ہندوستان میں وی آئی پی کلچر میں کمی لانے کی ضرورت:پاریکر

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 21st April 2017, 3:18 AM | ملکی خبریں |

 پنجی:20/اپریل (اہس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)گوا کے وزیر اعلی منوہر پاریکر نے کہا کہ ہندوستان میں وی آئی پی کلچر میں کمی لانے کی ضرورت ہے۔وزیر اعظم اور صدر کے علاوہ دیگر لوگوں کی وی آئی پی سیکورٹی کو زیادہ توسیع نہیں دی جانی چاہیے۔یہ پوچھے جانے پر کہ کیا گوا میں بی جے پی کی قیادت والی مخلوط حکومت مرکز کے لال بتی سے دور رہنے کے فیصلے کی پیروی کرے گی؟ پاریکر نے پہلے کہا کہ ان کو اس طرح کے فیصلے کے بارے میں علم نہیں ہے، لیکن انہوں نے اپنی گاڑی پر لگی لال بتی کو میڈیا کو دینے کی پیشکش کی۔انہوں نے کہا کہ میرا خیال ہے کہ وی آئی پی کلچر کو کم کرنا چاہیے، وی آئی پی کلچر غلط چیز ہے جو اس ملک میں چل رہا ہے۔سیکورٹی ایک طرح کی ذہنیت ہے، ملک کی ریڑھ کے لیے ریڑھ کی ہڈی صدر، وزیر اعظم کے علاوہ ہمیں غیر ضروری سیکورٹی پر وقت ضائع کرنے کی ضرورت نہیں ہے، اس پر میرا نقطہ نظر صاف ہے۔یہ پوچھے جانے پر کیا وہ وزیر اعظم نریندر مودی کے بدھ کو کابینہ کی میٹنگ میں لئے گئے فیصلے کے بعد لال بتی ہٹانے پر عمل کرنے کو تیار ہیں؟ پاریکر نے کہا کہ انہیں اس طرح کے کسی فیصلے کے بارے میں علم نہیں ہے، لیکن بعد میں انہوں نے کہا کہ اگر یہ ریاستی حکومت کو بھیجا جاتا ہے تو وہ مرکزی حکومت کی ہدایت کو نافذ کریں گے۔

ایک نظر اس پر بھی

الیکشن کمشنر کو ملا کرارا جواب، نقوی بولے جیتنے کے لئے لڑتے ہیں انتخابات;الیکشن کمیشن کااشارہ بی جے پی کو سمجھنا چاہئے: کانگریس

الیکشن کمشنر او پی راوت کے بیان پر جمہوریت میں منصفانہ انتخابات اور سیاسی جماعتوں کی فتح کے بارے میں وزیر مختار عباس نقوی سے ان کی رائے کو جاننے کی کوشش کی۔ نقوی نے بات

22 دنوں سے سیلاب کا قہرجھیل رہی ہے بہار کی عوام، لالونے نتیش کو بتایا ناکام؛ مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر ہوگئی 119

بہار میں سیلاب کی تباہی جاری ہے، روزانہ متاثرین کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔ ریاست سے آنے والی رپورٹوں کے مطابق، بہار میں سیلاب میں بہت زیادہ تباہی ہوئی ہے، جہاں ہلاک ہونے