بنگلور کے مختلف علاقوں میں سنی گئئ پر اسرار آواز، سائنسدانوں نے کیا زلزلہ کے جھٹکوں سے انکار؛ قیاس آرائیوں کے درمیان کیا گیا فضائیہ سے رابطہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 20th May 2020, 4:52 PM | ریاستی خبریں |

بھٹکل  20/مئی (ایس او نیوز)  اس وقت ملک  کورونا وائرس جیسی   تباہ کن وباء سے جوج رہا ہے  تو دوسری طرف  مشرقی ریاستوں پر امفان   طوفان  کا خطرہ منڈلارہا ہے۔ اس درمیان    بنگلورو سے ایک حیران  اورپریشان کرنے والی  خبر سامنے آئی ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق  بنگلورو میں بدھ کی سہ پہر ایک عجیب اور پر اسرار آواز سنائی دی،  جس کے بعد قیاس آرائیوں کا بازار گرم  ہوگیا جس کو لے کر  حکام بھی حیران اور پریشان ہیں۔

ذرائع کے مطابق بدھ کی دوپہر بنگلورو میں لوگوں نےایک  زوردار  آواز سنی۔ لوگوں  کا کہنا ہے  کہ یہ ایک ایسی آواز تھی جیسے  کوئی زوردار  زلزلہ آگیا ہو  یا پھر  زلزلہ کا جھٹکہ لگا ہو۔ لوگوں کے مطابق ، یہ آواز لگ بھگ پانچ سیکنڈ تک گونجتی رہی۔

کرناٹک اسٹیٹ ڈیزاسٹر مانیٹرنگ سنٹر  KSNDMC کی جانب سے ایک بیان میں کہا گیا  ہے کہ یہ کسی طرح کے زلزلے کی آواز نہیں ہے۔  زمین  میں کسی بھی طرح  کی حرکت  نہیں دیکھی گئی  ہے ، لیکن جو آواز گونجی تھی وہ بالکل مختلف تھی۔  بنگلور کے  وائٹ فیلڈ میں  جہاں یہ آواز سنائی دی  وہاں پر افسر متحرک ہوگئے ہیں۔ ایئر فورس اور ایچ اے ایل کی کمپنی سے رابطہ کیا جا رہا ہے اور ان کے جواب کا انتظار ہے۔

بنگلورو کے پولیس کمشنر بھاسکر راؤ کا کہنا ہے کہ یہ آواز لگ بھگ ایک گھنٹہ پہلے آئی تھی ، کسی کو پتہ نہیں چل رہا ہے کہ یہ کہاں سے آئی ہے  لیکن کہیں سے بھی کسی بھی طرح کے نقصان کی کوئی رپورٹ نہیں ہے ۔ یہ آواز تقریبا 21 کلومیٹر تک سنی گئی ہے۔

واضح رہے  کہ جہاں پر یہ آواز آئی ہے  وہ  مشرقی بنگلورو کا علاقہ ہے۔ یہ ایئر پورٹ سے ہوتے ہوئے  کلیان نگر ، ایم جی روڈ ، وائٹ فیلڈ کے آس پاس کا علاقہ تک سنی گئی ہے ۔ لیکن ان علاقوں میں  کسی بھی قسم کا کوئی نقصان نہیں ہوا ہے۔

مقامی پولیس کی جانب سے بھی یہ دعویٰ کیا گیا ہے کہ زمین پر کسی طرح کا کوئی  اثر نظر نہیں آیا ہے ۔ لیکن سوشل میڈیا پر اس خبر کو لے کر   کئی طرح کے چرچے شروع ہوگئے ہیں۔  سوشل میڈیا پر کئی طرح کی ویڈیوز اور تصاویر بھی ٹویٹ کی جارہی ہیں۔ تاہم ابھی تک ان کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے کورونا؛ 122 نئے کیسس، صرف گلبرگہ میں ہی 29 پوزیٹو کی تصدیق، دکشن کنڑا اور اُڈپی میں بھی بڑھ رہے ہیں معاملات

ریاست کرناٹک میں  کورونا کیسس تھمنے کا نام نہیں رہے ہیں اور ہرروز سو سے زائد معاملات درج کئے جارہےہیں ۔ آج بدھ کو ریاست میں 122 کورونا پوزیٹو کیسس کی تصدیق کی گئی ہے جس میں سب سے زیادہ گلبرگہ سے 28 معاملات سامنے آئے ہیں، یادگیر سے16، ہاسن سے 15جبکہ ضلع اُترکنڑا میں چھ،  پڑوسی ضلع ...

گجرات کے سورت سے نکلی ٹرین ، بہار کے چھپرا کے بجائے پہنچی کرناٹک کے بنگلورو: مزدورں کا حال بے حال

لاک ڈاؤن کی مدت میں مزدوروں کو ان کے وطن لوٹانے گجرات سے نکلی ایک مزدور ٹرین (شریمک ریل ) بہار پہنچنے کے بجائے کرناٹکا کے بنگلورو پہنچ کر سب کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔ گرچہ یہ ایک مذاق لگتا ہے مگر ہے حقیقت۔ اسی طرح اور ایک خصوصی مزدور ریل گجرات کے سورت سے 1200مزدوروں کو لے کر بہار کے ...

ہائی کورٹ فیصلے کے بعد ہی ایس ایس ایل سی امتحانات

ایس ایس ایل سی امتحانات منسوخ کئے جانے کی اپیل کرتے ہوئے ہائی کورٹ میں ایک مفاد عامہ عرضی داخل کی گئی ہے۔ اس عرضی پر سماعت اور تصفیہ کے بعد ہی امتحان کے تعلق سے مزید تفصیلات پیش کی جاسکیں گی۔

کیا کرناٹکا میں یکم جون سے مسجد، گرجا گھر اور مندروں کو کھولنے کی دی جائے گی اجازت ؟

کورونا وائرس کے انفیکشن کو پھیلنے سے روکنے کے لئے ملک میں لاک ڈاؤن لاگو ہے۔لاک ڈاؤن 4.0 میں حکومت کی جانب سے بہت سی مراعات دی گئی ہیں، تاہم مندر، مسجد کو لے کر پابندیاں جاری ہیں لیکن حکومت نے لاک ڈاؤن میں رعایت کو لے کر ریاستوں کو بھی فیصلہ لینے کا حق دیا تھا۔دریں اثنا کرناٹک ...