ممبئی میں موسلا دھار بارش، 38 مقامات پر پانی بھرگیا، ٹریفک جام سے عوام کو پریشانی

Source: S.O. News Service | Published on 4th July 2020, 11:48 AM | ملکی خبریں |

ممبئی،4؍جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) گزشتہ روز صبح ممبئی میں تین گھنٹوں تک جاری رہنے والی شدید بارش کے بعد کم سے کم 38 مقامات پر پانی بھرگیا، جس سے اندھیری اور سائن میں تین مقامات پر بڑے پیمانے پر ٹریفک جام ہوگیا اور ٹریفک کا رخ موڑنا پڑا۔ ممبئی ٹریفک پولیس کے ایڈیشنل کمشنر (اے سی پی)، پروین پڈوال نے کہا کہ ’’ممبئی کے 38 مقامات سے پانی بھرنے کی اطلاع ملی ہے۔ تین مقامات پر ٹریفک کا رخ موڑنا پڑاہے۔ ٹریفک (مضافات) کے پولیس ڈپٹی کمشنر (ڈی سی پی) سندیپ بھجی بھاکڑے نے کہا کہ ’’تیز بارش کی وجہ سےاندھیری سب وے دو فٹ پانی کے نیچے تھا۔ سب وے کو بند کرنا پڑا اور علاقے سے ٹریفک کا رخ موڑ دیا گیا۔ ٹریفک حکام نے بتایا کہ گول دیول، سائن روڈ، کنگز سرکل کے قریب گاندھی مارکیٹ، اور ہندماتامیں پانی بھرجانے کی اطلاع ہے۔

چرچ گیٹ جنکشن، النکار جنکشن، کھیت واڑی، ورلی ناکپ، دادر ٹرمینس، باندرہ بینڈ اسٹینڈ، نانا چوک، جے جے جنکشن، مہالکشمی مندر جنکشن، بھنڈی بازار، باندرہ ریلوے کالونی، اور کرلا میں آنند نگر کے قریب ٹریفک انتہائی سست رفتاری سے آگے بڑھ رہاتھا۔ ٹریفک پولیس ڈپٹی کمشنر (ڈی سی پی) سندیپ بھجی بھاکڑے نے مزید کہا کہ ملاڈ سب وے پر بھی ایک فٹ پانی بھرنے کی اطلاع موصول ہوئی ہے‘‘۔

ایک نظر اس پر بھی

بے لگام میڈیا پر جمعیۃ کی عرضی: جب تک عدالت حکم نہیں دیتی حکومت خود سے کچھ نہیں کرتی: چیف جسٹس

مسلسل زہر افشانی کرکے اور جھوٹی خبریں چلاکر مسلمانوں کی شبیہ کوداغدار اور ہندوؤں اورمسلمانوں کے درمیان نفرت کی دیوارکھڑی کرنے کی دانستہ سازش کرنے والے ٹی وی چینلوں کے خلاف داخل کی گئی

دہلی فسادات: پروفیسر اپوروانند کی حمایت میں سامنے آئے ملک و بیرون ملک کے دانشوران

 ملک اور بیرون ملک کے ایک ہزار سے زائد معروف دانشوروں، نوکر شاہوں، صحافیوں، مصنفوں، ٹیچروں او اسٹوڈنٹس نے دہلی یونیورسٹی کے پروفیسر اپوروانند سے مشرقی دہلی میں فسادات کے معاملے میں پوچھ گچھ کئے جانے اور انکا موبائل فون ضبط کرنے کے واقعہ کی شدید مذمت کی ہے اور پولیس کے ذریعہ ...

کالعدم چینی کمپنیوں سے بی جے پی کے گہرے رشتے ہیں: کانگریس

 کانگریس نے الزام عائد کیا ہے کہ حکومت نے قومی سلامتی کے لیے خطرہ بتاتے ہوئے جن چینی کمپنیوں پر پابندی لگائی ہے ان میں سے کئی کے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) سے گہرے رشتے ہیں اور گزشتہ عام انتخابات میں ان کمپنیوں نے اس کے لیے تشہیری مہم کا کام کیا تھا۔

ریا چکرورتی کا سوشانت کے ساتھ جڑنے کا واحد مقصد ان کی جائیداد ہڑپنا تھا: بہار پولیس کا حلف نامہ

 بہار پولیس نے اداکار سوشانت سنگھ راجپوت کی مبینہ خودکشی کے معاملے میں سپریم کورٹ میں دائر حلف نامے میں کہا کہ کلیدی ملزمہ ریا چکرورتی اور اس کے اہل خانہ کا اداکار کے ساتھ جڑنے کا واحد مقصد اس کی جائیداد ہڑپنا تھا۔