میسورو: قاتلانہ حملے میں زخمی تنویر سیٹھ کی حالت ابھی خطرے سے باہر نہیں۔ ڈاکٹروں کابیان

Source: S.O. News Service | Published on 19th November 2019, 4:13 PM | ریاستی خبریں |

میسورو 18/نومبر (ایس اونیوز) شادی کی ایک تقریب میں شریک رکن اسمبلی تنویر سیٹھ پر جو قاتلانہ حملے میں زخمی ہوگئے تھے ان کا علاج کرنے والے کولمبیا ایشیاء اسپتال کے ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ ان کی حالت ابھی نازک بنی ہوئی ہے اور آئندہ 48گھنٹوں تک یقینی طور پر ان کی صحت کے بارے میں کچھ کہا نہیں جاسکتا۔

خیال رہے کہ تنویر سیٹھ جب شادی کی تقریب میں بیٹھے ہوئے تھے تو فرحان پاشاہ (۵۲سال) نامی شخص نے اچانک قصائیوں کے استعمال میں آنے والے چاپر سے گردن کے حصے پرحملہ کردیا تھا جسے بعد میں وہاں پر موجود لوگوں نے دبوچ کر پولیس کے حوالے کیا تھا۔اور زخمی تنویر سیٹھ کو فوری طور پر اسپتال میں منتقل کیا گیا تھا۔

کولمبیا ایشیاء ہاسپٹل کے ڈاکٹر اوپیندرا شینوئی نے بتایا کہ ”ان کے دماغ اور دل کو جوڑنے والی خون کی رگین اوردوسرے اعصاب کو گردن کے حصے میں نقصان پہنچا ہے۔ہم ان کا بلڈ شوگر اور بلڈ پریشر لیول نارمل سطح پر لانے کی کوشش کررہے ہیں۔ ان کے گردن بڑی حد تک کام کررہے ہیں۔ علاج کا مثبت اثر ہورہا ہے۔ پھر بھی آئندہ 48گھنٹوں تک کچھ کہنا مشکل ہے۔ا ن کو انتہائی نگہداشت میں رکھا گیاہے۔“

دوسری طرف پولیس نے بتایا کہ ملزم نے اقبال جرم کرتے ہوئے بتایا ہے کہ اس نے مایوسی اوراضطراب کی حالت میں یہ حملہ کیاتھا”ایم ایل اے کسی کے بھی کام نہیں آرہے تھے۔ کوئی ترقیاتی کام نہیں کررہے تھے۔اس لئے میں نے انہیں قتل کرنے کی ٹھان لی۔“لیکن پولیس یہ مان رہی ہے کہ ملزم کا یہ بیان مشکوک ہے۔ اس کے پیچھے اصل راز کیا ہے یہ جاننے کے لئے گہری تفتیش کی جارہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر سے ایس ڈی پی آئی کا مطالبہ

جنوبی کینرا بنٹوال تعلقہ کے سجی پانڈو دیہات میں ہر سال بارش کے موسم میں گزشتہ 30 برسوں سے لوگوں کو ہمیشہ  پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ یہ علاقہ اُلال کے رکن اسمبلی یوٹی قادر کے حلقہ میں آتا ہے اور یہاں مسلمانوں کی کثیر آباد ی ہے۔

منگلورو۔کاسرگوڈ سرحد پر مسافروں کیلئے پریشانی

ریاست میں گزشتہ ماہ اپریل سے ہی کورونا وائرس پھیلنے کے نتیجہ میں کیرالہ ۔ کرناٹک کی سرحد پر واقع کاسرگوڈ اور منگلورو کے درمیان روازنہ ملازمت اور تعلیم کے سلسلہ میں آنے جانے والے لوگوں کیلئے ہر دن نت نئی پریشانیوں کا سامنا کرناپڑرہا ہے۔

کرناٹک میں کووڈ۔19 کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں، مرکزی ٹیم کا چیف منسٹر و عہدیداروں کے ساتھ تبادلہ خیال؛ سری راملو کی پریس کانفرنس

کرناٹک نے منگل کے روز مرکز ی ٹیم کو بتایا کہ ریاست میں کووڈ۔19 کے کمیونٹی پھیلاؤ کا کوئی امکان نہیں ہے۔ریاستی وزیر صحت و خاندانی بہبود بی سری راملو نے میڈیا سے کہا ’’ ہم نے یہ واضح کردیا ہے کہ یہاں کمیونٹی پھیلاؤ کا امکان نہیں ہے۔ ہم ، دوسرے اور تیسرے مرحلہ کے درمیان ہیں‘‘۔

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری؛ پھر 1498 نئے معاملات، صرف بنگلور سے ہی سامنے آئے 800 پوزیٹیو

کرناٹک میں کورونا کا قہر جاری ہے اور ریاست  میں روز بروز کورونا کے معاملات میں اضافہ دیکھا جارہا ہے، ریاست کی راجدھانی اس وقت  کورونا کا ہاٹ اسپاٹ بنا ہوا ہے جہاں ہر روز  سب سے زیادہ معاملات درج کئے جارہے ہیں۔ آج منگل کو پھر ایک بار کورونا کے سب سے زیادہ معاملات بنگلور سے ہی ...

کورونا: ہندوستان میں ’کمیونٹی اسپریڈ‘ کا خطرہ، اموات کی تعداد 20 ہزار سے زائد

  ہندوستان میں کورونا انفیکشن کے بڑھتے معاملوں کے درمیان کمیونٹی اسپریڈ یعنی طبقاتی پھیلاؤ کا  اندیشہ بڑھتا نظر آرہا ہے۔ بالخصوص کرناٹک  میں کورونا انفیکشن کے کمیونٹی اسپریڈ کا اندیشہ ظاہر کیا جارہا ہے ۔ کرناٹک کے علاوہ گوا، پنجاب و مغربی بنگال کے نئے ہاٹ اسپاٹ بننے کے ...

منگلورو:گروپور میں منڈلارہا ہے مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ۔ قریبی گھروں کو کروایا گیاخالی۔ مکینوں میں مایوسی اور دہشت کا عالم

گروپور میں اتوار کے دن بنگلے گُڈے میں پہاڑی کھسکنے سے جہاں  تین  مکان زمین بوس اور دو بچے، صفوان (16سال) اور سہلہ (10سال) جاں بحق ہوگئے تھے وہاں پر مزید پہاڑی کھسکنے کا خطرہ لوگوں کے سر پر منڈلا رہا ہے۔