امفان طوفان کے بنگال کے ساحلی علاقوں سے ٹکرانے کا سلسلہ جاری

Source: S.O. News Service | Published on 21st May 2020, 1:17 PM | ملکی خبریں |

کولکاتا،21؍مئی (ایس او نیوز؍ یو این آئی)  ’امفان طوفان‘ مغربی بنگال کے ساحلی علاقوں دیگھا سے ٹکرانے کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ اس کی وجہ سے ساحلی علاقوں کے ساتھ ریاست کے کئی علاقوں میں شدید بارش ہو رہی ہے۔ بنگال اور اڑیسہ میں 4.5 لاکھ افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کردیا گیا ہے۔ اس کے علاوہ کچے مکانات میں مقیم لوگوں کو بھی شیلٹر ہوم میں منتقل کیا جا رہا ہے۔

وزیرا علیٰ ممتا بنرجی اپنے سینئر افسران کے ساتھ ریاستی سکریٹریٹ میں موجود ہیں۔ براہ راست صورت حال پر نظررکھی جارہی ہے۔ مغربی بنگال حکومت نے جنوبی 24 پرگنہ کے سندر بن علاقے میں موجود ٹائیگرس کو بچانے کے لئے رپیڈ رسپانس ٹیم تشکیل دی ہے۔ ہندوستانی بحریہ کی ایک ٹیم جنوبی 24 پرگنہ کے ڈائمنڈ ہاربر میں موجود ہے۔ ضرورت پڑنے پر یہ ٹیم چند منٹوں کے نوٹس پر بچاؤ کام کے لئے پہنچ سکتی ہے۔

انڈین کوسٹ کاسٹ کی 20 ٹیمیں بھی موجود ہیں۔ یہ ٹیم مختصر وقت کے نوٹس پر ریلیف ورک کے لئے پہنچ سکتی ہیں۔ کلکتہ ائیر پورٹ پر تمام فلائی سروس کل صبح 5 بجے تک بند کردی گئی ہیں۔ مغربی بنگال حکومت نے اب تک تک 4.5 لاکھ افراد کو محفوظ مقام پر منتقل کردیا ہے۔ کل لوک سبھا اسپیکر اوم برلا نے مغربی بنگال اور اڑیسہ کے ایک درجن ممبران پارلیمنٹ سے بات کر”طوفان“ پر تبادلہ خیال کیا ہے۔

وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی آج رات ریاستی سکریٹریٹ میں ہی قیام کریں گی۔ کلکتہ میں طوفان کی وجہ سے جگہ جگہ درخت گر گئے ہیں۔ بچاؤ ٹیم ہٹانے کا کام شروع کر دیا ہے۔ اس کے علاوہ کچے مکانات میں رہنے والوں کو بھی محفوظ مقام یا شیلٹر ہوم میں منتقل کیا جارہا ہے۔ کورونا وائرس کی وجہ سے معاشرتی فاصلے کے کا خیال رکھا جا رہا ہے۔ پولس کے مطابق شہر میں تین درجن سے زاید درخت گر گئے ہیں۔

مشرقی مدنی پور میں دیگھا ساحل سمندر کی وجہ سے سیاحتی علاقہ اور یہاں بڑے پیمانے پر ہوٹل ہیں۔ ٹن کے کئی ہوٹل منہدم ہوگئے ہیں۔ وزیرا علیٰ ممتا بنرجی نے کہا ہے کہ جب تک طوفان رک نہیں جاتا ہے اس وقت تک بلا ضرورت گھر سے باہر نہ نکلیں، درخت کے گرنے کی وجہ سے کئی سڑکیں بند ہیں اور کئی علاقوں میں بجلی بند کردی گئی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں گزشتہ 24 گھنٹے میں کورونا کے 6387 نئے معاملے، متاثرین کی تعداد 1.50 لاکھ سے متجاوز

ملک میں گزشتہ دو دنوں کے دوران کورونا انفیکشن کے نئے معاملوں میں جزوی کمی آئی اور تقریباً 4000 لوگوں کے صحت مند ہونے سے جہاں تھوڑی راحت ملی ہے، وہیں گزشتہ 24 گھنٹے میں انفیکشن کے 6387 نئے کیس سامنے آنے سے ملک میں اس سے متاثر ہونے والے لوگوں کی تعداد 1.50 لاکھ سے تجاوز کر گئی ہے۔

گجرات کے سورت سے نکلی ٹرین ، بہار کے چھپرا کے بجائے پہنچی کرناٹک کے بنگلورو: مزدورں کا حال بے حال

لاک ڈاؤن کی مدت میں مزدوروں کو ان کے وطن لوٹانے گجرات سے نکلی ایک مزدور ٹرین (شریمک ریل ) بہار پہنچنے کے بجائے کرناٹکا کے بنگلورو پہنچ کر سب کو حیرت میں ڈال دیا ہے۔ گرچہ یہ ایک مذاق لگتا ہے مگر ہے حقیقت۔ اسی طرح اور ایک خصوصی مزدور ریل گجرات کے سورت سے 1200مزدوروں کو لے کر بہار کے ...

تبلیغی جماعت کے 57 غیر ملکی افراد عدالت سے بری، حکومت ہریانہ کو ان کے ملک بھیجنے کا حکم

  ہریانہ کی ایک عدالت نے اہم فیصلہ سناتے ہوئے سبھی چھ ممالک کے 57 غیرملکی جماعتیوں پرغیرملکی قوانین کے تحت عائد تمام دفعات کو بے بنیاد تسلیم کرتے ہو ئے سبھی جماعتیوں کو بری کردیا اورہریانہ حکومت کو حکم دیا کہ جلد سے جلد سبھی جماعت والوں کو ان کے ملک بھیجنے کا انتظام کرے۔ یہ بات ...

مزدور پیدل نہ جائیں، سب کے لئے مفت ریل سفر کے انتظامات: منیش سسودیا

  دہلی کے نائب وزیر اعلی منیش سسودیا نے تارکین وطن مزدوروں سے پیدل سفر نہ کرنے کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ دہلی حکومت نے تمام مفت ریل سفروں کا انتظام کیا ہے۔ 7 مئی سے 25 مئی تک ، 2،41،169 افراد کو 196 ٹرینوں کے ذریعے ان کے گھر بھیج دیا گیا ہے۔ بہار میں سب سے زیادہ 1،25،711 افراد ہیں ...

ملک میں پہلی بار 5 ہزار مسلمانوں نے عید کی نماز آن لائن ادا کی

 کورونا وائرس کے سبب جب لوگوں کو مسجد میں جا کر نمازیں پرھنے اورعبادت کرنے پرروک لگی ہوئی ہے اور مسلمان اجتماعی عبادت کے بجائے انفرادی عبادت کرنے پر مجبور ہیں تو ایسی استثنائی صورتحال میں نئی اور جدید ٹیکنالوجی کے استعمال کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے