کرناٹک کے تمام محکمو ں میں رشوت خوری اوربدعنوانی کاراج ، ریاستی حکومت عوام کوگمراہ کرنے میں لگی ہوئی ہے:سدارامیا

Source: S.O. News Service | Published on 31st August 2022, 11:21 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،31؍اگست(ایس او نیوز)سابق وزیراعلیٰ اوراسمبلی میں اپوزیشن لیڈر سدارامیا نے بی جے پی حکومت کوشدیدتنقیدکانشانہ بناتے ہوئے کہاکہ کہ بی جے پی یہ کہہ کر لوگوں کی توجہ ہٹانے کی کوشش کر رہی ہے کہ کیمپنااپوزیشن خیمہ میں ہے۔انہوں نے کہاکہ بی جے پی یہ باورکرنے کی کوشش کرارہی ہے کہ اپوزیشن پارٹی ٹھیکیداروں کی اسوسی ایشن کیمپنا کے صدر کے پیچھے ہے جس نے کمیشن پر ریاستی حکومت کے خلاف الزام لگایا ہے۔

سدارامیا نے ایک پریس ریلیز میں کہا کہ اگر حکومت چلانے والوں میں تھوڑی سی بھی شرم ہوتی اور قانون کی سمجھ ہوتی تو وہ اس طرح کی بات نہ کرتے۔ صرف کیمپنا ہی مجھ سے ملنے والوں میں شامل نہیں تھے۔ ٹھیکیداروں کی انجمن کے 50 سے زیادہ لوگوں نے مجھ سے ملاقات کی تھی۔ وزیراعلیٰ بومئی سمیت کئی وزراء نے بتایا کہ وہ وفدسدارامیا سے ملاقات کے لیے کیوں گیا تھا،جبکہ کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن نے بھی وزیراعلیٰ سے ملاقات کی۔ لیکن وہ مسئلہ حل کرنے کے بجائے سنگین الزامات لگا رہے ہیں کہ ٹھیکیداروں کی یونین کو توڑنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ اس کے علاوہ انہوں نے ایک خط لکھا کہ بی بی ایم پی میں کمیشن کی شرح 40 فیصد تھی، اب یہ 50 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔ٹھیکیداروں کی یونین گزشتہ ایک سال سے مسلسل لڑ رہی ہے۔ اگر خود کو چوکیدار کہنے والے مودی اور ریاستی بی جے پی حکومت نے ان کی درخواستوں کو سنجیدگی سے لیا ہوتا تو آج یہ مسئلہ پیدا نہ ہوتااور بیلگام کا سنتوش پاٹل خودکشی نہیں کیاہوتا۔ریاستی حکومت کے کمیشن گھوٹالہ کی وجہ سے ریاست میں جو کام ہو رہے ہیں ان کے معیار کو لوگ دیکھ رہے ہیں۔ وزیراعظم کی آمندکے موقع پرراستوں پرجوتارڈالے گئے تھے اگلے دن تارکول نکل گیا۔محکمہ ریونیو، محکمہ پولیس، ایریگیشن پی ڈبلیو ڈی، ٹرانسپورٹ، سب رجسٹرار، محکمہ جنگلات اور اسی طرح ہر جگہ رشوت کا عفریت کھیل رہا ہے۔ ایسے میں عام آدمی کس کے پاس جائے؟ انہوں نے خبردار کیا کہ لوگ یاد رکھیں کہ اگر وہ اپوزیشن پارٹی کے لیڈروں کے پاس نہیں آسکتے تو وہ ہاتھ میں پتھر اور لاٹھی لے کر مایوسی کے عالم میں حکومت کے خلاف ہو جائیں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

پتور: آپسی اختلافات بھول کر بی جے پی کو شکست دینے کے لئے متحد ہوجائیں - کانگریس پارٹی کارکنان سے لیڈروں کی اپیل 

کانگریس پارٹی لیڈران نے  پتور کے نیلیاڈی سے  ملناڈ اور ساحلی علاقے کے لئے اپنی 'پرجا دھونی یاترا' کا دوسرا مرحلہ شروع کرتے ہوئے اپنی کارکنان کو آواز دی کہ وہ آپسی اختلافات بھول کر بی جے پی کی  "بد عنوان، غیر فعال، غیر مخلص، غیر موثر اور عوام سے دور" حکومت کو ہٹانے کے لئے متحد ...

رائچور: طالبہ کی ہاسٹل میں مشتبہ موت، والدین کا جنسی ہراسانی کا الزام

لنگاساگر ٹاؤن میں واقع ہاسٹل کے کمرے میں ایک 17سالہ طالبہ پُراسرار حالات میں مردہ پائی گئی۔ جس کو لے کر والدین نے الزام لگایا ہے کہ پرنسپل کی مبینہ جنسی ہراسانی اس کے لئے ذمہ دار ہے۔ والدین کا کہنا ہے کہ جنسی ہراسانی کے بعد اس کا قتل کیا گیا ہے اور بعد میں اُسے خودکشی دکھانے کی ...

مئی میں اسمبلی انتخابات ہونے کی اطلاعات کے بعد کرناٹک میں شروع ہوگئی انتخابی گہماگہمی؛ 9 فروری کو کماراسوامی پہنچیں گے بھٹکل

کرناٹک میں مئی کے  تیسرے ہفتے میں اسمبلی انتخابات ہونے کی اطلاعات موصول ہونے کے ساتھ ہی  ریاست کی  سیاسی پارٹیوں میں میٹنگوں  کا آغاز ہوچکا ہے۔ اسی طرح کی ایک میٹنگ آج سنیچر کو بنگلور جے ڈی ایس پارٹی کی منعقد ہوئی جس میں بھٹکل کے  جے ڈی ایس قائد عنایت اللہ شاہ بندری بھی شریک ...

کرناٹک میں آنے والے اسمبلی انتخابات کو لے کرتیاریاں شروع؛ پرمود متالک کے خلاف کارکلا میں  بی جے پی اگرمخالفت کرتی ہے تو چکمگلورو میں سی ٹی روی کے خلاف کھڑا کیا جائے گا رام سینا کا اُمیدوار

کرناٹک میں اسمبلی انتخابات  مئی کے تیسرے ہفتہ میں ہونے کی توقع ظاہر کی جارہی ہے، لیکن ابھی سے انتخابات کی  گہماگہمی شروع ہوچکی ہے۔ ضلع اُڈپی کے کارکلا سے  شری رام سینا کے چیف پرمود متالک نے آئندہ اسمبلی الیکشن میں  میدان میں اترنے کا اعلان کیا ہے اور بی جے پی ایم ایل اے سنیل ...

کرناٹک اسمبلی انتخاب میں کانگریس 136 نشستوں پر کامیاب ہوگی، بی جے پی حکومت چند دنوں کی مہمان، ڈی کے شیوکمار کا دعویٰ

کرناٹک کانگریس نے جمعہ کے روز دعویٰ کیا کہ وہ ریاست میں آئندہ اسمبلی انتخاب میں بہ آسانی 136 سیٹیں جیت لے گی۔ اس درمیان ریاستی کانگریس صدر ڈی کے شیوکمار اور اپوزیشن لیڈر سدارمیا نے ریاست کے جنوبی اور شمالی علاقوں سے الگ الگ بس یاترا شروع کی۔