ہندوستان میں وی آئی پی کلچر میں کمی لانے کی ضرورت:پاریکر

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 21st April 2017, 3:18 AM | ملکی خبریں |

 پنجی:20/اپریل (اہس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)گوا کے وزیر اعلی منوہر پاریکر نے کہا کہ ہندوستان میں وی آئی پی کلچر میں کمی لانے کی ضرورت ہے۔وزیر اعظم اور صدر کے علاوہ دیگر لوگوں کی وی آئی پی سیکورٹی کو زیادہ توسیع نہیں دی جانی چاہیے۔یہ پوچھے جانے پر کہ کیا گوا میں بی جے پی کی قیادت والی مخلوط حکومت مرکز کے لال بتی سے دور رہنے کے فیصلے کی پیروی کرے گی؟ پاریکر نے پہلے کہا کہ ان کو اس طرح کے فیصلے کے بارے میں علم نہیں ہے، لیکن انہوں نے اپنی گاڑی پر لگی لال بتی کو میڈیا کو دینے کی پیشکش کی۔انہوں نے کہا کہ میرا خیال ہے کہ وی آئی پی کلچر کو کم کرنا چاہیے، وی آئی پی کلچر غلط چیز ہے جو اس ملک میں چل رہا ہے۔سیکورٹی ایک طرح کی ذہنیت ہے، ملک کی ریڑھ کے لیے ریڑھ کی ہڈی صدر، وزیر اعظم کے علاوہ ہمیں غیر ضروری سیکورٹی پر وقت ضائع کرنے کی ضرورت نہیں ہے، اس پر میرا نقطہ نظر صاف ہے۔یہ پوچھے جانے پر کیا وہ وزیر اعظم نریندر مودی کے بدھ کو کابینہ کی میٹنگ میں لئے گئے فیصلے کے بعد لال بتی ہٹانے پر عمل کرنے کو تیار ہیں؟ پاریکر نے کہا کہ انہیں اس طرح کے کسی فیصلے کے بارے میں علم نہیں ہے، لیکن بعد میں انہوں نے کہا کہ اگر یہ ریاستی حکومت کو بھیجا جاتا ہے تو وہ مرکزی حکومت کی ہدایت کو نافذ کریں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

تسلیم الدین کی سیاسی ضد کوجنتادل راشٹر وادی سلام کرتی ہے؛اپنی شرطوں پر ہی سیاست کر مسلم قیادت کو ابھارا جا سکتا ہے:اشفاق رحمن

جنتادل راشٹر وادی نے ایم پی محمد تسلیم الدین کے انتقال پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔ پارٹی کے کنوینر اور جواں سال مسلم رہنماء اشفاق رحمن نے کہا ہے کہ تسلیم الدین جیسی شخصیت ہندوستانی سیاست میں صدیوں میں پیدا ہوتی ہے،

بٹلہ ہاؤس فرضی انکاؤنٹر کی منصفانہ جانچ کی مانگ کو لے کر سماجی تنظیموں کا کینڈل مارچ

بٹلہ ہاؤس فرضی انکاؤنٹر کی مخالفت میں اور اس منصفانہ جانچ اور کارروائی کی مانگ کو لے کر کئی سماجی تنظیموں نے مل کرراشٹریہ ساماجک کاریہ کرتا سنگٹھن کے صدر محمدآفاق کی قیادت میں حضرت گنج ناویلٹی سنیما چوراہے سے جی پی او واقع گاندھی مجسمہ تک کینڈل مارچ نکالا ۔

بہار سیلاب متاثرین کی بازآباد کاری کے لئے دل کھول کر تعاون کریں :قاری عبد الرشید حمیدی

جمعیۃ علماء ہند کے صدر مولانا سید ارشد مدنی دامت برکاتہم کی دعوت پر لبیک کہتے ہوئے صوبہ مہاراشٹر میں جمعیہ علماء کی تمام اکائیوں نے منظم انداز میں بہار سیلاب متاثرین کے لئے راحت رسانی اور ریلیف کاکام سرگرمی کے ساتھ جاری رکھا ہے ۔