ممبئی میں موسلا دھار بارش، 38 مقامات پر پانی بھرگیا، ٹریفک جام سے عوام کو پریشانی

Source: S.O. News Service | Published on 4th July 2020, 11:48 AM | ملکی خبریں |

ممبئی،4؍جولائی (ایس او نیوز؍ایجنسی) گزشتہ روز صبح ممبئی میں تین گھنٹوں تک جاری رہنے والی شدید بارش کے بعد کم سے کم 38 مقامات پر پانی بھرگیا، جس سے اندھیری اور سائن میں تین مقامات پر بڑے پیمانے پر ٹریفک جام ہوگیا اور ٹریفک کا رخ موڑنا پڑا۔ ممبئی ٹریفک پولیس کے ایڈیشنل کمشنر (اے سی پی)، پروین پڈوال نے کہا کہ ’’ممبئی کے 38 مقامات سے پانی بھرنے کی اطلاع ملی ہے۔ تین مقامات پر ٹریفک کا رخ موڑنا پڑاہے۔ ٹریفک (مضافات) کے پولیس ڈپٹی کمشنر (ڈی سی پی) سندیپ بھجی بھاکڑے نے کہا کہ ’’تیز بارش کی وجہ سےاندھیری سب وے دو فٹ پانی کے نیچے تھا۔ سب وے کو بند کرنا پڑا اور علاقے سے ٹریفک کا رخ موڑ دیا گیا۔ ٹریفک حکام نے بتایا کہ گول دیول، سائن روڈ، کنگز سرکل کے قریب گاندھی مارکیٹ، اور ہندماتامیں پانی بھرجانے کی اطلاع ہے۔

چرچ گیٹ جنکشن، النکار جنکشن، کھیت واڑی، ورلی ناکپ، دادر ٹرمینس، باندرہ بینڈ اسٹینڈ، نانا چوک، جے جے جنکشن، مہالکشمی مندر جنکشن، بھنڈی بازار، باندرہ ریلوے کالونی، اور کرلا میں آنند نگر کے قریب ٹریفک انتہائی سست رفتاری سے آگے بڑھ رہاتھا۔ ٹریفک پولیس ڈپٹی کمشنر (ڈی سی پی) سندیپ بھجی بھاکڑے نے مزید کہا کہ ملاڈ سب وے پر بھی ایک فٹ پانی بھرنے کی اطلاع موصول ہوئی ہے‘‘۔

ایک نظر اس پر بھی

مودی حکومت سے کانگریس کے 4 سوال

زرعی قوانین کے خلاف کسانوں نے آج دہلی میں بڑے پیمانے پر ’ٹریکٹر پریڈ‘ نکالی، لیکن اس درمیان کچھ مقامات پر تشدد اور توڑ پھوڑ کے واقعات سے کسانوں کی تحریک میں بدنما داغ بھی لگ گیا۔

اتر پردیش: دیوریا میں سماجوادی پارٹی کارکنان کو ’ٹریکٹر ریلی‘ نکالنے سے روکا گیا

تر پردیش کے دیوریا میں یوم جمہوریہ کے موقع پر کسان تحریک کی حمایت میں ٹریکٹر ریلی نکالنے والے سماجوادی پارٹی کارکنان کو پولس نے روک دیا۔ تحصیل اے ہیڈ کوارٹر میں سماجوادی پارٹی کارکنان ٹریکٹروں پر ترنگا لگا کر کسانوں کی حمایت میں ریلی نکال رہے تھے، لیکن ضلع انتظامیہ نے مستعدی ...

یوم جمہوریہ پر’جمہوریت‘ کی فکر ضروری: مایاوتی

کسان تحریک کا براہ راست ذکر کیے بغیر بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) سپریمو مایاوتی نے کہا کہ یوم جمہوریہ کو محض رسم ادائیگی کے بطور منانے کے بجائے غریب، کمزور، کسان اور محنت کش افراد کی زندگی اور ان کے گذر بسر کا جائزہ لینا چاہیے۔

کسانوں نے لال قلعہ پر اپنا جھنڈا لہرایا

کسانوں کی ٹریکٹر ریلی کے دوران مکربا چوک، ٹرانسپورٹ نگر، آئی ٹی او اوراکشردھام سمیت دیگرمقامات پر ہوئے تصادم کے درمیان کسانوں کا ایک جتھا لال قلعہ احاطے میں پہنچ کر کسانوں کا جھنڈا لہرادیا ہے۔

تشدد کسی مسئلے کا حل نہیں:راہل گاندھی

کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے یوم جمہوریہ کے موقع پر قومی دارالحکومت دہلی میں کسان تحریک کے دوران ہوئے تشدد کے درمیان زراعت سے متعلق تینوں قانونوں کو واپس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ تشدد کسی مسئلے کا حل نہیں ہے اور اس سے نقصان ملک کا ہی ہوتا ہے۔