سدرامیا کے خلاف سونیا گاندھی کو دیوے گوڈا کا مکتوب، ریاست کے حکمران اتحاد میں دراڑ کی اصل وجہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 16th May 2019, 2:18 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،16/مئی(ایس او نیوز) سابق وزیر اعلیٰ اور ریاست میں حکمران اتحاد کی رابطہ کمیٹی کے چیرمین سدرامیا کے متعلق سابق وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڈا کی طرف سے سابق کانگریس صدر سونیا گاندھی کو لکھا گیا مکتوب ریاستی حکمران اتحاد میں دراڑ کا سبب تصور کیا جارہا ہے۔ بتایاجاتا ہے کہ حال ہی میں دیوے گوڈا نے یو پی اے کی صدر نشین سونیا گاندھی کو مکتوب لکھ کر ان سے گزارش کی کہ ریاست میں اگر کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کو بچانا ہے تو سدرامیا کی زبان پر لگام کسیں۔ دیوے گوڈا نے اس مکتوب میں الزام لگایا کہ سدرامیا مخلوط حکومت کو کمزور کرنے کی بارہا کوششیں کررہے ہیں اسی لئے ان پر لگام کسی جائے۔ لوک سبھا انتخابات میں کرناٹک کی سطح پر کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کا سبوتاژ کرنے کا الزام سدرامیا پر عائد کرتے ہوئے سابق وزیراعظم نے کہاکہ اگر یہ اتحاد ٹھیک طرح سے آگے بڑھتا تو ریاست میں کانگریس اور جے ڈی ایس کو 20 سے زائد لوک سبھا سیٹوں پر کامیابی ملتی جو اب ناممکن نظر آرہی ہے۔جیسے ہی سدرامیا کو یہ بات معلوم ہوئی تو وہ آگ بگولہ ہوگئے اور اس کے بعد سے ہی سدرامیا کو دوبارہ وزیراعلیٰ بنانے کے بیانوں کا سلسلہ شروع ہوا۔ اس مرحلے میں ریاستی جے ڈی ایس صدر وشواناتھ نے بھی سدرامیا پر شدید نکتہ چینی کردی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو میں موسلادھار بارش سے ٹرافک جام موٹر گاڑیوں پر 25سے زائد درخت گرنے سے شدید نقصان

ہفتہ کی رات تیز ہواؤں کے ساتھ ہوئی موسلادھار بارش سے 25سے زائد درخت کئی گاڑیوں پر گرنے سے کافی نقصان پہنچاہے- ہفتہ کی شام 5بجے شروع ہوئی بارش 6:30بجے شہر کے اہم علاقوں میں کافی تیز ہواؤں کے ساتھ جاری رہی-

بنگلورو سنٹرل حلقہ: بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو گاندھی نگر میں اکثریت

کانگریس کمیٹی کے صدر دنیش گنڈو راؤ کے اپنے حلقہ گاندھی نگر میں کانگریس کو اکثریت حاصل ہونے کی بجائے یہاں بی جے پی کو اکثریت ملی ہے- اس حلقہ میں بی جے پی امیدوار پی سی موہن کو 24,723 ووٹوں کی اکثریت حاصل ہوئی ہے-

خواب وخیال میں بھی نہیں تھا کہ لوک سبھا انتخابات کے نتائج کانگریس کے حق میں اتنے مایوس کن ہوں گے:دنیش گنڈو راؤ

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس پارٹی کی شکست کی ذمہ داری میں اپنے سر لیتا ہوں۔ میرے خواب و خیال میں بھی نہیں تھا کہ ہم ریاست میں صرف ایک سیٹ پرکامیابی حاصل کریں گے۔