مضافات بنگلورو میں قبرستان کیلئے چار متبادل جگہوں کی نشاندہی، چیف سکریٹری اور بنگلورو کے ڈی سی سے مسلم اراکین اسمبلی کی ملاقات کے دوران تفصیلات پر گفتگو

Source: S.O. News Service | Published on 29th July 2020, 11:47 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،29؍جولائی(ایس ا و  نیوز)شہر بنگلورومیں کورونا وائرس کے سبب دن بدن اموات میں اضافہ کے پیش نظر قبرستانوں میں جگہ دن بدن تنگ ہوتی جا رہی ہے۔ اس کے لئے مسلم نمائندوں کی طرف سے بارہا حکومت سے نمائندگی کی گئی کہ قبرستان کیلئے زمین مہیا کروائی جائے۔

دو ہفتہ قبل حکومت کی طرف سے 35.8ایکڑ زمین فراہم کرنے کے لئے شہر بنگلورو کی مضافات میں آنے والے دس مختلف مقامات پر زمین کی نشاندہی کی گئی لیکن ان میں سے 90فیصد زمینات مقدموں میں پھنسی ہوئی تھیں اور وہاں پر کاشت کاری جاری تھی۔جبکہ ایک زمین پتھر کی کواری ہے جو 60فیٹ گہری ہے۔ اس لئے ان زمینا ت کی بجائے متبادل زمین مہیا کروانے کے لئے حال ہی میں رکن اسمبلی ضمیر احمد خان نے وزیر اعلیٰ بی ایس ایڈی یورپا سے ملاقات کر کے نمائندگی کی۔

اس کے بعد منگل کے روز مسلم اراکین اسمبلی کے ایک وفد نے ودھان سودھا میں ریاست کے چیف سکریٹری ٹی ایم وجئے بھاسکر سے ملاقات کی اور حکومت کی طرف سے قبرستان کے لئے متبادل زمین مہیا کروانے کے سلسلے میں تبادلہ خیال کیا۔ اس کے بعد ان اراکین اسمبلی نے بنگلورو اربن ضلع کے ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر جی این شیو مورتی سے بھی ملاقات کی۔ اس ملاقات کے دوران ڈپٹی کمشنر نے وفد کو بتایا کہ شہر کے انتظامیہ کی طرف سے متبادل زمینات کی نشاندہی کی گئی ہے۔ اس میٹنگ میں اسسٹنٹ کمشنر، بنگلورو نارتھ تعلقہ یلہنکا کے تحصیلدار، اور دیگر افسر موجود تھے۔ اس میٹنگ میں ڈپٹی کمشنر نے اراکین اسمبلی کو بتایا کہ حکومت کی طرف سے جن مقامات کی نشاندہی کی گئی تھی ان کی جگہ پر چار مقامات پر متبادل زمین مسلم قبرستانوں کے لئے نشاندہی کی گئی ہے جن میں یلہنکا ڈیویژن میں آنے والے مارینا ہلی علاقے میں جو 5ایکڑ کی کواری کی نشاندہی بھی شامل ہے۔ اس سے متصل ہی محکمہ جنگلات کی زمین کے پاس ایک ڈی نوٹیفائی کی گئی۔زمین کی نشاندہی میٹنگ کے دوران ہی تحصیلدار نے کی اور کہا کہ دو دن کے اندر اس کے متعلق رپورٹ دی جائے گی۔ اس کے علاوہ رزاق صاحب پالیہ اور محمد صاحب پالیہ میں بھی ایک ایک زمین کی نشاندہی کی گئی ہے۔ میٹنگ کے دوران شہر کے آنیکل میں محکمہ دفاع کو دی گئی 250ایکڑ زمین میں سے قبرستان کے لئے جگہ مہیا کرانے کی مانگ کئے جانے پر ڈی سی نے تیقن دیا کہ اس سلسلہ میں وہ آنیکل کے تحصیلدار کو طلب کر کے اس کے بعد دو دن کے اندر اس کی رپورٹ دیں گے۔ انہوں نے یلہنکا کے تحصیلدار سے کہا کہ باقی تین جگہوں کے بارے میں دو تین دن کے اند ر رپورٹ پیش کی جائے۔ چیف سکریٹری اور ڈپٹی کمشنر سے میٹنگ کے دوران اراکین اسمبلی ضمیر احمد خان، این اے حارث، رضوان ارشد اور رکن کونسل نصیر احمد موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

لوگ کورونا سے مرے جارہے ہیں اور ریاستی حکومت کو لگی ہے ذات پات کے اعداد و شمار کی فکر

پورے ملک کی طرح ریاست میں بھی کورونا کا قہر جاری ہے ۔ عوام آکسیجن، اسپتال میں بستر اور دوائیوں کی کمی سے تڑپ رہے ہیں۔ لیکن ریاستی حکومت کو الیکشن اور ذات پات کی تفصیلات کی فکر لاحق ہوگئی ہے تاکہ آئندہ انتخاب کے لئے تیاریاں مکمل کی جائیں۔

کورونا پر قابو پانے میں ایڈی یورپا مکمل طورپر ناکام: ایم بی پاٹل

ریاست میں کورونا وباء سے نمٹنے میں ایڈی یورپا کی بی جے پی حکومت مکمل ناکام ہوچکی ہے۔سابق ریاستی وزیر و مقامی بی ایل ڈی ای میڈیکل کالج کے سربراہ ایم بی پاٹل نے آج یہاں ایک اخباری کانفرنس کو خطاب کرتے ہوئے ڈنکے کی چوٹ پر یہ بات بتائی۔

کرناٹک میں 120ٹن لکویڈ آکسیجن کی آمد

ریاست کرناٹک میں میڈیکل آکسیجن کی قلت ہنوز جاری ہے۔ حکومت آکسیجن منگوانے کی ہر ممکن کوشش کرنے کا دعویٰ کررہی ہے۔ ریاست کی راجدھانی بنگلورو میں پہلی آکسیجن ایکسپریس کی آمد ہوئی۔

کرناٹک لاک ڈاؤن:اب تک 19949گاڑیاں ضبط

ریاست   میں کوروناوائرس کے بے تحاشہ پھیلاؤ کے سبب ریاست گیرلاک ڈاؤن نافذکیاگیاہے،تاکہ کوروناپرقابوپاجائے۔لاک ڈاؤن کے دوران کسی بھی سوری کوسڑک پراترنے کی اجازت نہیں ہے۔اس قسم کی سختی کے باوجودبہت سارے لوگ گاڑیوں میں گھومتے ہوئے نظرآئے،خلاف ورزی کی پاداش میں پولیس سواریوں ...

تیجسوی سوریاریاست کیلئے زہریلابیج ہے:ڈی کےشیوکمار

ریاست کرناٹک  میں کووڈکے معاملات میں ہرگزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہورہاہے،اس دوران وزیراعلیٰ نے تیسری لہرپرقابوپانے کی تیاری کرنے کی صلاح دی ہے۔پہلے کووڈکی دوسری لہرپرقابوپانے کی کوشش کرے پھرتیسری لہرپرقابوپانے کی بات کریں۔یہ باتیں کے پی سی سی صدرڈی کے شیوکمارنے کہی۔