وزیر اعلیٰ بومئی کے جلسے میں ہاتھا پائی،نعرے بازی،پوسٹر پھاڑدئے گئے

Source: S.O. News Service | Published on 4th January 2022, 11:31 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو  ، 4؍ جنوری(ایس او نیوز) بنگلورو کے رام نگر ضلع کانگریس اور جنتا دل ایس کا گڑھ رہا ہے،اس ضلع میں بی جے پی کبھی بھی اپنی کامیابی یا وجود تک درج نہیں کرسکی، مگر انہوں نے کئی آپریشن کنول کئے مگر انہیں ہمیشہ ہی ناکامی ہی ملی، اگر کبھی کچھ کامیابی بھی ملی تو وہ چند مفاد پرست لیڈروں کے علاوہ ایسے مفاد پرست لیڈر ہیں جن کا کسی بھی سماج میں کوئی مقام ہی نہیں ہے۔

اس بات سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے کہ رام نگرم کی سٹی منسپل کونسل کے 31ممبرس میں بی جے پی کا ایک بھی کونسلر نہیں ہے اور بڈدی کونسل میں بھی بی جے پی کاکوئی بھی کونسلر نہیں ہے۔ رام نگرم ضلع ڈی سی دفتر کے احاطے میں بابا صاحب امبیڈکر اور کیمپے گوڈا کے مجسمے کا افتتاح عمل میں آیا۔ اس موقع پر ریاستی بی جے پی سرکارسرکاری انتظامیہ کو ساتھ لیکر اپنی من مانی کرنے لگی، جس سے مقامی لوگ ایک نہیں بلکہ کئی اعتراضات کرنے لگے اس سلسلے میں کسی بھی پروٹول کا خیال نہیں رکھا گیا، ہر بات میں بی جے پی لیڈر اپنی من مانی کرنے لگے ہیں۔یہاں تک کہ رام نگرم ضلع میں دیوے گوڈا، کمار سوامی کے علاوہ ڈی کے شیوکمار اور موجودہ ممبر آف پارلیمان جیسے کسی بھی لیڈورں سے کسی بھی قسم کے صلاح مشورے کے بغیر اپنی من مانی کرنے لگے۔ ان مجسموں کی شروعات کانگریس اور جنتا دل ایس کے دور میں ہی کی گئی تھی،مگر جب اس کے افتتاح کا موقع آیا تو بی جے پی سب کے نظر انداز کرتے ہوئے اپنی من مانی کرنے لگی۔ اسی وجہ سے جلسے کے شروعات سے ہی ڈی ایس ایس والوں نے اپنی کلائی پر کالی پٹی باندھ کر احتجاج جتایااورجاری رکھا۔ ایسی حالت میں اشوتھ نارائن نے اپنی تقریر کے دوران اپنے ہوش کھو کر گندی زبان استعمال کرنے پر اتر آئے اور حالات قابو سے باہر ہوگئے۔ نوبت ہاتھا پائی تک آپہنچی۔رکن پارلیمان ڈی کے سریش، ایم ایل سی ایس روی، منسپل صدر پاروتما کے علاوہ کئی ارکان نے اسی اسٹیج پر دھرنا شروع کردیا۔ وزیراعلیٰ کے ہمراہ اس طرح کے واقعات کاہونا بی جے پی کی نا اہلی کا کھلا ثبوت ہے کہ بی جے پی عوام کی نہیں بلکہ اپنی انا کی پالیسی پر عمل کرتی ہے۔

