میسورو : کیا بس اسٹاپ گنبد تنازعہ بی جے پی ایم پی اور بی جے پی ایم ایل اے کے درمیان پُرخاش کا نتیجہ ہے ؟

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 17th November 2022, 6:02 PM | ریاستی خبریں |

میسورو 17 / نومبر (ایس او نیوز)  پچھلے چند دنوں سے میسورو- اوٹی روڈ پر تعمیر شدہ بس شیلٹر کے اوپر بنے گنبد پر بی جے پی رکن پارلیمان پرتاپ سنہا کی طرف سے کھڑا کیا گیا تنازعہ  سرخیوں میں ہے ، کیونکہ بس شیلٹر پر بنے تین گنبدوں کو مسجد سے مشابہ قرار دیتے ہوئے رکن پارلیمان نے اسے نہ ہٹانے کی صورت میں خود ہی آگے بڑھ کر مسمار کرنے کی وارننگ دی ہے ۔

    دوسری طرف اس حلقہ سے بی جے پی کے رکن اسمبلی ایس اے رام داس نے  وضاحت کر دی ہے کہ " بس شیلٹر کے ڈیزائن کو غلط مفہوم دینے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔  اس  ڈیزائن کو میسورو پیلیس سے متاثر ہوکر تیار کیا گیا ہے ۔ اس تعلق سے سوشیل میڈیا پر جھوٹ پھیلایا جا رہا ہے   اور میں نے اس کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے  پولیس میں شکایت درج کروائی ہے ۔"

    رام داس نے اسی قسم کی دوسرے بس شیلٹرس کے فوٹو گرافس شیئر کرتے ہوئے مزید کہا کہ :" اوٹی روڈ پر بس شیلٹر کا ڈیزائن اس انداز میں پہلی مرتبہ نہیں بنایا گیا ہے ۔ اس قسم کے  بس شیلٹرس شہر کے دوسرے مقامات پر بھی موجود ہیں ۔ مگر اسی کو لے کر تنازعہ کھڑا کیا جا رہا ہے ۔"

    کانگریس کے ترجمان ایم لکشمن کا کہنا ہے کہ اس طرح کے تنازعات بی جے پی کے اندر آپسی جھگڑوں کی عکاسی کرتے  ہیں ، اور میسورو  اوٹی روڈ بس شیلٹر گنبد تنازعہ رکن پارلیمان پرتاپ سنہا کی پست فرقہ ورارانہ ذہینت ظاہر کرتا ہے ۔" 

    جانکاروں کا کہنا ہے کہ یہ تنازعہ رکن پارلیمان اور ایم ایل اے رام  داس کے درمیان پائی جانے والی پرانی رقابت ، پرخاش اور رنجش کا نتیجہ ہے ۔ دیکھا گیا ہے کہ بی جے پی کے ان دو سیاسی لیڈروں کے بیچ تکرار اور ایک دوسرے کی ہزیمت کرنے کے معاملے اکثر پیش آتے رہتے ہیں ۔ 

    اس بیچ ایم ایل اے رام داس کی شکایت پر تفتیشی پہلو سے توجہ دیتے ہوئے پولیس کمشنر ڈی رمیش نے اپنے سینئر پولیس افسران کے ساتھ مذکورہ بس شیلٹر پر پہنچ کر معائنہ کیا ۔ 

    سوشیل میڈیا پر ایک خبر بھی عام ہو رہی ہے کہ نیشنل ہائی وے اتھاریٹی نے اس بس شیلٹر کو غیر قانونی تعمیر قرار دیتے ہوئے اسے ہٹانے کے لئے میسورو سٹی کارپوریشن کے کمشنر اور کے آر آئی ڈی ایل کے ایگزیکٹیو انجینئر کو نوٹس جاری  کی ہے ۔ لیکن ایم سی سی اور کے آر آئی ڈی ایل کے افسران نے ایسی نوٹس موصول ہونے کی تردید کرتے ہوئے کہا ہے کہ :" این ایچ اے آئی کی طرف سے ہمیں کسی قسم کا نوٹس نہیں ملا ہے ۔"

