کرناٹک میں پہلی تا نویں جماعت کے بچوں کو بغیر امتحان کے پاس کردینے کا امکان، 7؍اپریل کو ماہرین کمیٹی کی رپورٹ ملنے کے بعد قطعی فیصلہ کیا جائے گا: وزیر تعلیم سریش کمار 

Source: S.O. News Service | Published on 6th April 2021, 11:09 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،6؍ اپریل (ایس او  نیوز ) کرناٹک  بھر میں کور و نا  وائرس کے معاملوں کی تعداد میں غیر معمولی اضافہ کے درمیان پہلی تا نویں جماعت کے طلباء کے لئے رواں سال بھی امتحانات کروائے جائیں گے یا نہیں اس پرسوالیہ نشان ابھی سے اٹھنے لگے ہیں۔ امسال بھی ان طلباء کے لئے امتحان نہ کروائے جانے کے اندیشوں کے درمیان ریاستی وزیر برائے بنیادی و ثانوی تعلیم سریش کمار نے اعلان کیا ہے کہ پہلی تا نویں جماعت کے بچوں کے لئے رواں سال امتحان ہو گا انہیں اس کے بارے میں فیصلہ 7 ؍اپریل کو ہونے والی میٹنگ میں لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ان جماعتوں میں زیر تعلیم بچوں کے لئے امتحان کروانے کے امکانات کا ماہر ین کی کمیٹی نے جائزہ لیا ہے اور اس کی طرف ر پورٹ پیش کی جائے گی اس رپورٹ کی بنیاد پر فیصلہ لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ کو رونا کی وباء کے سبب پہلی اوردوسری لہر سے سب  سے زیاده شعبہ  تعلیم  متاثر ہوا ہے۔

 بتایا جاتا ہے کہ پیر کے روز وزیر تعلیم نے امتحان کروانے یا نہ کروانے کے بارے میں محکمہ تعلیمات کے افسروں کے علاوہ والدین کی اسو ی ایشن کے نمائندوں اور دیگر کے ساتھ بات چیت کی اور ان سے مشورے لئے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ دو دن کے اندر ماہرین کمیٹی کی طرف سے جو رائے حکومت کودی جائے گی اس کے مطابق ہی فیصلہ کیا جائے گا ۔ وزیر موصوف نے بتایا کہ ان کی میٹنگ میں نجی تعلیمی اداروں کے ذمہ داروں کو بھی مدعو کیا گیا تھا۔ ان اداروں کی طرف سے حکومت سے اصرار کیا گیا ہے کہ پہلی سے پانچویں جماعت کے بچوں کے لئے کم از کم آن لائن امتحان کروایا جائے ۔ اگر انہیں بغیرامتحان کے ذریعے پاس کردیا جاتا ہے تو اس سے طلباء کے ساتھ نا انصافی ہوگی ۔  چھٹویں تا نویں جماعتوں کے لئے امتحان کا انتظام شفٹ کی بنیاد پر کروائے جائیں ۔

 دوسری طرف والدین نے امتحان کروائے جانے کی مخالفت کر تے ہوئے  کہا  کہ  روا ں سا ل کے دوران کلاسوں کا برابر سے اہتمام ہی نہیں ہوا ایسے میں امتحان کروانے کا کیا فائدہ ہوگا ۔ والدین نے اندیشہ ظاہر کیا کہ نجی تعلیمی اداروں کی طرف سے امتحان پر اس لئے زور دیا جا رہا ہے کہ اس کی آڑ میں فیس کی وصولی کر لی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ صرف دو ماہ کے دوران آدھی ادھوری تعلیم کا اہتمام ہوا ہے ۔ میٹنگ کے دوران والدین کی طرف سے شکایت کی گئی کے نجی اسکولوں کی طرف سے طلباء کو فیس کے لئے مسلسل ہراساں کیا جاتا رہا ہے ۔ اگر اس بار انہیں امتحان لینے کی اجازت دے دی گئی تو اس بات کی کیا ضمانت کے طلباء کو امتحان لینے کا موقع یہ اسکول اسی وقت دیں گے جب ان کو فیس ادا کی جائے ۔ ان دونوں کے ٹکراؤ کے درمیان وزیر تعلیم نے فیصلہ ماہرین کی  کمیٹی  پر ڈال کر دبے الفاظ  میں اتنا اشارہ تو دے دیا ہے کہ شاید اس بار پہلی سے نوویں جماعت کے بچوں کو امتحان کے بغیر میں پاس کر دیا جاسکتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

