بہار اسمبلی انتخابات میں ٹکٹ کے لئے بی جے پی کے دفتر میں ہنگامہ

Source: S.O. News Service | Published on 28th September 2020, 2:31 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ،28؍ستمبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) بہار اسمبلی انتخابات کی تاریخوں کے اعلان کے بعد سے ٹکٹ کے دعویداروں کی سرگرمیاں اس قدر بڑھ گئی ہیں کہ ان کے حامی کارکنان ہنگامہ آرائی اور ہاتھاپائی کرنے تک آمادہ ہیں اور کل ایسا ہی نظارہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے ریاستی دفتر میں دیکھا گیا۔

لکھی سرائے اسمبلی حلقہ کے بی جے پی کارکنان پارٹی کے ریاستی دفتر پہنچے اور اس بار اس سیٹ سے کماری ببیتا کے لئے ٹکٹ کا مطالبہ کرنا شروع کردیا۔ انہوں نے علاقہ کے موجودہ ایم ایل اے وجئے کمار سنہا کے خلاف بھی نعرے بازی کی۔

کارکنان کا کہنا تھا کہ اپنے حلقہ کے موجودہ ایم ایل اے اور وزیر وجئے سنہا وہاں کے ووٹروں کی توقعات پر پورا نہیں اتر رہے ہیں۔ اس لیے اس بار کماری ببیتا کو اس نشست پرٹکٹ دیا جانا چاہئے۔

دریں اثناء، پارٹی دفتر پہنچنے والے سینئر لیڈر اور نائب وزیر اعلی سشیل کمار مودی کی گاڑی کو کماری ببیتا کے حامیوں نے گھیر لیا۔ وہ مسٹر مودی کو کار سے نیچے نہیں اترنے دے رہے تھے۔ اس دوران دفتر میں پہلے سے موجود پارٹی کارکنان اور لکھی سرائے سے تعلق رکھنے والی کماری ببیتا کے حامیوں کے مابین بھی ہاتھا پائی ہوئی۔ بہت کوشش کے بعد ان حامیوں کو راضی کیا گیا اور مسٹر مودی کار سے باہر آسکے۔

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس نے نتیش کمار اور سشیل مودی کو برخاست کرنے کا مطالبہ کیا

کانگریس نے آج گورنر پھاگو چوہان سے ملاقات کر کے مونگیر تشدد معاملے میں وزیراعلیٰ نتیش کمار اور نائب وزیراعلیٰ سشیل کمار مودی کو سیدھے طورپر ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے انہیں عہدہ سے برخاست کرنے اور پولیس فائرنگ میں مارے گئے نوجوان کے اہل خانہ کو پچاس لاکھ روپے معاوضہ دینے کا مطالبہ ...

سعودی کرنسی نوٹ میں کشمیر، لداخ کو علاحدہ ملک دکھانے پر ہندوستان کا اعتراض

ہندوستان نے سعودی عرب کے نئے کرنسی نوٹ پر کشمیر اور لداخ کو عالمی نقشے میں علیحدہ ملک دکھانے پر سخت اعتراض درج کیا ہے اور سعودی حکومت سے اپیل کی ہے کہ یہ علاقے ہندوستان کا اٹوٹ حصے ہیں اور نقشہ میں غلطی کا ازالہ کرنے کے لیے فوری کارروائی ہونی چاہئے۔