لکھیم پور تشدد: یوگی حکومت کو سپریم کورٹ کی پھٹکار، ’حراست میں صرف 4 ملزمان ہی کیوں؟‘

Source: S.O. News Service | Published on 21st October 2021, 12:04 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،21؍اکتوبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) لکھیم پور کھیری تشدد معاملہ پر سپریم کورٹ میں بدھ کے روز سماعت کے دوران سپریم کورٹ نے اسٹیٹس رپورٹ داخل کرنے میں تاخیر پر یوپی حکومت کو پھٹکار لگائی۔ چیف جسٹس این وی رمنا نے کہا، ’’ہم کل رات ایک بجے تک انتظار کرتے رہے۔ آپ کی اسٹیٹس رپورٹ ہمیں ابھی ملی ہے، جبکہ گزشتہ سماعت کے دوران ہم نے آپ سے صاف کہا تھا کہ کم از کم ایک دن پہلے ہمیں اسٹیٹس رپورٹ مل جانی چاہئے۔

یوپی حکومت کی طرف سے پیش ہریش سالوے نے کہا کہ ہم نے اسٹیٹس رپورٹ داخل کی ہے۔ آپ معاملہ کی سماعت جمعہ تک کے لئے مؤخر کر دیجئے۔ تاہم، عدالت نے سماعت مؤخر کرنے سے انکار کر دیا اور کہا کہ یہ مناسب نہیں ہوگا۔ بنچ نے یوپی حکومت کی جانب سے پیش کی گئی رپورٹ کا ہاتھوں ہاتھ مطالعہ کیا۔

سپریم کورٹ نے کہا لکھیم پور کھیری واقعہ کی جانچ سے یوپی حکومت اپنے پیر کھینچ رہی ہے۔ عدالت نے پوچھا کہ آپ نے کہا کہ 4 گواہوں کے بیان درج کئے۔ بقیہ گواہوں کے بیان کیوں نہیں لئے؟ صرف 4 ملزمان پولیس حراست میں ہیں جبکہ دیگر عدالتی حراست میں کیوں ہیں؟ کیا ان سے پوچھ گچھ کی ضرورت نہیں ہے؟ عدالت نے معاملہ کی سماعت 26 اکتوبر تک ملتوی کر دی ہے۔ سپریم کورٹ نے کہا کہ گواہان اور متاثرین کے 164 کے تحت بیان جلد از جلد درج کرائے جائیں، نیز گواہان کی حفاظت کا پورا خیال رکھا جائے۔

ادھر، یوپی حکومت کی جانب سے پیش ہریش سالوے نے کہا کہ اس معاملہ میں ملزمان سے پوچھ گچھ ہو چکی ہے۔ 70 سے زیادہ ویڈیوز موصول ہوئے ہیں۔ ان کی جانچ ہو رہی ہے۔ ان میں بھی ثبوت ملے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ کرائم سین کو ری کریٹ کیا جا چکا ہے۔ متاثرین اور گواہوں کے بیان درج کرائے جا رہے ہیں۔ دسہرہ کی چھٹی میں کورٹ بند ہونے پر بیان درج نہیں ہو سکے ہیں۔

سالوے نے کہا 10 افراد گرفتار ہو چکے ہیں۔ وہاں دو کیس ہوئے، پہلا جرم ہے کہ لوگوں پر کار چڑھائی گئی، دوسرا یہ کہ وہاں کار میں موجود لوگوں کو پیٹ پیٹ کر قتل کر دیا گیا۔ اس معاملہ میں جانچ تھوڑا مشکل ہے، کیونکہ وہاں بہت بھیڑ تھی۔ چیف جسٹس نے کہا کہ میں پہلے معاملہ کے بارے میں پوچھ رہا ہوں، کتنے گرفتار ہوئے، سالوے نے کہا کہ اس معاملہ میں 10 افراد کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔ سالوے نے کہا کہ میں یقین دلاتا ہوں کہ گواہان کی حفاظت کے لئے ضروری اقدام اٹھائے گئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندوستان میں کورونا کے 9,765 نئے کیسز، 477 اموات

گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کورونا وائرس کے کل 9,765 نئے کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ نیز ملک میں کووڈ متاثرین کی کل تعداد اب تک بڑھ کر 3 کروڑ 46 لاکھ 06 ہزار 541 ہو گئی ہے۔ گزشتہ 24 گھنٹوں میں ملک بھر میں کووڈ کی وجہ سے کل 477 لوگوں کی موت ہوئی ہے۔ ملک میں کووڈ سے اب تک کل 4 لاکھ 69 ہزار 724 ...

اومیکرون کے بڑھتے خطرے کے باعث حکومت نے کہا: 11 ممالک کو خطرے کے زمرے میں رکھا گیا، ایئرپورٹ پر کورونا ٹیسٹ لازمی

دنیا بھر میں اومیکرون کے بڑھتے ہوئے خطرے کے درمیان، حکومت ہند نے بیداری کے طور پر کئی قدم اٹھائے ہیں۔ ان میں سے ایک ان متاثرہ ممالک سے سفر کرنے والے لوگوں کی سخت اسکریننگ ہے۔ شہری ہوا بازی کے وزیر جیوتی رادتیہ سندھیا نے لوک سبھا میں سرمائی اجلاس کے دوران جمعرات کو کہا کہ حکومت ...

شفیق الرحمن برق کے بیان پردہلی پولیس میں شکایت درج

دہلی کے ایک وکیل نے جمعرات کو سماج وادی پارٹی (ایس پی) کے لوک سبھا ایم پی شفیق الرحمان برق کے خلاف رام مندر کی تعمیر کے بارے میں ان کے حالیہ بیان پر دہلی پولیس میں شکایت درج کرائی ہے۔ شکایت کے مطابق شفیق الرحمان برق نے اپنے حالیہ بیان میں کہا ہے کہ رام مندر زبردستی بنایا جا رہا ...

تقریباََسبھی پارٹیاں بی جے پی کے ساتھ سرکاربناچکی ہیں، دگ وجے سنگھ نے ممتابنرجی کوآئینہ دکھایا،کانگریس کے بغیر مضبوط اتحاد ممکن نہیں

ایسالگتاہے کہ مغربی بنگال کی وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی بالواسطہ بی جے پی کوفائدہ پہونچانے کی ڈگرپرچل رہی ہیں۔ اپوزیشن کے درمیان اختلاف کوہوادیتے ہوئے وہ کانگریس مکت بھارت کی طرف بڑھ رہی ہیں جوبی جے پی کابھی مشن ہے ۔