جموں وکشمیر میں کورونا سے مزید چارکی موت، کل تعداد بڑھ کر 100 ہوئی

Source: S.O. News Service | Published on 30th June 2020, 10:32 PM | ملکی خبریں |

سری نگر،30؍جون(ایس او نیوز؍ایجنسی) جموں و کشمیر میں منگل کے روز چار کورونا متاثرین کی موت واقع ہونے کے ساتھ یونین ٹریٹری میں کورونا سے متعلق اموات کی تعداد بڑھ کر 100ہوگئی ہے۔ ان چار اموات میں سے تین کا تعلق وادی کشمیر کے سری نگر، شوپیاں اور بارمولہ اضلاع سے ہے جبکہ ایک صوبہ جموں کے ضلع کٹھوعہ کا رہنے والا ہے۔

ہسپتال برائے امراض سینہ سری نگر میں منگل کے روز ضلع شوپیاں سے تعلق رکھنے والے ایک 23 سالہ کورونا متاثرہ مریض اور ضلع سری نگر سے تعلق رکھنے والی کورونا میں مبتلا ایک 65 سالہ خاتون کی موت واقع ہوئی۔ سی ڈی ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر سلیم ٹاک نے بتایا کہ شوپیاں سے تعلق رکھنے والے 23 سالہ جوان کو یہاں گذشتہ روز لایا گیا تھا اور منگل کے روز اس کی موت واقع ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ متوفی کے سر میں شدید چوٹ لگی تھی اور اس کی حالت تشویش ناک بنی ہوئی تھی۔

موصوف ڈاکٹر نے بتایا کہ سری نگر کے باغات برزلہ سے تعلق رکھنے والی کورونا سے متاچرہ خاتون جس کی منگل کے روز موت واقع ہوئی، وہ ونٹی لیٹر پر تھی اور وہ ذیباطیس کے علاوہ کئی عارضوں میں مبتلا تھی۔ قبل ازیں جموں کے کٹھوعہ کے ایک عمر رسیدہ خاتون مریض اور شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ سے تعلق رکھنے والے ایک مریض کی بالترتیب گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں اور شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز بمنہ میں موت واقع ہوئی۔

شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز بمنہ کی میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر شفا دیوا نے بتایا کہ شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ سے تعلق رکھنے والے ایک 52 سالہ مریض کو یہاں 27 جون کو لایا گیا تھا جس کا بعد میں کورونا ٹیسٹ مثبت آیا تھا اور منگل کے روز اس کی حرکت قلب بند ہونے سے موت واقع ہوئی۔

انہوں نے بتایا کہ متوفی نمونیا کے علاوہ دیگر عارضوں میں بھی مبتلا تھا۔ جموں کے ضلع کٹھوعہ سے تعلق رکھنے والی ایک 85 سالہ کورونا متاثرہ خاتون کی منگل کی صبح گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں میں موت واقع ہوئی۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں کے پرنسپل ڈاکٹر نصیب چند ڈیگرا نے ایک مقا می خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ کٹھوعہ سے تعلق رکھنے والی عمر رسیدہ خاتون کو یہاں 25 جون کو لایا گیا تھا اور وہ مسلسل وینٹی لیٹر پر تھی۔

انہوں نے کہا کہ پھیپھڑوں کے عارضے میں مبتلا یہ خاتون منگل کی صبح قریب ساڑھے سات بجے انتقال کر گئی۔ اس خاتون کی موت کے ساتھ جموں و کشمیر میں اب تک کورونا سے متعلق اموات کی تعداد بڑھ کر 100 ہوگئی ہے جن میں سے 88 کا تعلق کشمیر سے ہے جبکہ 12 جموں سے تعلق رکھتے ہیں۔

وادی کشمیر میں ضلع سری نگر میں اب تک کورونا سے متعلق سب سے زیادہ 23 اموات درج ہوئی ہیں اور دوسرے نمبر پر ضلع بارہمولہ ہے جہاں اب تک 16 افراد کی اس وائرس میں مبتلا ہو کر موت واقع ہوئی ہے۔ ضلع کولگام میں تیرہ، شوپیاں میں بارہ، بڈگام میں سات، اننت ناگ میں سات، کپوارہ میں پانچ، پلوامہ میں چار اور بانڈی پورہ میں ایک مریض کورونا میں مبتلا ہوکر داعی اجل کو لبیک کہہ گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

مانسون اجلاس: پیگاسس اور کسانوں کے مسئلہ پر حزب اختلاف کا ہنگامہ جاری، راجیہ سبھا کی کارروائی تک ملتوی

راجیہ سبھا میں اپوزیشن جماعتوں کے ارکان نے پیگاسس جاسوسی کیس، کسانوں کے مسائل اور مہنگائی پر راجیہ سبھا میں شور و غل اور ہنگامہ کیا، جس کی وجہ سے ایوان کو دوپہر 2 بجے تک ملتوی کر دیا گیا۔ صبح ضروری دستاویزات میز پر رکھے جانے کے بعد چیئرمین ایم وینکیا نائیڈو نے کہا کہ ضابطہ 267 کے ...

دہلی: ریپ کے بعد قتل کی گئی بچی کے اہل خانہ سے راہل گاندھی کی ملاقات، ’انصاف کے راستہ پر میں ساتھ ہوں‘

  کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے بدھ کی صبح راجدھانی دہلی میں عصمت دری اور قتل کی شکار ہونے والی بچی کے اہل خانہ سے ملاقات کی۔ ملک کو شرمسار کر دینے والے اس واقعہ کا المناک پہلو یہ ہے کہ متاثرہ بچی کی لاش کو اہل خانہ کی مرضی کے بغیر نذر آتش کر دیا گیا۔ راہل گاندھی صبح کے وقت ...

دہلی سنبھال نہیں پا رہے ہیں، وزیر داخلہ یو پی کو دے رہے ہیں سرٹیفکیٹ: پرینکا گاندھی

کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے دہلی میں ایک بچی کے ساتھ ہوئے حادثے کی مذمت کرتے ہوئے وزیرداخلہ امت شاہ کو ہدف تنقید بنایا اور کہا کہ وہ دہلی کا لاء اینڈ آرڈر سنبھال نہیں پا رہے ہیں اور اترپردیش میں بہتر نظم و نسق کا سرٹیفکیٹ بانٹ رہے ہیں۔

راہل گاندھی کی ’ناشتہ پارٹی‘ کے بعد کانگریس نے کہا ’یہ آنے والے 2024 کی تصویر ہے‘

 کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی کی دعوت پر آج صبح 9.30 بجے 17 اپوزیشن پارٹیوں کے لیڈران کانسٹی ٹیوشن کلب پہنچے اور چائے و ناشتہ کی دعوت میں شرکت کی۔ اس سلسلے میں کانگریس ترجمان ابھشیک منو سنگھوی نے ایک پریس کانفرنس کر ان سبھی اپوزیشن پارٹی لیڈران کا شکریہ ادا کیا جنھوں نے راہل ...

دہلی میں 9 سالہ دلت بچی کی عصمت دری اور قتل کے خلاف کانگریس سراپا احتجاج

دہلی میں 9 سالہ دلت بچی کی عصمت دری اور قتل معاملہ کو لے کر کانگریس نے سخت ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے دہلی کی کیجریوال حکومت اور دہلی پولیس کے ساتھ ساتھ مرکز کی مودی حکومت کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