چین نے سلامتی کونسل میں پھر اٹھایا مسئلہ کشمیر، انڈیا نے کیا مسترد

Source: S.O. News Service | Published on 6th August 2020, 10:43 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،6؍اگست (ایس او نیوز؍ایجنسی) ہندوستان نے جمعرات کے روز اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مسئلہ کشمیر اٹھانے کی چین کی کوششوں کو مسترد کرتے ہوئے اسے ملک کا داخلی معاملہ قرار دیتے ہوئے چین سے ایسی ناکام کوششوں سے سبق لینے کے لئے کہا ہے۔ ہندوستان نے کہا کہ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب چین نے سلامتی کونسل میں مسئلہ کشمیر اٹھانے کی کوشش کی ہے۔ تاہم اس پر انہیں عالمی برادری کی طرف سے کچھ خاص حمایت نہیں ملی ہے۔

وزارت خارجہ نے کہا کہ "ہم نے اس بات پر غور کیا ہے کہ چین نے ہندوستان کے مرکز کے زیر انتظام جموں و کشمیر سے متلق معاملوں پر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں بحث شروع کی۔ یہ پہلا موقع نہیں ہے جب چین نے کسی ایسے موضوع کو اٹھانے کی کوشش کی ہے جو مکمل طور پر ہندوستان کا داخلی معاملہ ہے‘‘۔

وزارت خارجہ نے کہا کہ ’’پہلے کی طرح اس مرتبہ بھی اس کوشش کو بین الاقوامی برادری کی بہت کم حمایت ملی ہے۔ ہم اپنے داخلی معاملوں میں چین کی مداخلت کو سختی سے مسترد کرتے ہیں اور اسے اس ناکام کوشش سے سبق لینے کی درخواست کرتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

فوج اور قومی سکیورٹی سے جڑی جانکاری افشا کرنا ملک سے غداری۔ پی ایم مودی، امیت شاہ اور ارنب گوسوامی نے ملک سے کھلواڑ کیا: کانگریس

ریپبلک ٹی وی کے ایڈیٹر اِن چیف ارنب گوسوامی اور ٹی وی ریٹنگ ایجنسی بارک کے سابق سی ای او پارتھو داس گپتا کے درمیان ہوئے مبینہ واٹس ایپ چیٹ کو لے کر کانگریس نے سخت رخ اختیار کر لیا ہے-

آر جے ڈی رہنما شیام رجک کو ملی ترقی، پارٹی نے بنایا قومی جنرل سکریٹری 

بہار حکومت میں سابق وزیر اور آر جے ڈی رہنما شیام رجک کو پارٹی نے ترقی دی ہے۔ شیام رجک جنہیں حال ہی میں آر جے ڈی ریاست کا نائب صدر بنایا گیا تھا ان کو آر جے ڈی ہائی کمان نے پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری کے عہدے پر نامزد کیا ہے۔

کسانوں کی ٹریکٹر ریلی پر سپریم کورٹ کا پھر مداخلت سے انکار؛کہا؛ یہ پولیس کے دائرہ اختیار کا معاملہ ہے

26 جنوری کو ہونے والی کسانوں کی  ٹریکٹر ریلی سے متعلق دہلی پولیس کی درخواست پر سپریم کورٹ نے ایک بار پھر کہا  کہ دہلی پولیس کو ریلی سے متعلق فیصلہ لینے کا اختیار ہے۔ سولیسٹر جنرل  نے جب بحث کا آغاز کیا اور 25 جنوری کو کیس کی سماعت کرنے کو کہا تو  چیف جسٹس نے سولیسٹر جنرل کو بتایا ...