آگرہ میں 19 ٹھکانوں پر محکمہ انکم ٹیکس کی چھاپہ ماری

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 7th February 2019, 1:08 AM | ملکی خبریں |

آگرہ:5 /فروری (ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا) یوپی کی پیشرو ایس پی حکومت میں وزیر رہے شیو کمار راٹھور اور ان سے منسلک کئی ٹھکانوں پر انکم ٹیکس محکمہ کی ٹیم نے بدھ کو چھاپے مارے۔ ٹیم نے آگرہ کے علاوہ متھرا، دہلی، راجستھان کے کوٹہ اور مغربی بنگال کے کولکاتہ میں دفاتر پر چھاپے مارے۔ محکمہ انکم ٹیکس کو ان ٹھکانوں پر کالے دھن کا’’ خدشہ‘‘ ہے۔ محکمہ نے راٹھور کے ’سلونی‘ برانڈ تیل کے دفتر کے علاوہ ان کے بھائی دنیش راٹھور، ہوٹل مالک پی ایل شرما اور ٹھیکیدار سنتوش شرما کی رہائش گاہوں اور دفاتر پر بھی چھاپے ماری کی۔ محکمہ انکم ٹیکس کی الگ الگ ٹیموں نے بدھ کی صبح آٹھ بجے آگرہ کے وبھو نگر رہائشی پیش رو ایس پی حکومت میں وزیر رہے راٹھور کی رہائش، ان کے شمس آباد واقع ’’سلونی‘‘ برانڈ تیل کے مل سمیت دفتر پر چھاپہ مارا۔ محکمہ کے ذرائع کے مطابق ٹیم نے آگرہ میں 19 ٹھکانوں پر چھاپے مارے۔ان لوگوں کے ساتھ منسلک لنک فرم اور کاروباری لین دین کے ساتھ منسلک دیگر فرموں پر بھی چھاپے مارے جا رہے ہیں۔محکمہ انکم ٹیکس کو’’خدشہ‘‘ ہے کہ ان لوگوں نے اپنی فرموں سے اخراجات کے فرضی بل دکھائے۔ چھاپہ ماری انکم ٹیکس محکمہ کے سربراہ افسر امریندر کمار کی قیادت میں ہوئی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

مودی پھر جیتے تو ملک میں شاید انتخابات نہ ہوں: اشوک گہلوت

کانگریس کے سینئر لیڈر اور راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے منگل کو نریندر مودی حکومت کے دور میں ’جمہوریت اور آئین‘ کو خطرہ ہونے کا الزام لگاتے ہوئے دعوی کیا کہ اگر عوام نے مودی کو پھر سے اقتدار سونپا، تو ہو سکتا ہے