ہندوستان میں 10 سالوں کے دوران شرح پیدائش میں 20 فیصد کی گراوٹ، رپورٹ میں انکشاف

Source: S.O. News Service | Published on 27th September 2022, 9:02 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،27؍ستمبر (ایس او نیوز؍ایجنسی) پچھلے 10 سالوں میں ہندوستان میں عام زرخیزی کی شرح (جی ایف آر) میں 20 فیصد کی کمی درج کی گئی ہے۔ اس کا انکشاف حال ہی میں جاری کردہ سیمپل رجسٹریشن سسٹم (ایس آر ایس) ڈیٹا 2020 میں ہوا ہے۔ جی ایف آر سے مراد 15-49 سال کی عمر کے گروپ میں ایک سال میں فی 1000 خواتین پر پیدا ہونے والے بچوں کی تعداد سے ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ کمی شہری علاقوں کی نسبت دیہی علاقوں میں زیادہ ریکارڈ کی گئی ہے۔ شہری علاقوں میں گراوٹ 15.6 فیصد جبکہ دیہی علاقوں میں 20.2 فیصد ریکارڈ کی گئی۔ 'ٹائمز آف انڈیا' میں شائع ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق ایس آر ایس ڈیٹا 2020 کے مطابق ہندوستان میں اوسط جی ایف آر 2008 سے 2010 (تین سال کی مدت) تک 86.1 تھی اور 2018-20 (تین سال کی مدت) کے دوران یہ گھٹ کر 68.7 پر آ گئی۔

ایس آر ایس 2020 رپورٹ کے ذریعے جی ایف آر میں کمی میں تولیدی عمر کے گروپ میں خواتین میں خواندگی کے کردار کو بھی ظاہر کیا گیا ہے۔ خواتین کی تعلیمی سطح کے جی ایف آر کے اعداد و شمار کے حوالے سے رپورٹ میں کہا گیا، ’’ناخواندہ اور خواندہ خواتین کے جی ایف آر کے درمیان فرق ہے۔ اس میں قومی سطح پر جی ایف آر کی نچلی سطح کی عکاسی کرتا ہے۔‘‘

ایمس دہلی کی شعبہ ماہر امراض نسواں کی سابق سربراہ نے کہا کہ جی ایف آر میں کمی آبادی کے اضافہ میں سست روی کی نشاندہی کرتی ہے۔ انہوں نے اسے ایک مثبت علامت قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس تبدیلی کی بنیادی وجوہات خواتین میں شرح خواندگی میں بہتری اور جدید مانع حمل طریقوں کی آسان دستیابی ہے۔

رپورٹ کے مطابق 2008-10 اور 2018-20 کے درمیان جن ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام علاقوں میں سب سے زیادہ جی ایف آر میں گراوٹ درج کی گئی ہے ان میں جموں اور کشمیر (29.2) سر فہرست ہے۔ دہلی (28.5) دوسرے نمبر پر ہے۔ اس کے بعد اتر پردیش (24)، جھارکھنڈ (24) اور راجستھان (23.2) موجود ہیں۔ مہاراشٹر میں گزشتہ دو دہائیوں میں جی ایف آر میں 18.6 فیصد کی کمی درج کی گئی ہے۔

ایس آر ایس کے اعداد و شمار کے مطابق ہندوستان میں مجموعی زرخیزی کی شرح (پیداواری عمر میں فی عورت پیدائش) یعنی ٹی ایف آر 2 ہے۔ سب سے زیادہ ٹی ایف آر (3.0 ( بہار میں ریکارڈ کیا گیا۔ اس کے مقابلے میں، دہلی، تمل ناڈو اور مغربی بنگال میں ٹی ایف آر 1.4 ریکارڈ کیا گیا، جو ہندوستان میں سب سے کم ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

راہل گاندھی کی بھارت جوڑو یاترا اندور سے برولی پہنچی

 کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کی بھارت جوڑو یاترا چھٹے دن آج صبح اندور سے مدھیہ پردیش کے برولی گاؤں کی طرف روانہ ہوئی۔ ان کے ساتھ کانگریس کے درجنوں سینئر رہنما اورافسران کے علاوہ ہزاروں کارکنان بھی موجود ہیں۔

مہاراشٹر میں ریلوے فٹ اوور برڈج کاحصہ گرپڑا 20افراد سے زیادہ زخمی،8کی حالت تشویشناک

) مہاراشٹر کے چندر پور میں بلارشاہ ریلوے اسٹیشن پر فٹ اوور برڈج کا ایک حصہ گرنے سے ایک بڑا حادثہ پیش آیا- کئی مسافر تقریباً 60فٹ کی بلندی سے پٹری پر پل سے گر گئے- حادثے میں 20مسافر زخمی ہو گئے-8 افراد کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے-

گجرات کے نوجوان نوکریاں دینے کے جھانسے کو سمجھ چکے ہیں: ملکارجن کھرگے

کانگریس کے صدر ملکارجن کھڑگے نے اتوار کے روز بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) پر نوجوانوں کو روزگار فراہم کرنے کے نام پر صرف جھانسہ دینے کا الزام لگاتے ہوئے کہا کہ گجرات کے نوجوان اس کی اصلیت کو سمجھ چکے ہیں اور اسمبلی انتخابات میں بی جے پی کو اس کا مناسب جواب ملے گا۔

راہل گاندھی نے 'بھارت جوڑو یاترا' میں چلائی بلیٹ موٹر سائیکل، پدیاترا میں انہیں دیکھنے کے لیے امڈا جم غفیر

مدھیہ پردیش میں کانگریس کی 'بھارت جوڑو یاترا' جاری ہے۔ پدیاترا میں کافی بھیڑ جمع ہو رہی ہے۔ روزانہ ہزاروں کی تعداد میں لوگ پد یاترا میں شامل ہو رہے ہیں۔ راہل گاندھی کو آج 'بھارت جوڑو یاترا' کے دوران بلٹ موٹر سائیکل چلاتے ہوئے دیکھا گیا۔ اس جی تصاویر اور ویڈیوز منظر عام پر آگئی ...

مدھیہ پردیش کی شیوراج سنگھ حکومت عوام کو دے رہی ’انتخابی دھوکہ‘:میناکشی نٹراجن

حال ہی میں صدر دروپدی مرمو نے مدھیہ پردیش میں دو دن کا قیام کیا۔ ریاستی حکومت کی طرف سے شہڈول ضلع کے لال پور میں برسا منڈا جینتی کے موقع پر منعقدہ ’آدیواسی گورو دیوس‘ میں مدھیہ پردیش 'پی ای ایس اے' اصول کے باضابطہ نفاذ کا اعلان کیا گیا۔