سماجوادی پارٹی کے مزید چارامیدواروں کا اعلان

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th March 2019, 9:16 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ، 15 مارچ(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) سماجوادی پارٹی نے جمعہ کو لوک سبھا الیکشن کے لئے مزید چارامیدواروں کے ناموں کا اعلان کردیا۔ سماجوادی پارٹی کی طرف سے جاری چوتھی لسٹ میں گونڈہ سیٹ سے ونود کمارسنگھ عرف پنڈت سنگھ کو ٹکٹ ملا ہے۔ بارہ بنکی سے رام ساگرراوت، کیرانہ سے موجودہ ممبرپارلیمنٹ تبسم حسن اورسنبھل سیسابق ممبرپارلیمنٹ ڈاکٹرشفیق الرحمن برق کو امیدواربنایا گیا ہے۔غورطلب ہے کہ سنبھل سے اپرنا یادو کو الیکشن لڑانے کی بات سامنے آرہی تھی۔ یہ بھی کہا جارہا تھا کہ اس بار اس سیٹ سے یادوخاندان کا رکن میدان پراترے گا۔ اپرنا یادو نے بھی کہا تھا کہ ان کے الیکشن لڑنے یا نہ لڑنے کافیصلہ ملائم سنگھ یادواوراکھلیش یادو کے ہاتھ میں ہے۔یہ بھی کہا جارہا ہے کہ ملائم سنگھ یادو نیاپرنا کے لئیٹکٹ کی بھی سفارش کی تھی، لیکن اب اس سیٹ سے سماجوادی پارٹی نے سابق ممبرپارلیمنٹ اورمسلم قدآورلیڈرڈاکٹر شفیق الرحمن برق کو امیدواراعلان کردیا ہے۔اس کے ساتھ ہی سماجوادی پارٹی نے ابھی تک تکل 15 امیدواروں کے ناموں کا اعلان کردیا ہے۔ مین پوری سے ملائم سنگھ یادو، فیروزآباد سے اکشے یادو، بدایوں سے دھرمیندریادو، اٹاہ سے کملیش کٹھیریا، رابرٹس گنج سے بھلال کول، بہرائچ سے شبیربالمیکی، قنون سے ڈمپل یادو، لکھیم پورکھیری سے پوروی ورما، ہردوئی سے اوشا ورما، ہاتھرس سے رام جی لال سمن اورمرزا پورسے راجندرایس وند کو میدان میں اتارا ہے۔ واضح رہے کہ بی ایس پی اورآرایل ڈی کے ساتھ اتحاد کے تحت سماجوادی پارٹی 37 لوک سبھا سیٹوں پرالیکشن لڑرہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیراعظم مودی نے کابینہ سمیت سونپا صدرجمہوریہ کو استعفیٰ، 30 مئی کو دوبارہ حلف لینےکا امکان

لوک سبھا الیکشن کے نتائج کے بعد جمعہ کی شام نریندرمودی نے وزیراعظم عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ ان کے ساتھ  ہی سبھی وزرا نے بھی صدرجمہوریہ کواپنا استعفیٰ سونپا۔ صدر جمہوریہ نےاستعفیٰ منظورکرتےہوئےسبھی سے نئی حکومت کی تشکیل تک کام کاج سنبھالنےکی اپیل کی، جسے وزیراعظم نےقبول ...

نوجوت سنگھ سدھوکی مشکلوں میں اضافہ، امریندر سنگھ نے کابینہ سے باہرکرنے کے لئے راہل گاندھی سے کیا مطالبہ

لوک سبھا الیکشن میں زبردست شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس میں اب اندرونی انتشار کھل کرباہرآنے لگی ہے۔ پہلےسے الزام جھیل رہے نوجوت سنگھ سدھو کی مشکلوں میں اضافہ ہونےلگا ہے۔ اب نوجوت سنگھ کوکابینہ سےہٹانےکی قواعد نے زورپکڑلیا ہے۔

اعظم گڑھ میں ہارنے کے بعد نروہوا نے اکھلیش یادو پر کسا طنز، لکھا، آئے تو مودی ہی

بھوجپوری سپر اسٹار نروہوا (دنیش لال یادو) نے لوک سبھا انتخابات کے دوران سیاست میں ڈبیو کیا تھا،وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر یوپی کی ہائی پروفائل سیٹ اعظم گڑھ سے انتخابی میدان میں اترے تھے لیکن اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے سامنے نروہا ٹک نہیں پائے۔