کرناٹک میں کورونا وائرس کے 141 نئے کیس ، ایک اور موت ، بنگلورو میں سب سے زیادہ 33 معاملہ، ایک ہی خاندان سے 20 افراد متاثرین میں شامل 

Source: S.O. News Service | Published on 31st May 2020, 12:01 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،31؍مئی (ایس او نیوز) کرناٹک میں کورونا وائرس سے متاثر ہونے والی ایک اور خاتون کی موت کے ساتھ ریاست میں اب تک اس وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 49 تک پہنچ چکی ہے۔ جبکہ 141 نئے متاثرین کی نشاندہی کے ساتھ کرناٹک میں جملہ متاثرین کی تعداد 2922 تک پہنچ گئی ہے۔

ریاست کے مختلف اضلاع سے جو 141 کیس سامنے آئے ان میں سے 90 ؍ افراد ایسے ہیں جو دیگر ریاستوں سے کرناٹک لوٹے ہیں۔ بنگلورو اربن میں سب سے زیادہ 33 معاملے سامنے آئے ۔ اس کے علاوہ یادیگر سے 18، دکشن کنڑا سے 14، اُڈپی سے 13، ہاسن سے 13 ، وجئے پور سے 11، شیموگہ سے 6، کلبرگی سے 2 ، بیلگاوی سے 1، داونگیرے سے 4، بیدر سے 10 ، میسورو سے 2، اُتر کنڑا سے 2 دھارواڑ سے 2 ، چترادرگہ سے 1، ٹمکوروسے 1، کولار سے 3، بنگلورو رورل سے 1، ہاویری سے 4 کیس سامنے آئے ہیں۔ بنگلورو میں 20 کیس ایسے ہیں جو ایک ہی خاندان سے متعلق ہیں۔ بیدر میں ایک 47 سالہ خاتون کی موت ہوگئی۔ اسے سانس لینے میں تکلیف کے سبب ضلع اسپتال میں داخل کروایا گیا جہاں وہ کورونا وائرس سے متاثر پائی گئی ۔

ہفتہ کے روز کورونا وائرس سے صحت یاب ہو کر اسپتال سے 103 افراد رخصت ہوئے ۔ ان میں بنگلورو کے فریزر ٹاؤن پولیس تھانے سے جڑا ٹرافک پولیس کانسٹیبل بھی شامل ہے۔ کلبرگی سے 43 ، بنگلورو سے 23 ، داونگیرے سے 20، کولار سے 5، باگل کوٹ سے 3، بیدر سے 3 افراد صحت یاب ہوکر آئیسولیشن سینٹرسے رخصت ہوئے۔ریاست میں مزید 1874 افراد اسپتالوں میں زیر علاج ہیں، ان میں سے 15 افراد کی حالت نازک ہے اور وہ آئی سی یو میں ہیں۔ ریاست بھر میں اب تک 2.80 لاکھ افراد کا کووڈ ٹیسٹ کیا گیا ہے جن میں سے 2922 متاثر پائے گئے ہیں۔ اس طرح آبادی کے تناسب سے جانچ کی بنیاد پر جو اوسط بنا ہے وہ ایک فیصد سے تھوڑا زیادہ کا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورو میں ایک ہفتہ طویل لاک ڈاؤن، سڑکیں سنسان، راستوں سے سواریاں غائب

بنگلورو میں جہاں ایک ہفتہ طویل لاک ڈاؤن نافذ کردیا گیا ہے، سڑکیں  سنسان رہیں اور راستوں پر لوگوں کی نقل و حرکت بھی بہت کم رہی۔ کورونا وائرس کیسس میں اضافہ کے پیش نظر حکومت کرناٹک نے مذکورہ لاک ڈاؤن نافذ کیا ہے۔

مینگلور : دکشن کنڑا میں ایک ہفتہ تک جاری رہنے والے لاک ڈاون کا آج سے ہوا نفاذ، راستے سنسان، دکانیں بند، عام زندگی مفلوج

کورونا کے بڑھتے معاملات اور روز بروز اضافہ کو دیکھتے ہوئے  ایک ہفتہ طویل لاک ڈاون کا آج  سے مینگلور سمیت دکشن کنڑا ضلع میں نفاذ عمل میں آیا جس کے دوران شہر کی سڑکیں سنسان اور بہت زیادہ چہل پہل والے علاقوں میں بھی سناٹا نظر آیا۔ 

بنگلورکے ساتھ ساتھ ساحلی کرناٹکا میں کورونا کا قہر جاری؛ اُترکنڑا میں 76 معاملات؛ بھٹکل میں پھر ایک شخص کی موت

ریاست کرناٹک بالخصوص بنگلور میں کورونا کا قہر جاری ہے مگر ساحلی کرناٹکا میں بھی کورونا کے معاملات رُکنے کا نام نہیں لے رہے ہیں، ایک طرف آج ضلع اُترکنڑا میں کورونا کے 76 معاملات سامنے آئے تو وہیں پڑوسی ضلع اُڈپی میں 52 اور دکشن کنڑا میں 76 پوزیٹیو کیسس کی تصدیق ہوئی ہے۔

بھٹکل میں کورونا مریضوں کی تعداد میں اضافے سے خوف زدہ ہونے کی ضرورت نہیں۔معمولی علامات پر جانچ کروانے ڈپٹی کمشنر کی ہدایت 

ضلع اُترکنڑا کے  ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر ہریش کمار نے عوام سے اپیل کی  کہ بھٹکل میں کورونا مریضوں کی بڑھتی ہوئی تعداد کو دیکھ کر گھبرانے یا خوف کھانے کی ضرورت نہیں ہے، بلکہ کورونا پر قابو پانے کے لئے اس کی علامات ظاہرہوتے ہی  اس کا علاج کرنے کی ضرورت ہے۔ بھٹکل میں کورونا کے بڑھتے ...