اسی دوران وزیراعلیٰ بسوراج بومئی نے کہا کہ میں اس ضلع کو میری خوشی سے آیا ہوں، اسی مٹی نے ہمارے ملک کو وزیراعظم دیا ہے اور ہماری ریاست کو تین وزیراعلیٰ دئے ہیں میری خواہش ہے کہ میں بھی اس ضلع کیلئے جو بھی نامکمل کام باقی ہیں انہیں مکمل کروں۔ اسی دوران رام نگر ضلع کیلئے چھ آکسیجن گیس پلانٹ الاٹ کئے گئے ہیں جس میں دو کا افتتاح وزیراعلیٰ کے ہاتھو ں عمل میں آیا۔ اس کے علاوہ مزید بہت سارے کاموں کیلئے سنگ بنیا د رکھا گیا۔ اس دوران ڈی کے سریش اشوتھ نارائن پر برس پڑے، انہوں نے کہا کہ اس ضلع میں جو بھی کام ہوئے ہیں وہ یا تو کانگریس کے دور میں ہوئے ہیں یا جنتا دل ایس کے دور میں ہوئے ہیں، اس ضلع میں بی جے پی کا کوئی بھی کام ہی نہیں ہوا ہے۔ یہاں تک کہ انہوں نے چیلنج کیا کہ اشوتھ نارائن اس ضلع کے نگران وزیر بھی نہیں ہیں وہ صرف جھوٹ بولنے میں ماہر ہیں، اس دوران عوام نے اشوتھ نارائن اور بی جے پی کے خلاف کھل کرنعرے بازی کی اوربی جے پی کے پوسٹرپھاڑ دئے گئے۔

ایک نظر اس پر بھی

ریاستی سرکاری نصاب کی غلطیوں کی تصحیح کےلئے متبادل نصابی کتب تیار کریں گے اور بچوں کو توہم پرستی اور اندھی تقلید سے بچائیں گے : دیونور مہادیو

آر ایس ایس کی سرکار اسکولی بچوں کو جو کچھ سکھانا چاہتی ہے وہ سکھائے ۔ لیکن ہم متبادل کے طورپر دستور کی تمہید، منشاء سمیت سب کچھ انہیں سکھانے کا کام کریں گے۔ ریاست کے مشہور و معروف کنڑا ادیب دیونورمہادیو نے ان خیالات کااظہار کیا۔

ملک میں ایک نہ ایک دن ’یکساں سول کوڈ‘ ضرور نافذ ہوگا، کرناٹک کے وزیرکوٹا سرینواس پجاری کا خیال

 کرناٹک کے سماجی بہبود کے وزیر کوٹا سرینواس پجاری نے بدھ کے روز کہا کہ متنازعہ یونیفارم (یکساں) سول کوڈ ایک نہ ایک دن ملک میں نافذ ہوگا۔ انہوں نے کہا، ’’بی جے پی یکساں سول کوڈ لانے کے لیے پرعزم ہے اور اسے نافذ کرنے جا رہی ہے۔ یہ بی جے پی ہی ہی ہے جس نے جموں و کشمیر میں دفعہ 370 کو ...

منگلورو : ملالی مسجد کے مقام پر دیوی موجود ہے - کیرالہ کے نجومی کا دعویٰ - ضلع انتظامیہ نے نافذ کیے امتناعی احکامات

ملالی میں واقع السید عبداللہ جامع مسجد میں تجدید نو کے دوران مندر کے باقیات پائے جانے کا دعویٰ کرتے ہوئے ہندو شدت پسند تنظیموں نے جو تنازعہ کھڑا کیا ہے اس میں اب مزید پیچیدگی پیدا ہوگئی ہے ، کیونکہ ہندو مذہبی عقیدہ کے مطابق کیرالہ سے بلائے گئے علم زائچہ کے ماہر اور نجومی ...

شیموگہ ضلع میں بارش کی وجہ سے 40 کروڑ کا نقصا ن

پچھلے ہفتے ہوئی مسلسل بارش سے ضلع میں تقریباً 40کروڑ روپئے کا نقصان ہونے کا اندازہ لگایاگیاہے۔وزیر اعلیٰ کے ساتھ اس سلسلے میں تبادلہئ خیال کرنے کے بعد ضروری معاوضہ دلانے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔یہ بات ضلع نگران کار وزیر نارائن گوڈانے کہی۔