تلنگانہ: ووٹنگ سے پہلے گاڑی سے ملے 3 کروڑروپے، ووٹروں میں بانٹنے کی تھی تیاری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th December 2018, 8:58 PM | ملکی خبریں |

حیدرآباد،06؍ دسمبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) تلنگانہ میں جمعہ کو ہونے والے انتخابات سے ایک دن پہلے الیکشن کمیشن اور ورنگل ضلع انتظامیہ کی مشترکہ کارروائی میں ایک امیدوار کی گاڑی سے 3 کروڑ روپے سے زیادہ نقد ضبط کی گئی ہے۔وارنگل پولیس نے وردھاناپیٹ اسمبلی سے ان پیسوں کو گاڑیوں کی چیکنگ کے دوران برآمد کیا ہے۔پولیس کے مطابق برآمد کی گئی رقم ووٹروں کے درمیان تقسیم کرنے کے لئے کہیں لے جایا جا رہا تھا لیکن اس سے پہلے ہی پولیس نے قبضہ کر لیا۔اس کارروائی کے بعد وارنگل کے پولیس کمشنر ویروندر نے کہا کہ 3 کروڑ روپے سے زیادہ نقدی کو تلنگانہ کی وردھاناپیٹ اسمبلی میں تقسیم کرنے کے لئے ایک گاڑی سے لے جایا جا رہا تھا۔ کمشنر نے کہا کہ پولیس کو اس بات کے ثبوت ملے ہیں کہ یہ پیسے یہاں تلنگانہ جن سمیٹی کے امیدوار پی دیویا کی جانب سے بھیجے گئے تھے جسے دیکھتے ہوئے محکمہ الیکشن کمیشن کے افسروں کے ساتھ اس کی کارروائی کر رہا ہے۔ غور طلب ہے کہ تلنگانہ میں جمعہ کو اسمبلی انتخابات کے لئے ووٹنگ کرائی جانی ہے۔جمعہ کو ہونے والے پولنگ سے پہلے الیکشن کمیشن نے یہاں ووٹنگ کی ساری تیاریاں مکمل کر لی ہیں۔تلنگانہ میں ووٹنگ سے پہلے جمعرات ہی حیدرآباد سمیت دیگر ریاستوں میں گاڑیوں کی چیکنگ کی جا رہی ہے۔اس کے علاوہ پولنگ کو پُر امن طریقے سے کرانے کے لیے ریاست میں سخت حفاظتی انتظامات بھی کئے گئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

سرمائی سیشن میں رافیل اور آر بی آئی کی خودمختاری کامسئلہ اٹھایاجائے گا:غلام نبی آزاد

کانگریس کے سینئر لیڈر غلام نبی آزاد نے پیر کو کہا کہ پارلیمنٹ کے سرمائی اجلاس میں رافیل طیارے سودے کی تحقیقات کے لئے مشترکہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی)کے قیام کا مطالبہ اور ریزرو بینک کی خود مختاری اور جانچ ایجنسیوں کے مبینہ غلط استعمال سمیت کئی دیگر مسائل اٹھائے جائیں گے ۔

مودی حکومت غیر قانونی طریقے سے سوچھ توانائی کے پیسے کوکہیں اورلگارہی ہے: سیتا رام یچوری

کمیونسٹ پارٹی (سی پی ایم)کے سیکریٹری جنرل سیتا رام یچوری نے پیر کو الزام لگایا کہ مرکز کی بی جے پی حکومت ریاستوں کو جی ایس ٹی میں ان کے حصے کی ادائیگی کے لئے سوچھ توانائی فنڈ کی رقم غیر قانونی طور پر استعمال کر رہی ہے۔

اقلیتی تعلیمی پروگرام میں آندھرا پولیس کے ذریعہ زیادتی کی پاپولر فرنٹ نے کی مذمت

پاپولر فرنٹ آف انڈیا کے جنرل سکریٹری ایم محمد علی جناح نے آندھرا پردیش میں پاپولر فرنٹ کے ایک تقسیمِ اسکالرشپ پروگرام میں کچھ پولیس افسران کی خلل اندازی اور جھوٹے الزامات میں تنظیم کے زونل سکریٹری و دیگر ضلعی لیڈران کی من مانی گرفتاری اور انہیں زدوکوب کرنے کے طریقے کی سخت ...