجھتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

عمان کے قریب سمندر میں بحری جہاز ڈوب گیا، جہاز میں سوار 13 ہندوستانیوں کا تاحال کوئی سراغ نہیں

عمان سے ایک بڑی خبر سامنے آئی ہے جس کے مطابق یمن کی طرف جانے والا آئل ٹینکر جہاز سمندر میں ڈوب گیا ہے۔ عمان کے میری ٹائم سیکیورٹی سینٹر کے مطابق اس آئل ٹینکر کا نام پریسٹیج فالکن بتایا جاتا ہے جس پر سوار عملے کے 16 ارکان کا تاحال کوئی سراغ نہیں مل سکا۔ اس تیل کے جہاز پر سوار عملے ...

حج کے دوران شدید گرمی کے باعث مکہ و حرم میں 550 سے زائد عازمین جاں بحق۔ عازمین لگارہے ہیں حج کمیٹی پر بدانتظامی کا الزام

عرب سفیروں کے حوالے سے میڈیا میں آ رہی خبروں کے مطابق امسال موسم حج کے دوران انتہا درجے کی گرمی کی وجہ سے 550 سے زائد زائرین حرم جاں بحق ہوگئے ۔      سعودی محکمہ موسمیات کے مطابق پیر کے دن حرم مکہ میں پارہ 51.8 ڈگری سیلسیس  (125 ڈگری فارن ہائٹ) تک پہنچ گیا تھا ۔

عرفات کے اہم ترین مقام’مسجد نمِرہ‘ کا تاریخی پس منظر

مسجد نمِرہ کا شمار عرفات کے میدان میں ایک اہم ترین مقام کے طور ہوتا ہے، یہاں ہر سال لاکھوں عازمین حج وقوف عرفہ کے روز رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی پیروی کرتے ہوئے ظہر اور عصر کی نمازیں ایک وقت میں قصر کرکے پڑھتے ہیں۔

20 لاکھ خوش نصیب،سعادت حج سے مشرف

  دنیا بھر سے آئے مسلمانوں نے ہفتہ کے دن یہاں تپتی دھوپ میں وقوفِ عرفہ کیا۔ جبل ِعرفات کو جبل ِ رحمت بھی کہا جاتا ہے۔ وقوف ِ عرفہ‘ حج کا رُکن ِ اعظم ہوتا ہے جس کے ساتھ ہی حج کی تکمیل ہوجاتی ہے۔ یہ عازمین کے لئے نہایت یادگار ہوتا ہے۔ وہ اللہ سے گڑگڑاکر رحم کی‘ خوشحالی اور اچھی صحت ...

میدان عرفات میں لاکھوں عازمین حج کا اجتماع، رکن اعظم کی ادائیگی میں مصروف

  بیس لاکھ سے زائد عازمین حج آج میدان عرفات میں حج کا رکن اعظم ادا کریں گے۔ حج کے رکن اعظم کی ادائیگی کے لیے لاکھوں عازمین میدان عرفات میں پہنچ گئے ہیں جہاں وہ ظہر اور عصر کی نمازیں قصر و جمع کی صورت میں ادا کریں گے اورخطبہ حج سنیں گے۔