دہلی میں کورونا کا قہر جاری، لیفٹیننٹ گورنر کے دفتر میں 13 ملازمین پازیٹو

Source: S.O. News Service | Published on 2nd June 2020, 8:26 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،2؍جون (ایس او نیوز؍ایجنسی) دہلی میں کورونا وائرس کا قہر جاری ہے۔ کورونا وائرس لیفٹیننٹ گورنر انل بیجل کے دفتر تک پہنچ گیا ہے۔ ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق دہلی کے لیفٹیننٹ گورنر کے دفتر میں 13 افراد کورونا پازیٹو ملے ہیں۔ یہ جانکاری منگل کی صبح سامنے آئی ہے جس کے بعد لوگوں میں دہشت مزید بڑھ گئی ہے۔

قابل ذکر ہے کہ پیر کے روز دہلی پولس کے ایک ڈی سی پی بھی کووڈ-19 انفیکشن کے شکار پائے گئے تھے۔ دہلی میں روزانہ اوسطاً ایک ہزار سے زیادہ لوگ اس کورونا کی زد میں آ رہے ہیں۔ حالانکہ وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے دہلی میں کورونا کی بڑھتی تعداد پر فکر ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سے گھبرانے کی ضرورت نہیں ہے کیونکہ دہلی میں اس کے لیے پورے انتظام کیے گئے ہیں۔

بہر حال، مرکزی وزارت صحت کی جانب سے جاری تازہ رپورٹ کے مطابق ہندوستان میں گزشتہ 24 گھنٹے کے اندر کورونا کے 8171 نئے کیس سامنے آئے ہیں اور 204 لوگوں کی موت ہو گئی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ملک میں کل کورونا مریضوں کی تعداد 198706 ہو گئی ہے۔ ان میں 97581 کیس سرگرم ہیں اور اب تک 95526 لوگوں کو ڈسچارج کیا جا چکا ہے۔ کورونا کی زد میں آ کر ملک میں اب تک 5598 لوگوں کی جان جا چکی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

معروف عالم دین اور جمعیۃ علما ہند کے نائب صدر مولانا امان اللہ قاسمی کا انتقال

 کوہ کن کے معروف عالم دین اور جمعیۃ علما ء ہند کے نائب صدر مولانا امان اللہ قاسمی نے سنیچر کے روز مختصر علالت کے بعد 84 سال کی عمر میں داعی اجل کو لبیک کہہ دیا۔ موصوف قدیم دینی و علمی درسگاہ دار العلوم حسینیہ شری وردھن ضلع رائے گڑھ (مہاراشٹرا) کے مہتمم بھی تھے۔

’کیا چین کا ہندوستانی سرزمین پر قبضہ نہیں ہے؟ مودی جی کو بتانا چاہیے‘

 کانگریس نے کہا ہے کہ چین نے وادی گلوان میں ہندوستانی حدود میں دراندازی کی ہے اور اس کے فوجی دستے ملک کے اسٹریٹجک نقطہ نظر سے متعدد اہم علاقوں میں تعینات ہیں، اس لیے اب وزیر اعظم نریندر مودی کو یہ بتانا چاہiے کہ کیا چین کا ہندوستانی سرزمین پر قبضہ نہیں ہے۔