    اسی دوران راتوں رات تنازعہ میں گھرے اس بس شیلٹر پر " جے ایس ایس کالج بس اسٹاپ" نام کا بورڈ لگ گیا ہے اور اس پر وزیر اعظم نریندرا مودی ، وزیر اعلیٰ بسوا راج بومئی اور ستور مٹھ کے شیوراتری راجیندرا سوامی کے تصاویر بنی ہوئی ہیں ۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ ایم پی پرتاپ سنہا کی طرف سے تنازعہ کھڑا کیے کے جانے کے بعد یہ بورڈ یہاں آویزاں کیا گیا ہے ۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک میں بی جے پی حکومت کے دوران ہندوؤں کا سب سے زیادہ قتل ہوا، یہی ان کا اصلی چہرہ ہے: سابق وزیر اعلیٰ سدارامیا

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ اور کانگریس لیڈر ایس سدارامیا نے منگل کے روز ریاست میں برسراقتدار بی جے پی پر زوردار حملہ کیا۔ انھوں نے بی جے پی پر الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ریاست میں بی جے پی حکومت میں سب سے زیادہ ہندوؤں کا قتل کیا گیا۔ انھوں نے کہا کہ ہمارے دور میں نہ صرف ہندو، ...

بی جے پی کے ریاستی صدر نلین کمار کٹیل کی بھٹکل آمد؛ آنے والے انتخابات کو لے کر کٹیل نے کہا؛ ساورکر اور ٹیپو نظریات کے درمیان ہوگا الیکشن

اس بار ریاستی انتخابات کانگریس اور بی جے پی کے بجائے ساورکر اور ٹیپو  نظریات کے درمیان ہوں گے۔ یہ بات  بی جے پی ریاستی یونٹ کے صدر نلین کمار کٹیل نے کہی۔ شرالی میں منعقدہ بی جے پی پروگرام میں شریک ہوتے ہوئے  کٹیل نے سوال کیا کہ آپ کو محب وطن ساورکرچاہئے  یا جنونی ٹیپو  چاہئے ...

 اڈانی کمپنی کے خُرد بُرد معاملہ پر کانگریس کا بنگلورو میں احتجاج

ریاست کرناٹک کے دارلحکومت بنگلورو کے میسور بینک سرکل پر کانگریس کی جانب سے اڈانی کمپنی سے جڑے معاملات پراحتتجاج کیاگیا جس میں پارٹی کے رہنما و کارکنان شریک تھے۔ احتجاج کے دوران کانگریس کے رہنماؤں نے کہا کہ راہل گاندھی نے پہلے ہی اس معاملہ سے متعلق پیشن گوئی کی تھی۔

منگلورو: نیشنل ایجوکیشن پالیسی 'ہندوتوا راشٹرا' بنانے کا ٹوُل کِٹ ہے؛ ماہر تعلیم ڈاکٹر نرنجنارادھیا 

کمیونسٹ پارٹی آف انڈیا کی آل انڈیا یوتھ فیڈریشن (اے آئی وائی ایف) جنوبی کینرا و اڈپی، سمدرشی ویدیکے منگلورو، کرناٹکا تھیولوجیکل ریسرچ انسٹی ٹیوٹ منگلورو کے اشتراک سے 'نیشنل ایجوکیشن پالیسی (این ای پی) اور اسکولی تعلیم' کے عنوان پر شہر میں منعقدہ  سیمینار میں اپنے خیالات کا ...

پتور: آپسی اختلافات بھول کر بی جے پی کو شکست دینے کے لئے متحد ہوجائیں - کانگریس پارٹی کارکنان سے لیڈروں کی اپیل 

کانگریس پارٹی لیڈران نے  پتور کے نیلیاڈی سے  ملناڈ اور ساحلی علاقے کے لئے اپنی 'پرجا دھونی یاترا' کا دوسرا مرحلہ شروع کرتے ہوئے اپنی کارکنان کو آواز دی کہ وہ آپسی اختلافات بھول کر بی جے پی کی  "بد عنوان، غیر فعال، غیر مخلص، غیر موثر اور عوام سے دور" حکومت کو ہٹانے کے لئے متحد ...