کرناٹک: یڈیورپا کابینہ کی توسیع، کابینہ میں صرف 7 نشستیں خالی

Source: S.O. News Service | Published on 13th January 2021, 11:15 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،13؍جنوری( ایس او نیوز) کرناٹک کے وزیر اعلی بی ایس یڈیورپا نے بدھ کے روز پارٹی ہائی کمان سے گرین سگنل ملنے کے بعد اپنی کابینہ میں سات سے آٹھ نئے اراکین کو شامل کرنے کا فیصلہ کیا ہےلیکن ان کےلئے ایسا کرنابہت مشکل کام ہے کیونکہ اس توسیع کے بعد ان کے خلاف ناراضگی بڑھ سکتی ہے۔وزیر اعلی یڈیو رپا اس ناراضگی کی وجہ سے ہی کابینہ کی توسیع ٹالتے آ رہےہیں۔

گورنر وجوبھائی والا کابینہ کے نئے وزراء کو سہ پہر ساڑھے تین بجے گورنر ہاؤس کے گلاس ہاؤس میں حلف دلائیں گے۔ تاہم، مسٹر یڈیورپا نے نامہ نگاروں سے گفتگو کے دوران ان لوگوں کے نام بتانے سے انکار کردیا، جنہیں کابینہ میں شامل کیا جائے گا۔ نام نہ بتانےکی سب سے بڑی وجہ یہی ہے کہ وزیر اعلی کےاوپر بہت زبردست دباؤ ہے۔

چونکہ کابینہ میں صرف سات نشستیں خالی ہیں، اس وجہ سے توسیع کے لئے کسی ایک وزیر کو اپنے عہدے سے استعفیٰ دینا پڑسکتا ہے۔ وزیر اعلی کس سے استعفی دلوائیں گے یا نہیں دلوائیں گےدونوں ہی صورتوں میں ان کے لئے راہ آسان نہیں ہے۔

کانگریس- جے ڈی (ایس) مخلوط حکومت کو چھوڑ کر بی جے پی حکومت کے قیام کی راہ ہموار کرنے کے لئے تین ارکان اسمبلی ایم ٹی بی ناگراج، آر شنکر اور منی رتنا کو کابینہ میں شامل کیے جانے کا امکان ہے۔ذرائع نے بتایا کہ بی جے پی کے ایم ایل اے امیش کٹی کی بھی حلف برداری متوقع ہے، جن کو وزیر اعلی نے وزیر کے عہدے کی یقین دہانی کرائی تھی۔

ایک نظر اس پر بھی

 حکومت نے وزارت کا بنایا ہے مذاق ۔ قلمدان بدلنے کا کھیل جاری،  سدھا کر کو میڈیکل ایجوکیشن واپس، مادھو سوامی اور آنند سنگھ کے قلمدانوں میں ادلا بدلی۔ آنند سنگھ مستعفی ہوسکتے ہیں

  وزیر اعلیٰ بی ایس یڈیورپا نے  دوبارہ دو وزراء  کے قلمدان بدلے ہیں۔ بی جے پی کے سینئر رکن اسمبلی جے سی مادھو سوامی ، آنند سنگھ اور سی پی یوگیشور کے قلمدان دو بارہ بدلے گئے ہیں جبکہ وزیر صحت ڈاکٹر کے سدھا کر صحت کے ساتھ میڈیکل تعلم کا قلمدان واپس حاصل کرنے میں کامیاب رہے ۔

وزیر محصولات اشوک کے پی اے پررشوت مانگنے  کا الزام ،  شرنگیری کے سب رجسٹرار سے بات چیت کا آڈیو وائرل

ریاستی وزیر  محصولات آراشوک کے پی اے گنگادھر کی طرف سے شرنگیری کے سب رجسٹرار سے رشوت کا مطالبہ کئے جانے کا ایک آڈیو وائرل ہوجانے کے سبب ریاست کے سرکاری حلقوں میں ہلچل مچ گئی ہے۔ 

بنگلورو میں بھی 26 ؍جنوری کو کسانوں کی بہت بڑی ٹریکٹر ریلی؛ پولس نے اجازت دینے سے کیا انکار

مرکزی حکومت کی طرف سے لائے گئے   زرعی  قوانین کے خلاف دہلی  میں کسانوں نے جس طرح کی ٹریکٹر ریلی  نکالنے کا اعلان کیا ہے۔  اسی طرز پر بنگلورو میں بھی کسانوں نے یوم جمہور یہ کے موقع پر ہی بہت بڑی ٹریکٹر ریلی نکالنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ اعلان اتوار کے روز کرناٹکا راجیہ رعیت سنگھا ...

غیر قانونی طور پر منگلورو پہنچانے کے لئے تیار کیا جارہا 4 ٹن بیف اور7موٹر گاڑیاں ضبط ۔ 2 ملزمین گرفتار

مچھلی رفت کرنے کے پلاسٹک ڈبوں میں چھپا کر غیر قانونی طور پر منگلورو پہنچانے کے لئے تیار کیا  جا رہا 4 ٹن بیف پولیس نے ضبط کرتے ہوئے دو ملزمین کو گرفتار کرلیا۔ اس کے علاوہ 7موٹر گاڑیاں بھی ضبط کرلی گئیں۔