گوکرن کے مہابلیشور مندر کے متعلق سپریم کورٹ کا اہم فیصلہ : مندرکی نگرانی کے لئے کمیٹی تشکیل دینے کا حکم

اترکنڑاضلع کے ہندؤوں کے مشہورو تاریخی مذہبی مقام گوکرن کی مہابلیشور مندر کے تعلق سے سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ  ریاستی حکومت  مندر کے انتظامی امور کو رام چندر پور مٹھ سے واپس لے۔ یاد رہے کہ  پچھلی بی جے پی کی حکومت نے گوکرن کے مہابلیشور مندر کی انتظامیہ اور نگرانی رام چندر ...

لاک ڈاؤن کی بجائے دفعہ 144 نافذ کی جائے : سی ایم ابراہیم| کورونا سے شہید ہونے والے مسلمانوں کی تدفین کیلئے علاحدہ جگہ دی جائے : ضمیر احمد خان 

کورونا سے شہید ہونے والے مسلم طبقے کے افراد کی تدفین کے لئے علاحدہ جگہ دی جائے ۔رکن اسمبلی ضمیر احمد خان نے  ودھان سودھا میں ہوئی بنگلورو کے اراکین اسمبلی،اراکین پارلیمان کی میٹنگ میں یہ مطالبہ کیا۔ انہوں نے کہا کہ ہر ایک رکن اسمبلی کے لئے 25 کووڈ بیڈ اسپتالوں میں ریزرو کئے ...

کرناٹک میں لاک ڈاؤن ضروری نہیں، نائٹ کرفیو کے اوقات میں تبدیلی نہیں، دفعہ 144 نافذ کریں؛ ریاستی حکومت کو اپوزیشن کے مشورے 

بنگلورو میں کووڈ۔ 19 معاملات تیزی سے بڑھنے کے سبب  وزیر اعلیٰ  یڈیورپا، بنگلورو کے وزراء، اراکین پارلیمان اور اراکین اسمبلی کے ساتھ ویڈیو کانفرنس منعقد کی گئی۔  جس میں حکومت کو مشورہ دیا گیا کہ لاک ڈاؤن نافذ نہ  کر یں ،اسپتالوں میں کووڈ بستروں کی قلت دور  کریں۔مہلوکین کی ...

کرناٹک میں کورونا کی دہشت کا ایک اور ریکارڈ ، تقریباً 20 ؍ ہزار متاثر ، بنگلورو میں لاک ڈاؤن یا سخت امتناعی احکامات ؟

اتوارکے روز کرناٹک میں کورونا نے اپنا خوفناک ترین رخ پیش کیا اور اب تک متاثرین کی تعداد کا ایک نیا ریکارڈ سامنے آیا ریاست بھر میں 7 6 0 9 1 تازه معاملات سامنے آئے ۔ 81 لوگوں کی موت واقع ہوئی ہے۔

بھٹکل: ریاست میں کورونا کے بڑھتے معاملات سےپریشان طلبہ نے پیر سے شروع ہونے والے امتحانات منسوخ کرنے ٹوئیٹر پر چلائی مہم

کورونا کی دوسری لہر میں  بڑھتے کیسس کے دوران ایک طرف  میٹرک اور سکینڈ پی یوسی کے امتحانات ملتوی اور منسوخ کئے جارہےہیں تو وہیں دوسری طرف ویشویشوریا ٹیکنالوجیکل یونیورسٹی (وی ٹی یو) کے تحت آنے والی کالجس میں کل  پیر سے فرسٹ سیمسٹر کے امتحانات شروع ہورہےہیں۔