پوکسو معاملوں سے نپٹنے وکلا کو خصوصی تربیت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 27th August 2018, 11:02 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،27؍اگست(ایس او نیوز) بچوں پر مظالم کے انسداد کے لئے ریاستی حکومت کی طرف سے منظور کردہ پوکسو قانون کے تحت جو بھی مقدمات درج کئے جارہے ہیں ان سے نپٹنے کے لئے ریاستی حکومت کی طرف سے صوبائی اور ضلعی سطحوں پر وکلاء کو خصوصی تربیت سے آراستہ کیا جائے گا، یہ بات آج نائب وزیر اعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور نے کہی۔

ودھان سودھا میں پوکسو معاملوں سے نپٹنے کے لئے ضلع اور تعلقہ سطحوں کے سرکاری وکیلوں کے لئے منعقدہ کارگاہ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ ضلعی سطح پر وکلاء کو سینئر وکیلوں کے ذریعے پوکسو قانون کے مختلف حصوں اور دفعات کے متعلق جانکاری کے لئے تربیت کا اہتمام کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ پوکسو سے جڑے معاملوں سے نپٹنے میں بیشتر اوقات ضلعی وکیلوں کی طرف سے مناسب پیروی نہیں ہوپارہی ہے، جس کی وجہ سے ایسے سنگین جرائم میں ملوث ملزم آسانی سے بچ نکل جاتے ہیں ، آنے والے دنوں میں ایسی صورتحال پیدا نہ ہونے پائے اس کے لئے امیدواروں کو خصوصی تربیت سے آراستہ کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ بچوں پر مظالم روکنے کے بنیادی مقصد سے پوکسو قانون کا نفاذ عمل میں لایا گیا ہے۔ لیکن اس قانون کو عملی شکل دینے میں اکثر ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ انہوں نے کہاکہ فی الوقت پوکسو کے تحت جتنے بھی معاملے درج ہیں پندرہ دنوں کے اندر ان پر نظر ثانی کی جائے گی اور یہ کوشش کی جائے گی ان معاملوں کو ذاتی دلچسپی سے نپٹایا جائے۔ اس موقع پر ریاستی پولیس کی ڈائرکٹر جنرل نیلا منی راجو ، محکمۂ داخلہ کے چیف سکریٹری رجنیش گوئل اور دیگر اعلیٰ پولیس عہدیدار موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

ایڈی یورپا کو پارٹی ہائی کمان کی تنبیہ۔ وزارتی قلمدان تقسیم کرو یا پھر اسمبلی تحلیل کرو

عتبر ذرائع سے ملنے والی خبر کے مطابق بی جے پی ہائی کمان نے وزیراعلیٰ کرناٹکا ایڈی یورپا کو تنبیہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزارتی قملدانوں سے متعلق الجھن اور وزارت سے محروم اراکین اسمبلی کے خلفشار کو جلد سے جلد دور کرلیں ورنہ پھر اسمبلی کو تحلیل کرتے ہوئے از سرِ نو انتخابات کا سامنا ...

اے پی سی آر نے داخل کی انسداددہشت گردی قانون میں ترمیم کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل

مرکزی حکومت نے انسداد دہشت گردی قانون یو اے پی اے میں جو حالیہ ترمیم کی ہے اور کسی بھی فرد کو محض شبہات کی بنیاد پر دہشت گرد قرار دینے کے لئے تحقیقاتی ایجنسیوں کو جو کھلی چھوٹ دی ہے اسے چیلنج کرتے ہوئے ایسوسی ایشن فار  پروٹیکشن آف سوِل رائٹس (اے پی سی آر) نے سپریم کورٹ میں اپیل ...

ریاستی حکومت نے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ سی بی آئی کے حوالے کیا

ریاست کی سابقہ کانگریس جے ڈی ایس حکومت کے دور میں کی گئی مبینہ ٹیلی فون ٹیپنگ کی سی بی آئی جانچ کے ا حکامات صادر کرنے کے دودن بعد ہی آج ریاستی حکومت نے کروڑوں روپیوں کے آئی ایم اے فراڈ کیس کی جانچ سی بی آئی کے سپرد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