بنگلورو کے اسپتالوں میں داخلہ لینے والے کووڈ مریضوں کی تعداد میں 30گنا اضافہ

Source: S.O. News Service | Published on 10th January 2022, 11:39 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 10؍جنوری(ایس او   نیوز)کرناٹک میں کووڈ نے نہ صرف یہ کہ کہرام مچا رکھا ہے بلکہ دن بہ دن کورونا وائرس کے کیسوں میں اضافہ حکام کیلئے تشویش کا سبب بنا ہوا ہے- جہاں 24تا31 دسمبر کے ہفتہ میں کورونا کے مجموعی کیس جو شہر بنگلورو میں سامنے آئے وہ محض 1024رہے،اس کے برعکس بنگلورو میں اومیکرون کے پہلے کیس کی نشاندہی کے صرف چند دن بعد سے ہی کووڈ مریضوں کی تعداد میں بے تحاشہ اضافہ ہوا -بنگلورو میں رواں ہفتہ کووڈ کیسوں کی پازیٹیویٹی شرح محض1.5فیصد سے بڑھ کر اب11فیصد کے قریب تک پہنچ چکی ہے-سرکاری عہدیداروں کے مطابق گزرے ہوئے ہفتہ کے دوران بنگلورو میں کووڈ کی شکایت کے ساتھ اسپتالوں میں داخل ہونے والوں کی تعدا د میں کئی گنا اضافہ دیکھاگیاہے-29دسمبر تک کووڈ کی شکایت کے ساتھ اسپتالوں میں داخلہ لینے والوں کی تعداد محض78تھی 8جنوری کی شام کو ایک دن کے اعداد وشمار بتاتے ہیں کہ24گھنٹوں کے دوران بنگلور و میں 2022افراد نے اسپتالوں میں داخلہ لیا ہے - حالانکہ اموات کی شرح میں اضافہ نہیں ہوا ہے -افسروں کا کہنا ہے کہ کووڈ کی شکایت کے ساتھ اسپتال میں داخلہ لینے والے مریضوں کی تعداد میں 90فیصد وہ مریض ہیں جنہوں نے ویکسین نہیں لیا ہے - آئی سی یو بستروں کیلئے ان مریضوں کی طرف سے مانگ میں 30گنا سے زائد اضافہ ہوا ہے جنہوں نے ویکسین نہیں لیا ہے -کووڈ کیسوں کیلئے بنگلورو میں چار بڑے اسپتال مقرر کئے گئے ہیں ان میں کے سی جنرل اسپتال، بورنگ استپال، وکٹوریہ اسپتال اور سی وی رمن نگر اسپتال شامل ہیں - ان اسپتالوں میں عملہ کا کہنا ہے کہ اکثر مریض جو کورونا پازیٹیو ہونے کے بعد داخل ہو رہے ہیں انہوں نے ویکسین کے دونوں ڈوز لے رکھے ہیں اوران کا علاج جلد کر کے رخصت کیا جا رہا ہے- لیکن مسئلہ ان مریضوں کا ہے جنہوں نے ویکسین نہیں لی ہے - یہ بھی سامنے آیا ہے کہ کووڈ کے وہ مریض جنہوں نے ویکسین نہیں لی ہے ان کی بڑی تعداد نجی اسپتالوں کا رخ کر رہی ہے - نجی اسپتالوں کی طرف سے اب تک حکومت کو کووڈ مریضوں کے داخلہ کے بارے میں ڈاٹا کی فراہمی کا سلسلہ شروع نہیں ہوا ہے اس لئے حکومت کو ان کی نشاندہی میں بھی دشواری پیش آ رہی ہے-ان تمام ہنگاموں کے دوران اسپتالوں سے ایک اطمینان بخش خبر یہ سامنے آئی ہے کہ کووڈ کے کیسوں میں اضافہ کے باوجود بنگلورو میں لکویڈ آکسیجن کی مانگ میں اضافہ نہیں کیا گیا ہے-

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کو ترقی کا مطلب ہی معلوم نہیں ہے: رام لنگاریڈی

بی جے پی حکومت کے سربراہ ملک کی ترقی کے بارے میں سوچنے کی بجائے سرکاری ملکیت والے اداروں کو پرائیوٹائز کرنے اور صنعت کار ادانی اورامبانی کو مزید دولتمند بنانے میں لگے ہوئے ہیں،جس سے ملک کے عوام کو کئی مشکلو ں کا سامناکرناپڑرہاہے۔بی جے پی کو ترقی کا مطلب ہی معلوم نہیں ہے۔یہ بات ...

اس ملک کوبی جے پی نے کیا دیاہے؟: سابق وزیراعلیٰ سدارامیا

کانگریس پارٹی نے اس ملک کو آزادی دلائی اور ہمیں یہاں آزادی سے زندگی گزارنے کا موقع دیاہے،مگر اس ملک کیلئے بی جے پی جیسی بدعنوان اور فرقہ پرست پارٹی نے کیا دیاہے؟یہ سوال سابق وزیراعلیٰ و اپوزیشن لیڈرسدارامیانے کیا۔

جشن آزادی کی مناسبت سے75الیکٹرک بسیں دوڑانے کافیصلہ، بنگلورو شہرکے بس اسٹانڈوں میں 300چارجنگ اسٹیشن قائم کئے جائیں گے: بی ایم ٹی سی

آزادی کے75سال کی منا سبت سے منائے جا رہے امرت مہا اتسو کے موقع پر بنگلور شہر کے مسافروں کیلئے بنگلور میٹرو پالیٹن ٹرانسپورٹ کارپوریشن(بی ایم ٹی سی)نے مزید 75 الیکٹرک بسوں کو سڑکوں پر دوڑانے کا فیصلہ کیا ہے۔

ریاستی حکومت عوام پرورمنصوبے جاری کرنے میں ناکام:کانگریس

)مہا دیو پورہ اسمبلی حلقہ کے منوکولا لو وارڈ کے سابق کانگریس کارپوریٹر ایس،ادے کمار نے الزام لگایا کہ ریاستی حکومت اپنے دوراقتدار کے دوران عوامی مفادات پروگرامس کو جاری کرنے میں نا کام رہی ہے،اور وہ ترقیاتی کاموں پر توجہ دینے کے بجائے 40فیصد کمیشن کے دھندہ کو اپناتے ہو ئے ...