جموں وکشمیر میں کورونا سے مزید چارکی موت، کل تعداد بڑھ کر 100 ہوئی

Source: S.O. News Service | Published on 30th June 2020, 10:32 PM | ملکی خبریں |

سری نگر،30؍جون(ایس او نیوز؍ایجنسی) جموں و کشمیر میں منگل کے روز چار کورونا متاثرین کی موت واقع ہونے کے ساتھ یونین ٹریٹری میں کورونا سے متعلق اموات کی تعداد بڑھ کر 100ہوگئی ہے۔ ان چار اموات میں سے تین کا تعلق وادی کشمیر کے سری نگر، شوپیاں اور بارمولہ اضلاع سے ہے جبکہ ایک صوبہ جموں کے ضلع کٹھوعہ کا رہنے والا ہے۔

ہسپتال برائے امراض سینہ سری نگر میں منگل کے روز ضلع شوپیاں سے تعلق رکھنے والے ایک 23 سالہ کورونا متاثرہ مریض اور ضلع سری نگر سے تعلق رکھنے والی کورونا میں مبتلا ایک 65 سالہ خاتون کی موت واقع ہوئی۔ سی ڈی ہسپتال کے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر سلیم ٹاک نے بتایا کہ شوپیاں سے تعلق رکھنے والے 23 سالہ جوان کو یہاں گذشتہ روز لایا گیا تھا اور منگل کے روز اس کی موت واقع ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ متوفی کے سر میں شدید چوٹ لگی تھی اور اس کی حالت تشویش ناک بنی ہوئی تھی۔

موصوف ڈاکٹر نے بتایا کہ سری نگر کے باغات برزلہ سے تعلق رکھنے والی کورونا سے متاچرہ خاتون جس کی منگل کے روز موت واقع ہوئی، وہ ونٹی لیٹر پر تھی اور وہ ذیباطیس کے علاوہ کئی عارضوں میں مبتلا تھی۔ قبل ازیں جموں کے کٹھوعہ کے ایک عمر رسیدہ خاتون مریض اور شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ سے تعلق رکھنے والے ایک مریض کی بالترتیب گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں اور شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز بمنہ میں موت واقع ہوئی۔

شیر کشمیر انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز بمنہ کی میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈاکٹر شفا دیوا نے بتایا کہ شمالی کشمیر کے ضلع بارہمولہ سے تعلق رکھنے والے ایک 52 سالہ مریض کو یہاں 27 جون کو لایا گیا تھا جس کا بعد میں کورونا ٹیسٹ مثبت آیا تھا اور منگل کے روز اس کی حرکت قلب بند ہونے سے موت واقع ہوئی۔

انہوں نے بتایا کہ متوفی نمونیا کے علاوہ دیگر عارضوں میں بھی مبتلا تھا۔ جموں کے ضلع کٹھوعہ سے تعلق رکھنے والی ایک 85 سالہ کورونا متاثرہ خاتون کی منگل کی صبح گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں میں موت واقع ہوئی۔ گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں کے پرنسپل ڈاکٹر نصیب چند ڈیگرا نے ایک مقا می خبر رساں ایجنسی کو بتایا کہ کٹھوعہ سے تعلق رکھنے والی عمر رسیدہ خاتون کو یہاں 25 جون کو لایا گیا تھا اور وہ مسلسل وینٹی لیٹر پر تھی۔

انہوں نے کہا کہ پھیپھڑوں کے عارضے میں مبتلا یہ خاتون منگل کی صبح قریب ساڑھے سات بجے انتقال کر گئی۔ اس خاتون کی موت کے ساتھ جموں و کشمیر میں اب تک کورونا سے متعلق اموات کی تعداد بڑھ کر 100 ہوگئی ہے جن میں سے 88 کا تعلق کشمیر سے ہے جبکہ 12 جموں سے تعلق رکھتے ہیں۔

وادی کشمیر میں ضلع سری نگر میں اب تک کورونا سے متعلق سب سے زیادہ 23 اموات درج ہوئی ہیں اور دوسرے نمبر پر ضلع بارہمولہ ہے جہاں اب تک 16 افراد کی اس وائرس میں مبتلا ہو کر موت واقع ہوئی ہے۔ ضلع کولگام میں تیرہ، شوپیاں میں بارہ، بڈگام میں سات، اننت ناگ میں سات، کپوارہ میں پانچ، پلوامہ میں چار اور بانڈی پورہ میں ایک مریض کورونا میں مبتلا ہوکر داعی اجل کو لبیک کہہ گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

ملک میں کورونا انفیکشن نے پھر بنایا ریکارڈ، 24 گھنٹوں میں ملے 22,771 نئے کیس، 442 لوگوں کی موت

ملک میں کورونا وائرس روز بروز شدید شکل اختیار کرتا جارہا ہے اور گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک میں کورونا وائرس کے ریکارڈ 22،771 نئے کیسز سامنے آئے ہیں ، جس سے متاثرین کی مجموعی تعداد بڑھ کر 6.48 لاکھ ہوچکی ہے۔

ممبئی میں موسلا دھار بارش، 38 مقامات پر پانی بھرگیا، ٹریفک جام سے عوام کو پریشانی

گزشتہ روز صبح ممبئی میں تین گھنٹوں تک جاری رہنے والی شدید بارش کے بعد کم سے کم 38 مقامات پر پانی بھرگیا، جس سے اندھیری اور سائن میں تین مقامات پر بڑے پیمانے پر ٹریفک جام ہوگیا اور ٹریفک کا رخ موڑنا پڑا۔

دہلی میں کورونا کے معاملات 94000سے زیادہ، 2900سے زیادہ لوگو ں کی موت

کورونا وائرس (کووڈ۔19) کا قہر رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے اور راجدھانی میں کل 2520نئے معاملے سامنے آنے کے بعد متاثرین کی تعداد جمعہ کو بڑھ کر 94000سے زیادہ ہوگئی ہے اور 59مزید لوگوں کی موت کے ساتھ مرنے والوں کی تعداد 2923ہوگئی ہے۔