افریقی باشندوں پر لاٹھی چارج کا معاملہ:بنگلورو شہر کی پولیس نے صحیح کارروائی کی: بسواراج بومئی

Source: S.O. News Service | Published on 4th August 2021, 11:05 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،4؍ اگست(ایس او نیوز؍پی ٹی آئی)ریاستی وزیر اعلیٰ بسواراج بومئی نے جے سی نگر پولیس تھانے کے سامنے کئی افریقیوں کی جانب سے احتجاج پر پولیس کی جانب سے 2 اگست کو کی گئی کارروائی کا دفاع کیا ہے کانگوکے ایک باشندے کی حراست میں مبینہ موت کے خلاف افریقی باشندے احتجاج کر رہے تھے۔ ان پر پولیس نے لاٹھی چلائی تھی۔

اس کے بارے میں بات کرتے ہوئے بومئی نے کہا کہ ریاست میں افریقی باشندوں کی ایک بڑی تعداد بستی ہے۔ ان میں سے اکثر ویزا کی تاریخ ختم ہونے کے باوجود رہ رہے ہیں۔ ریاستی حکومت ایسے افراد کے خلاف سخت کارروائی کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا، ”منشیات فروشی زوروں پر ہو رہی ہے اور اس میں ملوث افراد کو گرفتار کیا جا رہا ہے۔ اس پر انہوں نے پرتشدد رویہ اختیار کیا اور اسی پولیس نے کارروائی کی۔ ان لوگوں نے غیر ضروری طور پر پولیس پر حملہ کیا تو پولیس نے صحیح طریقہ سے کارروائی کی۔“

وزیر اعلیٰ نے جو دہلی میں ہیں، اخبار نویسوں سے بات کرتے ہوئے کہاکہ حکومت نے گذشتہ دو سال کے دوران ریاست میں منشیات کی خرید وفرخت روکنے کے لئے کئی اخدامات کئے ہیں۔یاد رہے کل افریقی باشندوں نے پولیس حراست میں ایک ساتھی کی موت پر غصہ ہو کر شہر کے جے سی نگر پولیس تھانے کے سامنے احتجاج کیا تھا۔ انہوں نے نعرے بھی لگائے تھے کہ سیاہ فاموں کی زندگی بھی اہمیت رکھتی ہے۔ چند مظاہرین نے تو کاروں کے ذریعہ سڑک پر ٹرافک بھی جام کردیا تھا۔اس پر پولیس کو لاٹھی چلانی پڑی جس میں چند مظاہرین زخمی بھی ہوئے۔ اسی دوران پولیس نے بتایا کہ مہلوک جوئل کو ایم ڈی ایم اے نامی منشیات رکھنے کی وجہ سے گرفتار کیا گیا تھا۔اس کے مطابق 27 سالہ اس افریقی نے حراست میں رہتے سینے میں درد کی شکایت کی۔ اس پر اسے ایک نجی اسپتال لے جایا گیا جہاں مشتبہ طور پر قلب پر حملہ کی وجہ سے اس کی موت ہو گئی۔پولیس نے اس کے حراستی موت ہونے کی تردید کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بیلتنگڈی : ریاست میں لگی ہے غیر اعلان شدہ ایمرجنسی ۔ کانگریسی لیڈر وسنت بنگیرا کا الزام

مندروں کو منہدم کرنے کی ریاستی  پالیسی کے خلاف احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے سابق ایم ایل اے اور کانگریسی لیڈر وسنت بنگیرا نے الزام لگایا کہ حکومت کی طرف سے  ریاست میں غیر معلنہ ایمرجنسی نافذ کی گئی ہے جس کے چلتے احتجاجی مظاہرے منعقد کرنے میں رکاوٹ پیدا کی جارہی ہے ۔

بھٹکل : ضلع شمالی کینرا میں بجلی سربراہی کی مسئلہ پر وزیر توانائی کے ساتھ اراکین اسمبلی نے کی گفتگو

کرناٹکا ودھان سودھا میں اسپیکر وشویشورا ہیگڈے کاگیری اور ضلع شمالی کینرا انچارج وزیر شیورام ہیبار کی موجودگی میں کمٹہ، ہلیال اور بھٹکل کے اراکین اسمبلی نے وزیرتوانائی سنیل کمار سے ملاقات کی اور کاروار، انکولہ سرسی، ہوناوراور بھٹکل جیسے مقامات بجلی سربراہی سے متعلق مسائل ...

کرناٹک بی جے پی آر ایس ایس کی کٹھ پتلی، اسی کے حکم پر عمل کر رہی ہے: سدارمیا

  کرناٹک میں قائد حزب اختلاف  سدارمیانے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ بومئی سمیت پوری حکومت آر ایس ایس کی کٹھ پتلی کی طرح برتاؤ کر رہی ہے اور اسی کے حکم پر عمل کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرناٹک کے وزیر اعلیٰ بسوراج بومئی کو جمہوریت اور پارلیمانی نظام حکومت پر کوئی یقین نہیں ہے۔ انہوں نے ...

کرناٹک حکومت تیسری لہر کے لیے مستعد، 20 فیصد بیڈ بچوں کے لیے مختص

داکٹر سدھاکر نے بتایا کہ ماہرین پر مشتمل ٹیکنیکل ایڈوائزری کمیٹی کی تجویز پر بچوں کو کووڈ  کی ممکنہ تیسری لہر کے دوران زیادہ خطرے کے پیش نظر حکومت نے سرکاری اور نجی سطح پر 25870 آکسیجن سپورٹ بیڈ اور 502 پیڈیاٹرک وینٹی لیٹر تیار کیے ہیں۔

کرناٹک: ریاست کی 6 لاکھ ہیکڑ فوریسٹ زمین غریبوں میں تقسیم کی جائے گی : ودھان سبھا اجلاس میں ریاستی وزیر آر اشوک کا بیان؛ لیکن کیا حقیقت میں ایسا کرنا ممکن ہے ؟

ریاست کی 6لاکھ ہیکڑ فوریسٹ زمین کو دوبارہ روینیو محکمہ کو لوٹائی جائے گی اور متعلقہ زمین ریاست کے غریبوں کو دی جائے گی۔یہ بات ریاستی روینیو وزیر آر اشوک نے  ودھان سبھا اجلاس میں ایک سوال کے جواب میں کہی، مگر کیا حقیقیت میں چھ لاکھ ہیکٹر فوریسٹ زمین کو روینو کے حوالے کیا ...