سرکاری ایجنسیوں سے زیادہ میڈیا مجھے ہراساں کررہاہے: ڈی کے شیوکمار 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th September 2018, 9:26 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،10؍ستمبر(ایس اونیوز) ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ڈی کے شیوکمار نے مرکزی ایجنسیوں کی طرف سے انہیں گرفتار کئے جانے کے متعلق خبروں پر اپنی سخت برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ ایسی خبروں سے انہیں ہراساں کئے جانے کا انہیں خوف نہیں ہے۔

دہلی میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ دہلی میں ان کے تین گھر ہیں ان تینوں میں کسی گھر میں وہ رہیں گے ایجنسیوں کے پاس اگر ایسا کوئی ثبوت ہے جس کی بنیاد پر انہیں گرفتار کیا جاسکتاہے تو کسی بھی وقت انہیں گرفتار کرسکتی ہیں۔انہوں نے کہا کہ قانون کے دائرے میں رہ کر ایجنسیاں جوکرنا چاہتی ہیں کرلیں۔اس کا وہ قانون کے مطابق جواب دینے کے لئے ہمہ وقت تیار ہیں۔

ڈی کے شیوکمار نے کہاکہ انفورسمنٹ ڈائرکٹوریٹ یا انکم ٹیکس افسروں کی طرف سے اب تک انہیں ذاتی طور پر کبھی ہراساں نہیں کیا گیا، لیکن اس سلسلے میں بی جے پی کے مختلف حلقوں اور بعض ذرائع ابلاغ میں جس طرح کی خبریں عام کی جاتی ہیں وہ انہیں تکلیف کا باعث بنی ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ملک میں کس سیاست دان کے خلاف کتنے کیس درج ہوئے اور ان پر کیا کارروائی ہوئی اس سے وہ بخوبی واقف ہیں۔ اس میدان کے وہ پرانے کھلاڑی ہیں اسی لئے کسی کو اگر یہ گمان ہے کہ ایجنسیوں کا نام لے کر انہیں ڈرایا دھمکایا جاسکتا ہے تو وہ اس کی خام خیالی ہوگی۔ انہوں نے کہاکہ دہلی میں انہوں نے کسی وکیل سے بھی ملاقات نہیں کی بلکہ بارہا کہہ چکے ہیں کہ کسی بھی ایجنسی کی طرف سے جانچ کی جائے تو اس کا سامنا کرنے وہ خود تیار ہیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کانگریس لوک سبھا انتخابات کی تیاریوں میں مصروف، جے ڈی ایس سے اتحاد کی صورت میں کانگریس آٹھ حلقے چھوڑنے پر آمادہ

ریاست کی مخلوط حکومت کو گرانے کے لئے بی جے پی کی طرف سے بارہا کئے گئے آپریشن کمل کی ناکامی نے اب کانگریس کو لوک سبھا انتخابات کی تیاریوں کے لئے راحت کی سانس لینے کا موقع فراہم کیا ہے۔

بنگلورومیں ایر و انڈیا ایر شو ، غیر معمولی حفاظتی انتظامات ،ٹریفک کی نگرانی کے لئے منصوبہ تیار

شہر گلستان بنگلو رمیں 20فروری سے ایرو انڈیا 2019 کاآغاز سخت سکیورٹی کے درمیان ہونے جارہا ہے۔ جموں وکشمیر میں پلوامہ حملے کے بعد ملک بھر میں بڑی ہوئی چوکسی کے درمیان اس شو کی شروعات ہورہی ہے۔

بی بی ایم پی کے بجٹ میں فلاحی اسکیموں اور ترقیاتی منصوبوں کی بھرمار، اثاثہ ٹیکس کے لئے 3500کروڑ کی آمدنی کا نشانہ 

برہت بنگلور مہانگر پالیکے میں آج 2019-20 کا بجٹ پیش کیاگیا۔ جس میں سماج کے کمزور طبقات اور غریبوں پر توجہ دینے کے ساتھ متوسط طبقے اور خواتین کے لئے بھی فلاحی اسکیمیں لاگو کرنے کا اعلان ہوا۔